حضرت اِشموئیل علیہ السلام-3

فرشتے صندوق عہد كیسے لائے؟

جیسا كہ قرآن میں  بیان ہوا ہے كہ ”فرشتے اس صندوق كو اٹھائے ہوئے ہیں ”یہاں  پر سوال یہ ہوتا ہے كہ فرشتےصندوق عہد كو كیسے لائے؟اس سلسلے میں  مفسرین نے مختلف باتیں  كى ہیں ۔ ان میں  سے زیادہ واضح تواریخ كےحوالے سے یہ ہے كہ جب صندوق عہد فلسطین كے بت پرستوں  كے ہاتھ لگا اور وہ اسے اپنے بت خانے میں  لےگئےاس كے بعد وہ بہت سى مصیبتوں  اور ابتلائوں  كا شكار ہوگئے تو ان میں  سے بعض كہنے لگے كہ یہ سب كچھ صندوق عہد كے آثار میں  سے ہے، لہذا انہوں  نے طے كرلیا كہ اسے اپنے شہر اور علاقے سے باہر بھیج دیں  گے۔كوئی شخص اسے باہر لے جانے كو تیار نہ ہوا۔مجبوراًدو بیل جوتے گئے اور صندوق عہد كو باندھ كر بیلوں  كو بیابان میں  جاكرچھوڑاگیا۔اتفاق سے یہ واقعہ ٹھیك اس وقت رونما ہوا جب طالوت كو بنى اسرائیل كا فرمانروا بنایا گیا۔
خدا نے فرشتوں  كوحكم دیا گیا كہ وہ ان دو بیلوں  كو اِشموئیل كے شہر كى طرف ہانك كرلے جائیں ۔بنى اسرائیل نےصندوق عہد كو دیكھا تو اسے طالوت كے خدا كى طرف سے مامور ہونے كى نشانى كے طور پر قبول كرلیا۔اسلئےظاہراًتودوبیل اسے شہر میں  لائے لیكن درحقیقت یہ كام خدائی فرشتوں  كى وجہ سے انجام پذیر ہوا اسى وجہ سےصندوق اٹھالانے كى نسبت فرشتوں  كى طرف دى گئی ہے۔اصولى طو پر فرشتہ اور ملك قرآن حكیم اور روایات میں  ایك وسیع مفہوم كا حامل ہے۔اس مفہوم میں  روحانى عقل ركھنے والے موجودات كے علاوہ اس جہان كى مخفى قوتوں  كاایك سلسلہ بھى شامل ہے۔
یہ داؤد كون سے داؤد تھے
اگر چہ قرآن میں  صراحت موجود نہیں  كہ یہ داؤد وہى پیغمبر ہیں  جو حضرت سلیمان علیہ السلام  كے والد گرامى ہیں یاكوئی اور شخص۔لیكن اس قرآن سے یہى ظاہر ہوتا ہے كہ وہ مقام نبوت كے حامل ہوئے قرآن آگے چل كر یوں  بیان كرتاہے :
”خدانے اسے حكومت اور علم عطا كیا اور جو كچھ وہ چاہتا تھا اسے سكھایا ”۔
ایسى تعبیر عام طور سے انبیاء كے متعلق ہى ہوتى ہے۔
”اور ہم نے اسكى حكومت كو مضبوط كردیا اور اسے علم و دانش عطا كیا”۔
اس سلسلہ كى ذیل میں  جو احادیث منقول ہیں  ان سے بھى واضح ہوتاہے كہ یہ وہى مشہور پیغمبر حضرت داؤد علیہ السلام تھے۔
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: