پردہ ضروری کیوں-2؟

عموی طورپرلباس انسانی جسم کو موسمی اثرات سے محفوظ رکھنے کا ذریعہ سمجھاجاتاہے اوراسی سوچ کے تحت لباس میں کمی بیشی کاجواز نکالاجاتاہے یہ درست نہیں کیونکہ اگر لباس کا واحدمقصد بیرونی اثرات سے بچاناہی ہو تو نفس پرست انسان بے لباسی کیلئے ایسے ماحول کو جواز بناسکتے ہیں جو موسم کی سختیوں یعنی گرمی ،سردی،بارش، گرد وغبار اور دیگر آلودگیوں سے محفوظ ہوجب کہ اسلام کا مطلوب یہ ہے کہ انسان لباس میں رہے ۔ایسا لباس جو سادہ ہو اوربنیا دی ستر وحجاب کے تقاضے پورے کرے ۔جیساکہ قرآن کریم میں ارشادفرمایا:ٰیبَنِیْٓ ٰادَمَ قَدْ اَنْزَلْنَا عَلَیْکُمْ لِبَاسًا یُّوَارِیْ سَوْٰاتِکُمْ وَ رِیْشًاط وَ لِبَاسُ التَّقْوٰیلا ذٰلِکَ خَیْرٌط ذٰلِکَ مِنْ ٰایٰتِ اﷲِ لَعَلَّہُمْ یَذَّکَّرُوْنَ۔۔۔اے آدم علیہ السلام کی اولاد ہم نے تمہارے لئے لباس پیداکیاجوتمہاری شرمگاہوں کو بھی چھپاتاہے اورموجب زینت بھی ہے اورتقویٰ کا لباس تواس سے بڑھ کر ہے یہ اللہ تعالیٰ کی نشانیوں میں سے ہے تاکہ یہ لوگ یاد رکھیں ۔(سورۃ الاعراف7 آیت26 )
یہ واضح رہے کہ لباس کے دو حصے ہیں اولاً بنیادی لباس جو ستر کوعمومی اوقات اور حالات میں محرم اورنامحرم دونوں سے چھپائے اورثانیاًوہ بیرونی چادرجس سے چہرہ ،جسمانی محاسن اورخد وخال نامحرموں سے ڈھکے چھپے رہیں جس کو حجاب کہتے ہیں چنانچہ اسلامی نقطہ نگاہ سے لباس کا اصل مقصد سترکو چھپانا اوربے پردگی اور اس کے اثرات سے بچاناہے نہ کہ دیگر وجوہات جس کو اہل مغرب اوردیگرغیرمسلم اقوام جواز بناکر کم لباسی ،تنگ لباسی یا مکمل بے لباسی کی طرف مائل ہوتے ہیں ۔
ممکن ہے کہ کوئی شخص یہ کہے کہ بے پردگی اور بے لباسی الگ الگ چیزیں ہیں تو ایسا سوچناغلط ہے اپنے آپ کو دھوکہ نہ دیں اور بے پردگی کو معمولی گناہ نہ سمجھیں بے پردگی بے لباسی کا ابتدائی مرحلہ ہے اورشیطان کے بڑے ہتھیاروں میں سے ہے ۔چنانچہ ایک بے پردہ ا وربے حس انسان شیطان کا بہت اہم آلہء کارہے۔بے پردگی ایک تدریجی اور ارتقائی عمل ہے،احسا س کو مارنے کادھیرے دھیرے دیاجانے والا زہر(Slaw pins)ہے فحاشی اور بے حیائی کے منصوبہ ساز (Master mind) ملی میٹر کے حساب سے کپڑے مختصر کرواتے ہیں اور بے لباسی اس کا منطقی انجام ہے ۔ ،مزیدیہ کہ کم لباسی (بے پردگی )کی طرح تنگ لباسی بھی شیطان کے ہتھیاروں میں سے ہے اس کا مقصد جسمانی خد وخال کا اظہارکرناہے اورستر مزید واضح ہوتاہے۔بے پردگی اوربے لباسی ایساجرم ہے جو جنت سے محروم کروادیتاہے آدم، وحواء علیھما السلام کے قصے سے یہی پتہ چلتاہے اس لئے آج بھی شیطان بنی آدم سے یہ گناہ براہ راست کرواتاہے ۔بے پردگی ،بے حسی اوربے لباسی کے تعلق کو مندرجہ ذیل شکل سے واضح کیا گیا ہے۔چنانچہ:
بے پردگی، بے حسی اور بے لباسی کا تعلق
وہ پردہ جو مکمل احساس اورحیا کے تحت کیاجائے وہی اسلام کا مطلوب ہے اوراس کو (I)سے ظاہرکیاگیاہے ۔
وہ پردہ جس میں احکام ستروحجاب کی جزئیات کا خیال نہ رکھا جائے وہ دکھلاوا یا منافقت ہے اس صورت حال کو(II)سے ظاہر کیاگیاہے۔
وہ صورتحال جس میں کسی خاتون کوجبراً بے پردگی پر مجبورکیاجائے جب کہ وہ پردہ کرنے کی خواہش اور احسا س رکھتی ہووہ حالتِ جبر کی بے پردگی ہے جیساکہ بعض گھرانوں یا یورپ کے ملکوں میں ہوتاہے اس کو نمبر (III)سے ظاہر کیا گیا ہے۔
ایسا انسان جو نہ احساس رکھتاہے اورنہ ہی کسی قسم کا لحاظ رکھتاہے اوربے پردگی پر مصر ہے وہ مکمل بے حیائی کی راہ پر ہے اس کو (IV)سے ظاہرکیاگیاہے ۔
انسان کی فطرت میں تعریف اورخود نمائی کی خواہش اورصنفِ مخالف کے لئے کشش ہے بے پردگی کے ارتکاب کیلئے شیطان انسان کی اسی فطرت سے فائدہ اٹھاتاہے اوراس کو تعریف اورخود نمائی کیلئے اُکساتاہے اس حوالے سے جسمانی خوبصورتی اورحسن کے اظہار کو بطور ہتھیار استعمال کرواتاہے اشتہارات میں بے پردخواتین کابے باک اور بے محابا استعمال شیطان کے ان ہی ہتھیاروں میں سے ایک ہے۔دیکھا گیاہے کہ شروع شروع میں ایک فیشن ماڈل صرف بے پردگی کا جرم کرتی ہے اور آخر کار وہ اس ضمن میں آخری حدوں کو پار کرجاتی ہے یا مجبور کردی جاتی ہے ۔ اسلام تعریف ، دکھلاوے اور خود نمائی کے تمام راستے بند کرتا ہے۔کیونکہ یہ تمام چیزیں انسان کو دنیاوی معاملات میں مشغول رکھ کر فکر آخرت سے غافل کرتی ہیں ۔ اسلام کا نظامِ ستر و حجاب در حقیقت تعریف و خود نمائی کے تمام طریقے بند کرنے کا ایک مؤثر ذریعہ ہے اور اسی نفسیاتی محرک کی بیخ کنی کے نکات پر مشتمل ہے یعنی معترضہ زیب و زینت کا اختیار کرنا اور اظہار دونوں ہی منع ہے ۔
نسلِ انسانی کی بقا کیلئے حیا کا احساس بہت اہم ہے اسلام کے نظامِ سترو حجاب کا مقصد اس قیمتی جوہرکی حفاظت ہے۔ چنانچہ ایک باحیا انسان حیاکے احساس اورزندہ ضمیری کے تحت مختلف قسم کی برائیوں سے بچارہتاہے ۔شیطان کا حتمی مقصداحساسِ حیاکی تباہی وتخریب ہے اوربے لباسی اس کی اس مہم کا ایک اہم ذریعہ ہے وہ ابتداء کم لباسی(بے پردگی ) یاتنگ لباسی کے ذریعہ کراتاہے یعنی کم لباسی اورتنگ لباسی بے لباسی کے تدریجی مراحل ہیں ۔اسلام کااصل مقصد تزکیہ نفس کے حوالے سے خود نمائی ،تعریف ،تحسین اور تفاخر وغیرہ سے بچنا اور بچانا اورمعاشرے کی اصلاح ہے اور پردہ اور حجاب اس حوالے سے اسلامی تعلیمات کا ایک جز ہے تاکہ انسان بدفطرت لوگوں کی شرارت واذیت سے محفوظ رہے اور دوسروں کو متاثرکرنے یعنی ازخود بگاڑ کا محرک بھی نہ بنے یعنی کوئی شخص نہ پریشان کیا جائے اورنہ پریشانی کا باعث بنے
ماضیِ قریب کی تاریخ پر غورکریں تو یہ بات سامنے آتی ہے کہ دوسو(200) سال قبل تک مغرب کاظابطہِ لباس (Dress Code )آج کے پاکستان سے زیادہ قدامت پسند(conservative)اور(covering) تھا ۔اور اُس وقت کے مغرب میں بھی لباس اور پردے کی اقدار تھیں یعنی مغرب کو آج بے لباسی کے اِس درجہ پر پہنچنے میں ایک طویل عرصہ لگا انسانی معاشرے میں جب بھی پردے کوترک کیاگیا تواس کا ایک حتمی نتیجہ بے لباسی کی صورت میں ظاہرہوا اورایک وقت آیا کہ صنفِ مخالف میں عدم دلچسپی کارجحان ہوا اور ہم جنسی عام ہوئی اورآج یورپ میں اب حالت یہ ہے کہ ہم جنسی سے بھی بیزار ہوکر انسان جانوروں میں سکون تلاش کررہاہے۔ آج مغرب ازخود تنگ ہے اوربے پردگی کے اثرات بھگت رہاہے اور المیہ یہ ہے کہ آج ہم اسی سمت پر چل رہے ہیں ۔ہم بے پردگی اوربے حیائی کے تذکرے اورتفاصیل میں جاکر قاری کا ذہن اورصفحات خراب نہیں کرناچاہتے ویسے بھی بے حیائی اوربری باتوں کے تذکرے اوراعادۂ بیان کا حق صرف مظلوم کو ہے۔
لااَا یُحِبُّ اﷲُ الْجَہْرَ بِالسُّوْٓئِ مِنَ الْقَوْلِ اِلَّا مَنْ ظُلِمَط وَ کَانَ اﷲُ سَمِیْعًا عَلِیْمًا۔۔۔برائی کے ساتھ آواز بلند کرنے کو اللہ تعالیٰ پسند نہیں فرماتا مگر مظلوم کواجازت ہے اوراللہ تعالیٰ خوب سنتاجانتاہے (سورۃ النساء :4آیت146)
Advertisements
1 comment
  1. Psychological analysis is really admirable.

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: