سیرۃ النبیﷺ(مختصراً):02

نبوت و رسالت:
17رمضان المبارک بروز پیر یعنی دوشنبہ کو غارحراء میں 40 سال کی عمر میں محسن انسانیت کو نبوت سے سرفراز کیا گیا، جب آپ پر وحی آتی تو آپ کے چہرے کا رنگ بدل جاتا اور آپ سخت سردی میں بھی پسینہ سے شرابور ہوجاتے  ، سب سے پہلے سورت علق کی 5 آیتیں نازل ہوئیں ، نزول وحی کے بعد اپنے گھر تشریف لے گئے مارے خوف کے آپ کا سینہ اچھل رہا تھا۔ امّاں خدیجہ ؓ کو ساری داستان سنائی جس پر انہوں نے تسلی دی اور کہا:
اللہ کی قسم وہ کبھی آپ کو رسوا نہیں کرے گا آپ صلہ رحمی کرتے ہیں ، سچ بولتے ہیں ، لوگوں کا بوجھ اٹھاتے ہیں اور مصائب پر لوگوں کی مدد کرتے ہیں ۔ (صحیح بخاری)
انقطاع وحی:
کچھ مدت وحی بند رہی جس پر رسول الله غم سے نڈھال تھے ، ایک دن جبریل امین علیہ السلام کو آسمان و زمین کےمابین کرسی پر جلوہ افروز دیکھا مرعوب ہوکر گھر تشریف لائے سیدہ خدیجہ ؓ سے فرمایا ’’زَمِّلُوْنِیْ زَمِّلُوْنِیْ‘‘ یعنی مجھےچادراوڑھادو،مجھےچادر اوڑھا دو پھر سورہ مدثر کی ابتدائی آیات نازل ہوئیں ، ان آیتوں کے بعد آپ نے لوگوں کوتوحید کی دعوت دینا شروع کردی جس پر مکہ والے آپ کے دشمن ہوگئے اور ایذاء اور تکلیف پہنچانا شروع کردیا ، جس پر چچا ابو طالب نے ڈھال کے مانند آپ کی مدد کی ، ابتدائی 3 سالوں تک خفیہ طور پر دعوت کا کام کرتے رہے اور جب (فَاصْدَعْ بِمَا تُؤْمَرُ) یعنی (اعلانیہ دعوت دینا شروع کر دیجئے) نازل ہوئی تو آپ نے علی الاعلان دعوت اسلام دینا شروع کردیا،اللہ تعالی نے جب یہ آیت نازل فرمائی (وَاَنْذِرْعَشِیْرَتَکَ الْاَقْرَبِیْنَ) یعنی (اپنے قریبی رشتہ داروں کو ڈرائیں)توآپنےصفاپہاڑی پر چڑھ کر آواز لگائی اور جب آپ کے خاندان والے اکٹھا ہوگئے تو آپ نے فرمایا:
اگر میں یہ کہوں کہ اس پہاڑ کے پیچھے ایک لشکر ہے جو تم پر حملہ آور ہوا چاہتا ہے کیا تم لوگ میری بات مانو گے؟ سب نےبیک زبان کہا کہ ہم نے کبھی آپ کو جھوٹ بولتے نہیں پایا ۔ تو آپ نے فرمایا:
میں تم لوگوں کو سخت عذاب سے ڈراتا ہوں ، آپ  کے چچا ابو لہب نے کہا تیری بربادی ہو کیا تو نے همیں اسی لئے جمع کیا تھا اس پر پوری سورہ المسد(تَبَّتْ یَدَا اَبِیْ لَہَبٍ وَّ تَبَّ) نازل ہوئی۔
ہجرت حبشہ:
جب مکہ والوں نے زیادہ تکلیف دینا شروع کردیا تو رسول رحمت نے اپنے صحابہ كرام رضی الله عنهم کو حبشہ ہجرت کرنے کا حکم دے دیا ، چچا ابو طالب کی وفات کے بعد لوگوں نے ایذا رسانی میں شدت پیدا کردی ، صحیحین میں ہے کہ آپنماز ادا کر رہے تھے پاس ہی اونٹ کی اوجھڑی پڑی ہوئی تھی عقبہ بن ابی معیط نے اسے اٹھایا اور جب رسول الله سجدہ میں گئے تو آپ کی پشت مبارک پر ڈال دیا ، آپ کی بیٹی سیده فاطمہ رضی الله عنها آئیں پھر انہوں نےاسےہٹایا ، آپ نے بد دعا کرتے ہوئے فرمایا:
اے اللہ! سرداران قریش کو ہلاک کردے ، اور صحیح بخاری میں ہے کہ ایک دن عقبه بن ابی معیط ہی نے آپ کےگلےمیں کپڑا لپیٹ کر زور سے کھینچا ، سیدناابوبکر ؓ دوڑے هوئے آئے اور آپ كو چھڑاتے ہوئے کہا:
کیا تم ایسے آدمی کو مارنا چاہتے ہو جو یہ کہتا ہے کہ میرا رب اللہ ہے۔ جب لوگوں نے آپ کو ابو طالب و سیدہ خدیجہؓکی وفات کے بعد زیادہ تکلیف دینا شروع کیا تو آپ دعوت توحید لے کر طائف پہنچے جہاں انہیں عناد ، ایذا و مذاق کے سوا کچھ نہ ملا اسی پر بس نہیں کیا گیا بلکہ پتھروں سے مار مار کر لہو لہان کردیا طائف سے مکہ واپس آرہے تھے کہ پہاڑوں کا فرشتہ حاضر خدمت ہوکر گویا ہوا اگر آپ کا حکم ہوتو دونوں پہاڑوں کے بیچ میں اہل طائف کو پیس دیا جائے آپ نے فرمایا:
مجھے امید ہے کہ اللہ ان کی نسل سے ایسے لوگوں کو پیدا کرے گا جو صرف اللہ کی عبادت کریں گے اس کے ساتھ کسی کو بھی شریک نہیں کریں گے۔
مدینہ منورہ میں اسلام:
آپ نے ایام حج میں مدینہ کے 6 آدمیوں کو دعوت دی وہ مسلمان ہوگئے جن کی دعوت سے مدینہ میں کافی لوگ مسلمان ہوئے، جس کے بعد خفیہ طور پر بیعت عقبی اولی و ثانیہ پیش آئی ، اور جب مدینہ میں اسلام کا بول بالا ہوگیا تونبی معظم نے اپنے صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کو مدینہ کی طرف ہجرت کرنے کا حکم دے دیا۔(بخاری و مسلم)
ہجرت مدینہ:
بحکم اللہ تعالیٰ آپ نے مدینہ کا رخ کیا آپ کے ساتھ سیدنا ابو بکر ؓ تھے دونوں غار ثور میں 3 دن تک چھپے رہے مدینہ پہنچنے پر رسول الله کا زبردست استقبال کیا گیا جہاں آپ نے اپنی مسجد اور گھر تعمیر کیا۔
غزوات:
آپ نے 27 غزوات (جنگیں ) لڑیں چند کے نام یہ ہیں :
غزوہ بدر :
17 رمضان سن 2 ہجری میں پیش آیا جس میں مسلمانوں کو فتح حاصل ہوئی۔
غزوہ احد :
شوال سن 3 ہجری کا واقعہ ہے جس میں مسلمانوں کو شروع میں فتح ہوئی پھر آپ
کی حکم عدولی میں شکست کا سامناکرناپڑا۔
غزوہ بنی نضیر :
سنہ 4 ہجری کا واقعہ ہے جس میں یہودیوں کو بد عہدی کے جرم میں مدینہ سے جلا وطن کیا گیا۔
غزوہ مریسیع (بنی مصطلق):
ماہ شعبان سن 5 ہجری میں پیش آیا جس میں دشمن کو شکست ہوئی۔
غزوہ خندق :
سنہ 5 ہجری میں ہوا جس میں کفار مکہ ناکام ہوکر واپس گئے۔
غزوہ بنی قریظہ :
یہودیوں کے ساتھ پیش آیا وہ مسلمانوں کے حلیف تھے لیکن انہوں نے غداری و بغاوت کی جس کی پاداش میں مردوں کو قتل کردیا گیا۔
صلح حدیبیہ :
سنہ 6 ہجری میں اس وقت پیش آیا جب آپ اپنے جان نثار صحابہ رضی اللہ عنہم کے ساتھ عمرہ کے لئے تشریف لےجارہے تھے مقام حدیبیہ پر مکہ والوں نے آپ کے ساتھ 10 سال کے لئے صلح کی اور اس سال عمرہ کرنے سے روک دیا۔
فتح خیبر :
یہ محرم سنہ 7 ہجری کا واقعہ ہے یہ جنگ ، خیبر کے یہودیوں کے ساتھ پیش آئی جس میں مسلمانوں کو فتح حاصل ہوئی۔
فتح مکہ : رمضان سنہ 8 ہجری میں پیش آیا 12 کافر قتل ہوئے اور صرف 2 مسلمان شہید ہوئے۔
غزوہ حنین : شوال سنہ 8 ہجری میں مسلمانوں اور رومیوں کے مابین پیش آیا۔
غزوہ موتہ :
 سنہ8 ہجری میں مسلمانوں اور رومیوں کے مابین پیش آیا۔
غزوہ تبوک :
جو سنہ 9 ہجری میں پیش آیا یہ رسول مكرم  کا آخری غزوہ تھا رومیوں پر اتنا رعب پڑا کہ وہ مقابلہ ہی پر نہ آئے ، اس سال یعنی سنہ 9 ہجری کو عام وفود کہا جاتا ہے کیونکہ اس سال مختلف وفود آپ کے پاس آئے اور لوگ جوق در جوق دین اسلام میں داخل ہوئے ، اس کے علاوہ آپ نے 56 سرایا بھی ارسال کئے۔
حج و عمرہ:
آپ نے ہجرت کے بعد صرف ایک حج کیا اور 4 عمرے کئے جو سب کے سب ذوالقعدہ کے مہینے میں ادا کئے گئےتھے۔(زاد المعاد)
حلیہ مبارک:
آپ کا قد مبارک درمیانی ، سرخی مائل روشن چہرہ ، گھنے بال ، آنکھیں سخت سیاہ ، سینے اور پیٹ پر معمولی بال،سینےسےناف تک بالوں کی باریک دھاری ، سینہ مبارک چوڑاتھا۔ (ترمذی)
اخلاق:
آپ سب سے زیادہ سخی و فیاض ، راست باز ، نرم مزاج ، متواضع ، پابند عہد ، حیادار ، بردبار اور سب سے زیادہ دلیراوربہادر تھے۔ غیظ و غضب سے دور تھے کبھی اپنےنفس کے لئے انتقام نہ لیتے سیدنا انس بن مالک ؓ ارشاد فرماتے ہیں کہ میں نے آپ کی 10 سال تک خدمت کی اگر میں نے کوئی کام کیا تو کبھی یہ نہیں فرمایا کہ یہ کام کیوں کیا اور اگر کوئی کام نہیں کیا تو یہ نہیں پوچھا کہ کیوں نہیں کیا ، البتہ اگر اللہ کی حرمت پامال ہوتی تو اللہ کے لئے انتقام لیتے،جوملتاکھالیتےکھانوں میں کبھی عیب نہ نکالتے مہینوں آپ کے گھر میں آگ نہیں جلتی ، مریضوں کی عیادت کرتے جنازوں میں حاضرہوتےفقراءومساکین کے ساتھ اٹھتے بیٹھتے ، ہنسی مذاق بھی کیا کرتے تھے ، لوگوں سے ہمیشہ نرمی کے ساتھ پیش آتےغرض یہ کہ آپ تمام اخلاق عالیہ کے حسین پیکر تھے۔
مناقب:
سیدنا جابر بن عبد اللہ ؓ آپ سے روایت کرتے ہیں کہ مجھے 5 چیزیں ایسی دی گئیں جو مجھ سے پہلے کسی کو نہیں دی گئیں ایک ماہ کی مسافت سے لوگوں کے دلوں میں میرا رعب ڈال دیا گیا ، پوری زمین کو میرے لئے مسجد اور پاک بنادیاگیاجہاں بھی نماز کا وقت ہو نماز پڑھ لیں ، میرے لئے مال غنیمت کو حلال کیا گیا ، مجھے شفاعت سے نوازا گیا اور ہر نبی اپنی قوم کے لئے خاص بھیجا جاتا جبکہ مجھے پوری دنیا والوں کے لئے بھیجا گیا ہے۔ (بخاری و مسلم)
صحیح مسلم میں سیدنا انس بن مالک ؓ سے مروی ہے کہ آپ نے فرمایا:
بروز قیامت سب سے پہلے میری شفاعت قبول ہوگی ، اور میری امت سب سے زیادہ ہوگی اور میں سب سے پہلے جنت کادروازہ کھٹکھٹاؤں گا۔
عبادت وریاضت:
سیدہ عائشہ ؓ فرماتی ہیں کہ آپ کے پاؤں میں قیام اللیل میں ورم ہوجاتا تھا آپ سے پوچھا گیا تو آپ نے فرمایا:
کیا میں اللہ کا شکر گزار بندہ نہ بنوں ۔ (بخاری و مسلم)
نیز فرماتی ہیں کہ آپ کا بستر چمڑے کا تھا جس میں کھجور کے تنے کی چھال بھری ہوتی تھی۔
حجۃ الوداع:
جس میں آپ کے ساتھ 1 لاکھ مسلمانوں نے حج کیا۔
وفات:
سنہ 11 ہجری میں ربیع الاول کی 12 تاریخ سوموار کے دن بوقت چاشت آپ کی وفات ہوئی (اناللہ وانا الیہ راجعون) وفات کے وقت آپ کا سر مبارک سیده عائشہ رضی اللہ عنها کی گود میں تھا ،غسل و تکفین کے بعد آپ پر لوگوں نے باری باری نماز جنازہ ادا کی ، آپ کو 63 سال کی عمر ملی جس میں سے 23 سال رسالت کے تھے ، 13 سال مکہ اور 10 سال مدینہ میں رہے۔ اس ذات مبارکہ و مقدسہ پر انگنت درودوسلام نازل ہوں ۔

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Pak Islamic Library

Authentic Islamic Books

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Urdu Islamic Books

islamic books in urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.wordpress.com

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Contact Us: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

creating happiness everyday

an artist's blog to document her creativity, and everyday aesthetics

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

%d bloggers like this: