عبد الرحمن ابن خلدون

پیدائش :27مئی 1332 ء / 732 ھ تیونس
وفات :19مارچ 1406 ء / 808 ھ قاہرہ
ابوزیدولی الدین عبدالرحمن ابن خلدون جن کا لقب ولی الدین تھا ۔چودہویں صدی میں پیدا ہوئے اور عرب دنیا میں شہرت حاصل کی۔ جو ایک مورخ، فقیہ ، فلسفی اور سیاستدان تھے،انکے مورث اعلی خالد جو ابن خلدون کے نام مشہورتھےتیسری صدی ہجری(نوی صدی عیسوی) میں یمن سے ہجرت کر کے اندلس آئے۔ انکے خاندان نےیہاں نام پیدا کیا اور اہم عہدوں پر مقرر ہوئے۔ تیرہویں صدی کے وسط میں یہ خاندان تیونس چلا آیا۔اور یوں ابن خلدون  تیونس
میں 1332 میں پیدا ہوئے۔
تعلیم سے فراغت کے بعد تیونس کے سلطان ابوعنان کے وزیر مقرر ہوئے ۔ لیکن درباری سازشوں سے تنگ آکر حاکم غرناطہ کے پاس چلےگئے۔ یہ سر زمین بھی راس نہ آئی تو مصر آگئے ۔ اور الازھر میں درس و تدریس پر مامور ہوئے۔ مصرمیں ان کو مالکی فقہ کا منصب قضا میں تفویض کیا گیا۔اسی عہدے پر وفات پائی۔ ابن خلدون کو تاریخ اور عمرانیات کابانی تصور کیا جاتا ہے۔
بچپن ہی سے تعلیم کا شوق تھا اور نحو، لغت، فقہ، حدیث، منطق، فلسفہ، کلام وغیرہ میں مہارت حاصل کی۔ یہ زمانہ  مغرب(شمالی افریقہ) میں بدامنی اور افراتفری کا تھا۔ عبدالرحمن مختلف حکمرانوں کے یہاں کاتب اور دوسرےعہدوں پرفائز رہے۔ جیل کی سزا بھی بھگتنی پڑی۔ سلطان ابوسالم نے 1359 میں انہیں قاضی القضاة مقرر کیا لیکن یہاں جب حالات خراب ہوئے تو غرناطہ چلے آئے۔ یہ خانہ جنگیوں اور بغاوتوں کا دور تھا۔ اس سیاسی اتھل پتھل اور سازشوں میں عبدالرحمن بھی شریک رہے۔ کبھی عنایتوں سے سرفراز ہوئے اور کبھی معتوب ہو کر مشکلوں کا سامنا کرنا پڑا۔
1383میں عبدالرحمن حج کے لیے جاتے ہوئے قاہرہ رکے اور جامعہ ازہر میں درس و تدریس شروع کر دی۔ 1384 میں سلطان الظاہر برقوق نے انہیں مالکی قاضی القضاة مقرر کردیا۔ 1401 میں جب تیمور نے مشرق کی طرف پیش قدمی کی تواسکے خلاف جنگ میں حصہ لینے کے لیے دمشق گئے۔ دو مرتبہ انہیں تیمور سے ملاقات کےلیے بھی بھیجا گیا۔ پھر قاہرہ واپس آ کر آخر عمر تک قاضی کے منصب پر فائز رہے۔اور 1406 کو قاہرہ میں انتقال ہوا۔
عبدالرحمن مغرب کی سیاسیات اور ریشہ دوانیوں میں اسقدر مصروف ہونے کے باوجود لکھنے پڑھنے میں بھی دلچسپی لیتےرہےاور تاریخ پر کئی کتابیں تصنیف کیں۔ انکی ایک تاریخ”کتاب العبر” بہت مشہور ہے۔ یہ سات جلدوں میں ہے۔ اگرچہ ہر جلد کا معیار یکساں نہیں لیکن اس زمانہ کی تاریخ پر ایک نہایت اہم تصنیف ہے۔ یہ عربی زبان کی اعلی پایہ کی تاریخ ہے۔ اس میں پہلی مرتبہ تاریخ کو ایک سائنس کے طور پر پیش کیا گیا ہے۔ تاریخ کا فلسفہ بیان کیاگیاہےاورسماجیات اور علم سیاسیات کے اصول بیان کیے گئے ہیں۔ چالیس سال کے مشاہدے، متعدد کتابوں اور سرکاری دستاویزوں کےگہرےمطالعہ کا نچوڑ اس میں موجود ہے۔ کتاب العبر کا مقدمہ تاریخ اسلام کا ایک نہایت اہم سرمایہ سمجھاجاتاہےجسمیں عربی علوم اور تہذیب کے تمام شعبوں سے بحث کی گئی ہے۔ دوسری جلد میں عربوں کی تہذیب اورتمدن کی تاریخ ہے اور تیسری جلد میں بربر کی تاریخ کا تفصیلی جائزہ لیا ہے۔ ایک جلد انکی اپنی سوانح حیات پر مشتمل ہے۔ اس کتاب کے کئی زبانوں میں ترجمے ہو چکے ہیں۔ سب سے پہلا ترجمہ 1901 میں احمد حسین نے الہ آباد سے شائع کیا تھا۔ اسکے علاوہ بھی ابن خلدون کی کئی کتابیں مشہور ہیں۔ مثلاً شرح البروة الحساب اور المنطق وغیرہ۔ ابن خلدون اورانکی تصانیف پر کئی کتابیں یورپ کی مختلف زبانوں میں شائع ہوئی ہیں۔
اردو میں بھی کئی کتابیں شائع ہوئی ہیں۔ عبدالقادر نے حیدرآباد سے ابن خلدون کے معاشرتی، معاشی اور سیاسی خیالات 1943 میں شائع کیے۔ اسکے علاوہ نگہت شاہجہاں پوری نے “ابن خلدون کی عظمت اور یورپ” ممبئی سے اور محمد حنیف نے”افکار ابن خلدون”1954 میں لاہور سے شائع کیا۔
انہوں نے العبر کے نام سے ہسپانوی عربوں کی تاریخ لکھی تھی جو دو جلدوں میں شائع ہوئی۔ لیکن ان کا سب سےبڑاکارنامہ۔ مقدمتہ فی التاریخ ہے جو مقدمہ ابن خلدون کے نام سے مشہور ہے۔ یہ تاریخ،سیاست،عمرانیات،اقتصادیات اور ادبیات کا گراں مایہ خزانہ ہے۔
اردو میں مقدمہ ابن خلدون کا ترجمہ معروف ادیب اور شاعر مرحوم ابو الخیر کشفی نے کیا ہے۔ ، اسے دار الاشاعت اردوبازار کراچی نے شائع کیا ہے۔ ، ترجمہ ۵۳۴ صفحات پر مشتمل ہے۔
مؤرخین کی جانب سے تاریخ اسلام پر متعدد کتب سامنےآچکی ہیں لیکن ایسی کتب معدودے چند ہی ہیں جن میں ایسےاصولوں کی وضاحت کی گئی ہو جن کی روشنی میں معلوم کیا جا سکے کہ بیان کردہ تاریخی واقعات کا تعلق واقعی حقیقت کے ساتھ ہے۔ علامہ ابن خلدون نے تاریخ اسلام پر ’کتاب العبر و دیوان المبتداء والجز فی ایام العرب والعجم والبریر‘ کے نام سے ایک شاندار کتاب لکھی اور اس کے ایک حصے میں وہ اصول اور آئین بتائے جن کے مطابق تاریخی حقائق کوپرکھاجاسکے۔ انہی  اصول وقوانین کا اردو قالب ’مقدمہ ابن خلدون‘ کے نام سے آپ کے سامنے ہے۔ کتاب کے رواں دواں ترجمے کےلیے علامہ رحمانی کی خدمات حاصل کی گئی ہیں۔ مقدمے کی تقسیم چھ ابواب اور دو جلدوں میں کی گئی ہے۔ دونوں جلدیں تین، تین ابواب پر محیط ہیں۔ پہلے باب میں زمین اور اس کے شہروں کی آبادی، تمول و افلاس کی وجہ سےآبادی کے حالات میں اختلاف اور ان کے آثار سے بحث کی گئی ہے۔ دوسرے باب میں بدوی آبادی اوروحشی قبائل واقوام پر روشنی ڈالی گئی ہے۔ تیسرے باب میں دول عامہ، ملک، خلافت اور سلطانی مراتب کو قلمبند کرتے ہوئے کسی بھی سلطنت کےعروج و زوال کے اسباب واضح کیے گئے ہیں۔ چوتھے باب میں شہروں، مختلف آبادیوں اور ان کے تمدن کوواضح کیا گیا ہے نیز مساجد اور مکانوں کی تعمیر سے بھی بحث کی گئی ہے۔ پانچواں باب معاش و کسب و صنائع پر مشتمل ہےتوچھٹااور آخری باب علوم اور ان کی اقسام، تعلیم اور اس کے طریقوں اور مختلف صورتوں پر مشتمل ہے۔

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Pak Islamic Library

Authentic Islamic Books

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Urdu Islamic Books

islamic books in urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.wordpress.com

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Contact Us: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

creating happiness everyday

an artist's blog to document her creativity, and everyday aesthetics

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

%d bloggers like this: