عظیم الشان،بلند و بالا عمارتیں:قیامت کی علامتیں، از:مُفتِی نَاصِر الدین مَظاہری:04

مساجد کو لال پیلا کرنے کی ممانعت

بخاری شریف میں ہے کہ:
قال ابو سعید کان سقف المسجد من جرید النخل وامرعمر ببناء المسجد وقال اکن الناس من المطر وایاک ان تحمر اوتصفر فتفتن الناس۔
مسجد نبوی کی چھت کھجور کی شاخوں کی تھی حضرت عمر نے مسجد نبوی کی تعمیر کا حکم دیا اور (تعمیر کی ضرورت بتاتے ہوئے)فرمایا کہ میں لوگوں کو بارش سے بچانا چاہتا ہوں (مگر)تم مسجد کو لال پیلا(رنگین) کرنے سے احتیاط کرو ورنہ لوگ فتنہ میں پڑ جائیں گے۔(بخاری۱/۶۴)
معلوم ہوا کہ بقدرِ  ضرورت تعمیر درست ہے لیکن بیجا اسراف، فضول خرچی اور دکھاوے کے لئے  یا ڈینگیں مارنے کے لئے  بلڈنگیں بنانا درست نہیں۔

مساجد کی زینت

حضرت ابوالدرداء ؓ نے آپﷺ  کا یہ ارشاد گرامی نقل کیا ہے۔
اذازخرفتممساجدکم وحلیتم مصاحفکم فالدمار علیکم۔
جب تم مساجد کو مزین کرنے لگو اور قرآن کریم کو زرق برق لباس (جزدان)پہنانےلگو تو سمجھ لو کہ قیامت آنے والی ہے۔ (الاشاعۃ ۱۵۵، حاکم)
آج پوری دنیا میں مساجد کو نہ صرف مزین کیا جا رہا ہے بلکہ قرآن کریم کو بھی عمدہ اور نفیس ترین کاغذ پر دلکش و خوشنما رنگوں میں شائع کیا جا رہا ہے لیکن ان کے پڑھنے ندارد ہیں۔
ابن ماجہ شریف کے حاشیہ میں ہے کہ:
قولہ الازخرفوا:ایزینوا واصل الزخرف الذہب ای نقشوہا وموہوہا بالذہب وہذا وعید شدیدلمن لم تصدی بعمارۃ الظاہر وتخریب الباطن فان الصاحابۃ کانوا ارغب الناس فی اعمال الخیرواسرعہم فی افعال البر وماشیدوا ماسجدہم الا قلیلاوفی امثال ہذہ المواطنزخرف:
زینت کو کہتے ہیں، دراصل ’’تزخرف’‘ نام ہے سونے کے پانی چڑھانے اور سنوارنے کا کیونکہ لغت میں ’’زخرف’‘ کے معنیٰ سونا اور کسی چیز کو کمال حسن دینا ہے، یہ بناؤ اور سنگار زیب و زینت نقش و نگار دوسری قوموں سے مسلمانوں میں منتقل ہوا ہے لیکن حیرت کی بات ہے کہ: ہمارے اندر زیب و زینت کا مرض یہاں تک بڑھ گیا ہے کہ: وہ قومیں ہم سے پیچھے رہ گئیں، ہم آگے نکل گئے۔(نظام مساجدملخصاً)۔(حاشیہ ابن ماجہ۵۴)
مساجد کو بیل بوٹوں اور رنگ و روغن سے مزین کرنے میں دولت کا ضیاع اپنی جگہ دوسرا نقصان دہ پہلو نمازیوں کے خشوع و خضوع کے جانے کا بھی ہے۔
امام نوویؒ مسلم شریف کی شرح میں فرماتے ہیں:
’’مسجد کی محراب کی تزئین اور اس کی دیواروں کو منقش بنانا ایسی چیزیں ہیں جو نمازیوں کی توجہ اپنی طرف جذب کر لیتی ہیں، لہذا محراب اور در و دیوار کی تزئین، نیز نقش و نگار بنانا مکروہ ہے، کیونکہ آنحضرت ﷺنے اپنی منقش چادر کو دور کرتے ہوئے یہی علت بیان فرمائی تھی۔
اسی وجہ سے علما نے سادہ، مضبوط اور بقدر ضرورت خوبصورت مسجد تعمیر کرنے کی اجازت دی ہے، غیر ضروری پھول پتیوں سے اجتناب کا حکم دیا ہے۔
بحرالرائق میں حضرت عبد اللہ بن عباس ؓ سے روایت ہے کہ: آپﷺ  نے فرمایا:
والاولیٰ ان تکون حیطان المسجد ابیض غیرمنقوشۃ ولامکتوب علیہا ویکرہ ان تکون منقوشۃ بصوروکتابۃ۔
اچھا یہ ہے کہ: مسجد کی دیواریں سفید اور نقش و نگار سے پاک ہوں، ان پر لکھا ہوا بھی نہ ہو۔صور و کتابت سے منقش کرنا مکروہ  ہے۔(بحرالرائق۵:۲۵۱)
حضرت شاہ عبدالعزیز محدث دہلویؒ کی رائے گرامی جو تفسیر عزیزی میں موجود ہے اس کو بھی پڑھتے چلئے:
’’تعمیر مسجد میں احتیاط سے کام لیں کہ وہ مطلاّ و مزین کی حد کو نہ پہنچنے پائے  کی دیواروں اور چھتوں پر سونے کا پانی نہ چڑھائیں اور نہ پھول پتیوں سے آراستہ بنائیں اور نہ نیلے رنگ وغیرہ سے رنگین کریں، کیونکہ اس طرح کی چیزیں مسجد کو تماشا گاہ کے درجہ میں کر دیتی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ: امیر المؤ منین فاروق اعظمؓ نے مسجد نبوی کی تجدیدات کے وقت تاکید کر دی تھی کہ مسجد ایسی ہو جو لوگوں کی بارش وغیرہ سے حفاظت کرے، خبردار سرخ، زرد، رنگوں سے رنگین مت بنانا کہ لوگ فتنہ میں مبتلا ہو جائیں ‘‘ ۔
مولانا ابرار الحقؒ مظاہری ہردوئی ارشاد فرماتے ہیں:
’’آج کل مساجد میں پینٹ کا رواج ہو رہا ہے حالانکہ اس میں کس قدر بدبو ہوتی ہے، بعض لوگ کہتے ہیں کہ خشک ہونے پر یہ بو زائل ہو جاتی ہے، مگر افسوس!کہ یہ منکرات اور معصیت کے ارتکاب کو کہ اس سے اذیت ملائکہ اور مسلمین ہے، کیا تھوڑی دیرکے لئے بھی روا رکھنا جائز ہو گا؟۔۔
میں نے بمبئی کی ایک مسجد میں یہ بیان کیا کہ یہ پینٹ بدبو دار نا جائز ہے اور اس کے لئے چندہ دینے والے بھی گنہگار ہوں گے، بس ایک صاحب نے مہتمم سے اپنے سو روپئے اسی وقت واپس لے لئے، ایک اہل علم نے اسی مجلس میں دریافت کیا کہ پھر دروازوں اور کھڑکیوں پر کیسے رنگ ہو؟اس میں بھی تو بدبو ہوتی ہے؟میں نے کہا کہ دروازوں اور کھڑکیوں کو لگانے سے پہلے ہی مسجد کے باہر رنگ لیا جائے’‘  (مجالس ابرار ص ۲۴)
رسول اللہ ﷺکا ارشاد گرامی ہے:
ما اساء قوم قط الا زخرفوا مساجدھم
جب کسی قوم کے اعمال بگڑتے ہیں تو وہ اپنی مسجدوں کو مزین کرتی ہیں۔ (ابن ماجہ )
آپ ﷺکا ارشاد گرامی ہے:
أراکم ستشرفونمساجدھم کماشرفت الیھود کنائسھا وکما شرفت النصاریٰ بیعھا
میں دیکھتا ہوں کہ تم قریب ہی زمانہ میں مسجدوں کو بلند و بالا بنانا شروع کرد و گے جیسا کہ یہود و نصاریٰ اپنے کنیسے اورگرجےبنواتےہیں۔(ابن ماجہ )
حضرت انسؓ کا ارشاد ہے:
 یتباھون بھا ثم لایعمرونھا الا قلیلا
مسجدوں میں لوگ تفاخر کریں گے مگر پھر اس کی آبادی کا خیال کم ہی لوگوں کوہو گا۔ (بخاری )

گرجا گھروں اور کلیسا کی طرح تزئین کاری

حضرت عبد اللہ بن عباس ؓ سے روایت ہے کہ: آپﷺ  نے فرمایاکہ:
تزخرف المساجد کماتزخرف الکنائس والبیع وتطول المنابروتکثر الصفوف مع قلوب متباغضۃ۔ مساجد ایسے مزین و منقش کی جائیں گی جیسے کلیسا اور گرجا گھر اور منبر اونچےکئے جائیں گے صفیں کثرت کے ساتھ ہوں گی مگر(ان صفوں میں شامل ہونے والوں کے )قلوب ایک دوسرے سے نفرت کریں گے۔ (الاشاعۃ۱۵۸، ابن مردویہ)
حضرت عبد اللہ بن عباس ؓ سے ہی یہ روایت بھی منقول ہے کہ: آپ ﷺ نے فرمایا:
تزخرف المساجد کماتزخرف الکنائس والبیع وتحلی المصاحف ویطیلون المنابر۔(الاشاعۃ
۱۶۰)
مساجد ایسے مزین و منقش کی جائیں گی جیسے کلیسا اور گرجا گھر اور قرآن کریم کو آراستہ کریں گے اور منبر بہت اونچے بنائے جائیں گےحضرت عبد اللہ بن عباسؓ سے یہ بھی روایت ہے کہ: آپﷺ  نے فرمایا:
عندہا یوضع الدین وترفع الدنیا ویشید البناء وتعطل الحدودویمیتون سنتی
اس وقت دین اٹھ جائے گا، دنیاداری بڑھ جائے گی، عمارتیں مضبوط بنائی جائیں گی، حدود (شریعت)کو معطل کر دیا جائے گا اور میری سنتوں کو مارا جائے گا(سنتوں سے روگردانی کی جائے گی)الاشاعۃ۱۶۲
محمد بن رسول برزنجیؒ ’’وشیدالبناء’‘ کی شرح کرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ:
طولوہامن الشید بمعنی الرفع او جصصوہا عملوہا بالشید۔
یعنی اس کو بہت اونچا اور بلند کیا جائے گا(سیمنٹ وغیرہ سے)یا گچ کیا جائے گا۔الاشاعۃ ۱۶۵
ابن ماجہ شریف کے حاشیہ میں ہے:
کانت الیہود والنصاریٰ تزخرفوا المساجد عندما حرفوا امردینہم وانتم تصیرون الیٰ مثل حالہم فی الاہتمام بالمسجد وتزیینہا وکان المسجد علیٰ عہد رسول اللہ باللبن وسقفہ
بالساج
    (ابن ماجہ ص۵۴)
ابو داؤد شریف میں ہے کہ:
امرت بتشییدالمساجد  مجھ کو مساجد کے مضبوط و بلند بنانے کا حکم دیا گیا ہے۔ (ابوداؤد)
امیر المؤمنین حضرت علی کرم اللہ وجہہ روایت کرتے ہیں کہ آپﷺ  نے ارشاد فرمایا کہ:
وحلیت المصاحف وزخرفت المساجد وطولت المنابر وفسدت القلوب۔
قرآن کریم کو آراستہ و پیراستہ کیا جائے گا مساجد کو مزین اور منبر کو اونچا کیا جائے گا درآنحالیکہ ان کے قلوب میں فسادوبگاڑہوگا۔(الاشاعۃ لاشراط الساعۃ۱۶۴)

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Pak Islamic Library

Authentic Islamic Books

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Urdu Islamic Books

islamic books in urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.wordpress.com

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Contact Us: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

creating happiness everyday

an artist's blog to document her creativity, and everyday aesthetics

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

%d bloggers like this: