غیرمسلم شعراءکے نعتیہ اشعار

ہو شوق نہ کیوں نتِ رسولِ دوسرا کا
مضموں ہو عیاں دل میں جو لولاک لما کا
ہے حامی و ممدوح مرا شافعِ عالمﷺ
کیفی مجھے اب خوف ہے کیا روزِ جزا کا
برج موہن دتاتریہ کیفیؔ
سبق دنیا کو وحدت کا دیا حضرت محمدﷺ نے
دوئی کو دور ہر دل سے کیا حضرت محمدﷺ نے
سبق پاکیزگی اور نیکی کا دیا سب کو
بڑا احسان دنیا پر کیا حضرت محمدﷺ نے
پنڈت برج موہن لال زیبا امرتسری
مدحِ حسنِ مصطفیٰﷺ ہے ایک بحرِ بے کراں
اس کے ساحل تک کوئی شیریں بیاں پہنچا نہیں
جگن ناتھ آنندؔ
رواں ہوں جانبِ کوئے محمدﷺ
دکھا دے اے خدا روئے محمدﷺ
ہیں عنبر بار گیسوئے محمدﷺ
صبا لائی ہے خوشبوئے محمدﷺ
سردار شیر سنگھ شمیمؔ
ہو کس سے بیاں منزلت و شانِ محمدﷺ
ہے آپ خداوند ثنا خوانِ محمدﷺ
پائیں گے اگر حکم تو محشر میں فرشتے
آنکھوں سے بجا لائیں گے فرمانِ محمدﷺ
پنڈت بِشن نارائن دُرؔ
گلزارِ محمد کیا کہنا،بازارِ مدینہ کیا کہنا
ایمان کے سکے چلتے ہیں ، فردوس کا سودا ہوتا ہے
کرشن بہاری نورؔ
تو ہے محبوب خدا چاہنے والا تیرا
مرتبہ سارے رسولوں سے ہے بالا تیرا
آہ کر ہجرِ محمدﷺ میں سنبھل کر اے دل
عرش کے پار نکل جائے گا نالہ تیرا
گرمیِ شوقِ تمنا ہے تو ہاں۔۔ بسم اللہ
جان بے تاب ہوا دفیس نکالا تیرا
پیارے لال رونقؔ
فرازِ عرش سے احمد سرِ فرشِ زمیں آئے
مبارک اہلِ دنیا رحمت اللعالمیں آئے
فرشتوں سے کہیں بڑھ کر ہے رتبہ ذاتِ انساں کا
جو کردارِ محمدﷺ دیکھ لو، تم کو یقیں آئے
///
ثنا خوانِ پیمبر، ذاکرِ آلِ پیمبر ہے
خدا ہی جانتا ہے بندہ مومن ہے کہ کافر ہے
پنڈت گوپی ناتھ امنؔ
قلم کو جب شرف حاصل ہوا نعتِ پیمبر کا
بنا ہر لفظ اک تعویذ خوفِ روزِ محشر کا
کہا خورشید نے یہ میرا حق ہے کیوں زمیں پائے
لیا آغوش میں کرنوں نے سایہ جسمِ اطہر کا
گرسرن لال ادیبؔ لکھنوی
آدمیت کا غرض ساماں مہیا کر دیا
اک عرب نے آدمی کا بول بالا کر دیا
کہہ دیا لا تقنطو اخترؔ کسی نے کان میں
اور دل کو سر بسر محوِ تمنا کر دیا
پنڈت ہری چند اخترؔ
کہہ حال دل کا شاہِ رسالت مآب سے
ہو بے نیاز ذکر عذاب و ثواب سے
کہتی ہے مجھ کو خلق خراباتیِ نبیﷺ
اچھا کوئی خطاب نہیں اس خطاب سے
بال مکند عرش ملسیانی
یہ سینہ اور یہ دل دوسرا معلوم ہوتا ہے
کوئی پردوں میں دل کے آ چھپا، معلوم ہوتا ہے
کنور مہندر سنگھ بیدی سحرؔ
عشقِ رسول باعثِ رحمت ہوا قرار
جنت بنا ہوا ہے مدینہ رسولﷺ کا
مستِ مئے الست ہے گلزارِ دہلوی
بخشش کے واسطے ہے سہارا رسولﷺ کا
پنڈت آنند موہن زتشی گلزار دہلوی
خدا کا دل میں جہاں احترام روشن ہے
وہاں رسولِ خدا کا بھی نام روشن ہے
لبوں پہ نعتِ محمدﷺ کے جل اٹھے ہیں چراغ
دل و نظر کی فضائے تمام روشن ہے
سیماب سلطان پوری

اردو ادب میں غیر مسلم شعرا

Advertisements
1 comment
  1. Jasmin said:

    بہت اچھی کوشش ہے۔

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: