جنت اور دوزخ کے بیانات

 دوزخ کا بیان

 دوزخ کے 7طبقے ہیں :
 1– جہنم2– لظیٰ3– حطمہ4– سقر5– سعیر6– جحیم اور7– ہاویہ
 ان ساتوں طبقوں میں کم و بیش اور مختلف قسم کا عذاب ہے۔ اگر دوزخ سے ایک خشخاش کے برابر آگ لائی جائے تو تمام زمین و آسمان کو ذرا سی دیر میں فنا کر دے۔ دنیا کی آگ اس کا ستّرواں جزو (1/70) ہے،آدمی اور پتھر اس کا ایندھن ہیں،اگردوزخ کا کوئی داروغہ دنیا والوں پر ظاہر ہو تو زمین کے سب رہنے والے اس کی ہیبت سے مر جائیں گے۔ دوزخیوں کےکپڑے کا ایک پرزہ بھی اتنا بدبو دار اور گندہ ہو گا کہ اگر تمام مخلوق مر جائے تب بھی ان کی بدبو اس کی بدبواور گندگی کو نہ پہنچ سکے،دوزخ کی بعض وادیاں ایسی ہیں کہ خود دوزخ بھی ہر روز ستر یا زیادہ مرتبہ ان سے پناہ مانگتی ہے۔ دوزخ کا ادنیٰ عذاب یہ ہو گا کہ آگ کی جوتیاں جو دوزخی کو پہنائی جائیں گی ان سے اس کا دماغ ہانڈی کی طرح ابلے گا وہ سمجھے گا کہ سب سے زیادہ عذاب اس پر ہو رہا ہے،دوزخ میں طرح طرح کے عذاب ہوں گے آگ کا مکان،آگ کا فرش،کھانے کو زقوم (توھر)،پینےکوپیپ،نہایت ہی کھولتا ہوا پانی،پہننے کو گندھک کے کپڑے،گلے میں گرم طوق و زنجیر،کفار کو سر کے بل چلایاجانا،بڑے بڑے کانٹے چبھونا،بھاری گرزوں سے مارنا،بڑی قسم کی اونٹوں کی گردن کے برابر بچھو اور بہت بڑےبڑےسانپ کہ اگر ایک بھی ڈس لے تو اس کی سوزش و درد و بیچینی ہزار برس تک رہے وغیرہ،دوزخیوں کے منھ کالےاور شکلیں بدنما ہوں گی،جسم بہت بڑا کر دیا جائے گا،ایک شانے سے دوسرے شانے تک تیز سوار کے تین دن کےسفرکےبرابر اور ایک ایک ڈاڑھ اُحد پہاڑ کے برابر ہو گی۔ کفار کی شکل نہایت مکروہ اور غیر انسانی ہو گی،ہر لحظہ عذاب الٰہی ان کو لئے سخت ہوتا جائے گا وہ موت مانگیں گے مگر ان کو موت نہ آئے گی،ہمیشہ ہمیشہ دوزخ کے عذاب میں گرفتاررہیں گے،مومن گناہگار بقدر گناہ عذاب بھگت کر یا نبی کریم صلی اللّٰہ۔علیہ وسلم کی برکت و شفاعت سے نجات پالیں گے
نَساَلُ اللّٰہُ العَفوَ والعَافِیَتَ فِی الدِّینَ وَالدُّنیَا وَ الاخِرَۃ،رَبَّنَا اَدخِلنَا الفِردَوسَ وَاَجِرنَا مِنَ النَّارِ ۔

 جنت کا بیان

 جنت ایک ایسا مقام ہے جو اللّٰہ تعالیٰ نے ایمان والوں کے لئے بنایا ہے اور اس میں وہ نعمتیں مہیا کی ہیں جن کو نہ آنکھوں نےدیکھا اور نہ کانوں نے سنا اور نہ کسی آدمی کے دل پر ان کا خیال گزرا،جو مثالیں قرآن مجید اور حدیثوں میں آئی ہیں سمجھانےکے لئے ہیں،حساب کے بعد مومن جنت کی طرف روانہ ہوں گے راستہ میں چشمہ رضوان آئے گا اس میں تمام مومن غسل کریں گے ان کی منھ چودہویں رات کی چاند کی مانند چمکتے ہوں گے اور بدن صاف ہو گا،ان کی خوبصورتی بےحدہوگی،عورتیں ایسے زیب و زینت والی ہوں گی کہ حوریں بھی ان کا جمال دیکھ کر رشک کریں گی،تمام امتیں صف بستہ ہوجائیں گی،ہر ایک گروہ کو ایک بلندنشان ملے گا،نشان محمدی علی صاحبہاالصلوۃ و السلام سب سے پسندیدہ ہو گا،ایک لاکھ فرشتےنورانی معطر تھال لے کر ان کے استقبال کو آئیں گے،ہر ایک کے سر پر تاج ہو گا،سب سے اول حضرت محمد ﷺ کی امت بہشت کی طرف چلے گی پھر باقی گروہ آگے پیچھے چلیں گے،فرشتے نورانی معطر تھال آنحضرتﷺﷺ کے سامنے پیش کریں گے پھر اور پیغمبروں کو پھر اور لوگوں کو پیش کریں گے۔ سب سے آگے نبی کریم علیہ الصلوۃ و السلام گزریں گے اور سترہزار فرشتے جبرئیل علیہ السلام کے ہمراہ آپ کے ہم رکاب ہوں گے اور دس کروڑ خوش الحان غلمان خوش الحانی سے قرآن شریف پڑھتے ہوں گے،ستر ہزار چست و چالاک اور کمال زیب و زینت والے کوتل براق ہوں گے،نوری فرشتے باگیں پکڑکرچلیں گے،تمام فرشتوں میں خوشی کا غلغلہ ہو گا،جنت میں ہر طرف شادیانے بجیں گے،جنت کے دروازے کھل جائیں گے،سب سے پہلے آنحضرتﷺﷺ قدم رنجہ فرمائیں۔گے اور پیچھے پیچھے مومنین حمدِ باری تعالیٰ پڑھتے ہوئے داخل ہوں گے
بہشت کے 8درجے ہیں
 1– دارلاخلد،یہعام لوگوں کے واسطے ہے
2– دارالسلام،جو فقیروں اور صابروں کا مقام ہے
3– دارالمقام،جومالدار شکر گزاروں کا مقام ہے
4– عدن،یہ عابدوں،زاہدوں،غازیوں،سخیوں اور اماموں کے واسطے ہے
 5– دار القرار،اس میں حافظ و عالم رہیں گے
6– جنت النعیم،یہ شہدوں اور مؤذنوں کے لئے ہے 
7– جنت الماویٰ،جو شہدائےاکبر محسنین اور اولیاءکرام کا مقام ہے
8– جنت الفردوس،جو نبیوں اور رسولوں اور علماء عاملین کی جگہ ہے،۔
  فردوس بریں کے اوپر غرفہ نور ہے یہ مقام سرور حضرت خاتم الانبیا ﷺ کے واسطے ہے،مقام محمود اور وسیلہ جنت کا خاص درجہ رسول اکرم ﷺ کو عطا ہو گا۔ ان آٹھوں بہشتوں کے بھی بے شمار درجے ہیں،اگر دنیا کے سونا چاندی کو آٹھ گناہ کیاجائے تو ایک ادنیٰ بہشتی بھی اس سے زیادہ نعمت پائے گا،ادنیٰ سے ادنی مومن کو جو مکان ملے گا اس کی ایک ایک اینٹ سونے کی اور ایک ایک چاندی کی ہو گی زعفران اور مشک کا گارا ہو گا اس کر کنگرے لال اور زمرد کے ہوں گے،مشک وعنبرسے گچ ہو گا اور لال و گوہر سے گندھا ہوا ہو گا۔ اس مکان میں ستر ہزار دالان ہوں گے،جن میں سے ہر ایک پانچ سومیل کی مسافت پر فراغ ہو گا اور طرح طرح کی بیٹھکیں ہوں گی،جن میں حور وغلمان اور گانے والے بے شمار ہوں گے،اس میں قسم قسم کے گلزار و چمن ہوں گے،جنت کے میوے بہت لذیذ ہوں گے اگر ان میں سے ذرا سا ٹکڑا بھی کسی مردےکےمنھ میں ڈال دیا جائے تو وہ فی الفور زندہ ہو جائے اور وہ میوے ہمیشہ ایک حال پررہیں گے،کبھی کم نہ ہوں گے۔ جنت میں 4نہریں ہیں
1– ایسے پانی کی نہریں ہیں جن کا پانی زیادہ دیر رہنے سے متغیر نہیں ہوتا،بلکہ وہی اصلی ذائقہ رہتا ہو،
2– دودھ کی نہریں جن کا مزہ بھی دیر تک رہنے سے نہیں بگڑتا،
3– شراب کی نہریں جو نہایت خوش ذائقہ ہیں
 4– خالص اور صاف شہد کی نہریں،نہ اس شہد اور دودھ جیسی میٹھی دنیا کی کوئی چیز ہے اور نہ پانی اور شراب کی مثال دنیا میں مل سکتی ہے اور وہ شراب ایسی نہیں ہے جس میں بدبو،کڑواہٹ اور نشہ ہو اور جس کے پینے سے عقل جاتی رہے اور آپےسے باہر ہو کر بیہودہ بکتے پھریں،بلکہ وہ شراب ان سب عیبوں سے پاک ہے،جنت میں ایک ایسا درخت ہے کہ اگرسوارسوبرس تک اس کے سایہ میں چلے تو بھی ختم نہ ہو،ہر ایک جنتی کے لئے سنہرے تخت نہایت ہی زیب و زینت کےساتھ ہو گا،ہر طرف حور و قصور ہوں گے،غلمان سامنے۔ہوں گے،وریں نورانی مخلوق ہیں،جن کی خوبصورتی کی کوئی حد نہیں جنت کے کھانے اور لباس کی خوبیاں بیان سے باہر اور قیاس سے دور ہیں،کھانا پینا،آرام،خوشی،جماع،لذت وغیرہ بہشتیوں کوبہت حاصل ہو گا اور جو چیزیں چاہیں گے اسی وقت ان کے سامنے موجود ہو جائیں گی اور ان کی لذت دنیا کی لذتوں سےسیکڑوں گنا زیادہ ہوں گی اور وہ بے ضرر ہوں گی،میووں کی شکل اگرچہ دیکھنے میں ایک جیسی ہو گی مگر مزہ مختلف ہوگا،وہاں  نجاست،گندگی،پاخانہ،پیشاب،،تھوک،رینٹھ،کان کا میل،بدن کا میل ہرگز نہ ہوں گے،بلکہ خواہ کتنا ہی کھائیں ایک خوشبودارفرحت بخش ڈکار آئے گی یا خوشبودار فرحت بخش پسینہ آئے گا اور کھانا پینا ہضم ہو کر سب بوجھ و گرانی ختم  ہوجائےگی،ہر وقت زبان سے تسبیح و تکبیر وتحمید قصد کے ساتھ و بلا قصد سانس کی مانند جاری ہو گی۔ ہر جنتی کےسرہانےاورپائنتی دو حوریں نہایت اچھے آواز سے گائیں گی،مگر ان کا گانا یہ شیطانی مزا میر نہیں بلکہ اللّٰہ جل شانہ کی حمد وپاکی ہو گا وہ ایسی خوش گلو ہوں گی کہ مخلوق نے ویسی آواز کبھی نہ سنی ہو گی،اگرجنت کا کپڑا دنیا میں پہنایا جائے تو جو دیکھے وہ بیہوش ہو جائے،لوگوں کی نگاہیں اس کا تحمل نہ کر سکیں اگر بہشت کی نعمتوں میں زمین و آسمان کو ڈال دیا جائے تو اس طرح مل جائے کہ کچھ پتا نہ چلے جنت میں ایک بازار ہو گا جس کا نام سوق الجنہ ہے۔ اس بازار میں طرح طرح کی نعمتیں لا کر ڈھیر کر دی جائیں گی،ان میں جنتیوں کے لئے یاقوت،زمرد،موتی،لال،زبرجد اور دیگر قسم کی جواہرات اور سونے چاندی کی نورانی کرسیاں اور منبر ہوں گے،جو صرف مومنوں کو لئے موجود ہوں گے اور اعمال کے مطابق ہر ایک جنتی کو دئے جائیں گے،ادنیٰ سےادنیٰ جنتی مشک و کافور کے ٹیلے پر بیٹھے گا اور کوئی اپنے آپ کو ادنیٰ نہیں سمجھے گا بلکہ یہ کرسی والوں کو بھی اپنے سے بڑھ کر نہ سمجھیں گے،سب سرور کی حالت میں بیٹھے ہوں گے،اللّٰہ تعالیٰ کے دیدار سے مشرف ہوں گے اور اللّٰہ تعالیٰ کی حمد پڑھیں گے،جنت کی تمام نعمتیں بھول جائیں گے اور پھر جوش میں آ جائیں گے،اللّٰہ تعالیٰ کا دیدار ایسا صاف ہو گا جیسا کہ آفتاب اورچودہویں رات کے چاند کو ہر ایک اپنی اپنی جگہ سے دیکھتا ہے اور ایک کا دیکھنا دوسرے کے دیکھنے کو نہیں روکتا وہ سب اسی حالت پر ہوں گے کہ ابر چھا جائے گا اور ان پر ایسی خوشبو برسائے گا جو لوگوں نے کبھی نہ پائی تھی پھر اللّٰہ جل شانہ فرمائے گا کہ اس بازار سے تمہیں جس چیز کی خواہش ہے پسند کر لیں اور ہر قسم کے ریشمی لباس اور نہایت آبدار بیشمارموتیوں وغیرہ سے لے لیں،جب جنتی اپنی اپنی خواہش کے مطابق پسند کر لیں گے تو فرشتے جو اس بازار کو گھیرے ہوئے ہوں گے ان  تحفوں کو ان جنتیوں کے گھر پہنچا دیں گے،جنتی اس بازار میں آپس میں ملیں گے پھر وہاں سے اپنے اپنے مکانوں کے واپس آئیں گے ان کی بیویاں استقبال کریں گی اور مبارک باد دیں گی،عام مومنین کو اللّٰہ پاک کا دیدار ہر ہفتہ جمعہ کے دن ہو گا اور خاص مومنوں کو ہر روز دو بار فجر اور عصر کے وقت اور خاص الخاص مومنوں کو ہر وقت ہر گھڑی یہ نعمت حاصل ہوگی اور جنت میں اللّٰہ تعالیٰ کے دیدار سے بڑھ کر کوئی نعمت نہ ہو گی۔ اہل جنت مرد و عورت بہت حسین ہوں گے،سب بے ریش ہوں گے،سر کے بال اور پلکوں اور بھووں کے سوا بدن پر کہیں بال نہ ہوں گے،سب کی آنکھیں قدرتی سرمگیں ہوں گی،مرد و عورت خواہ کسی عمر کے ہو کر دنیا سے گزرے ہوں وہاں سب نوجوان ہوں گے اور ہمیشہ نوجوان رہیں گے،آپس میں اختلاف اور دشمنی نہیں ہو گی ایک دوسرے کو سلام کہیں گے کوئی فحش اور گناہ کی بات وہاں سننے میں نہ آئے گی،جو شخص ایک دفعہ جنت میں داخل ہو جائے گا پھر وہاں سے نہ نکالا جائے گا،بلکہ ابدالآباد تک وہیں رہے گا،جنت میں نہ موت ہے نہ نیند،غرض کہ جنت کی نعمتیں بیشمار،قرآن و احادیث میں ان کی تفصیل موجود ہے مزید اللّٰہ تعالیٰ جس کو نصیب کرے گا وہاں جاکر دیکھ لے گا
اَللَّھُمَّ ھَب لَنَا جَنتَ الفِردَوسِ وَارزُقنَا زَیِارَۃ وَ جھِکَ الکَرِیم بِجَاہ حَبِیبِکَ الَّرحِیم عَلَیہِ الصَّلوٰۃ وَالتَّسلِیم اٰمِینَ
2 comments
  1. Jannat aur dozakh kia ha us k baray quran ny khud kaha k tm nahi smjh skty.. Ye just misalen han jo tmhen samjhany k liy di jati han .. Dil ka sakoon jannat aur dil ki jalan wo jahanum ha jiska quran zikr kerta ha

  2. احادیث اور بزرگان دین کے اقوال سے بھی جو ثبوت ملتے ہیں یہ انہی کی بنیاد پر ہیں

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Pak Islamic Library

Authentic Islamic Books

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Urdu Islamic Books

islamic books in urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.wordpress.com

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Contact Us: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

creating happiness everyday

an artist's blog to document her creativity, and everyday aesthetics

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

%d bloggers like this: