خَتمِ نبَّوت پر حملے:-1

جھوٹے مدعیانِ نبوت۔۔۔نگاہِ رسالت میں
آپ انے فرمایا کہ میری اُمت میں تیس دجال (یعنی دھوکے باز انسان) پیدا ہوں گے اور ہر ایک نبی ہونے کا (جھوٹا) دعویٰ کرے گا۔لاتقوم الساعۃ حتی یبعث دجالون کذابون قریبا من ثلاثین کلہم یزعم انہ رسول اللہ (صحیح مسلم عن ابی ہریرہؓ)قیامت قائم نہیں ہوگی یہاں تک کہ تیس کے قریب جھوٹے دجال اٹھیں گے ہر ایک دعویٰ کرے گا کہ میں اللہ کا رسول ہوں۔
صہیونیت اور میڈیا
آج سے ایک صدی قبل تک شاعری، خطابت ساحری اور کتب نویسی کا دور تھا لہٰذا صہیونیت نے اسی میدان میں اپنے مطلب کے آدمی کھڑے کئے۔ موضوع احادیث کے ذریعے فرامین رسالت کو داغدار کرنے کی وسیع کوششیں ہوئیں۔ مسلمان علماء و زعماء کی تصانیف میں اپنی طرف سے عبارات داخل کر دینا تاکہ ان کو بدنام کیاجاسکے اور اپنے شیطانی خیالات کی تائید حاصل کی جاسکے۔ یہ کام خوب کیا گیا۔
اسی طرح تصوف کے میدان میں صہیونیت نے بے شمار اپنے آدمی داخل کرکے مخلص اور خداپرست صوفیاء کو بدنام اور رسوا بھی کیا اور نتیجہ کے طور پر عوام میں بےدینی،بے عملی،دین سے دوری پھیلتی چلی گئی جو بالواسطہ طور پر صہیونیت ہی کے مقاصد کو آگے بڑھانے اور اس کے پرچاروں (درندوں اور انسان نما شیطانوں) کےلئے نرم چارہ ثابت ہوئے۔
دورِ حاضر میں سینماکی ایجاد، ریڈیو، ٹی وی، کلرفوٹو، وی سی آر،فلمیں، انٹرنیٹ،کمپیوٹر اور موبائل فون کی ایجاد سے میڈیا نے بڑی اہمیت کر لی ہے اور آج صہیونیت کےہاتھ میں یہ سب کچھ موثر ہتھیار بن گئے ہیں۔
صہیونیت  اور توہین رسالت
صہیونیت کا ایک ہتھکنڈا جو آج کے میڈیا کے دور میں عوامی سطح پر گمراہی کا سیلاب لانے کا ذریعہ بن رہا ہے اور مسلمان عوام کے ذہنوں میں حضرت محمد ﷺ کی ذاتِ اقدس کے بارے میں تقدس اور احترام اورتعظیم کے جذبات کو گھن کی طرح چاٹ رہا ہے وہ توہین رسالتﷺ کی مختلف کاروائیاں ہیں۔ یہ کاروائیاں ہمارےلئےتو سوہان روح ہیں ہی‘ صہیونیت کے چہرے سے انسان دوستی اور ہمدردی کا پردہ ہٹا کر اسکا حقیقی مکروہ ابلیسیت والا چہرہ دکھانے کا ذریعہ بھی ہیں۔
صہیونیت اور قرآن دشمنی
ابلیسیت کی آلہ کار  صہیونیت کے لئے اپنے مقاصد کے حصول کے ضمن میں کسی بڑے کے راستے میں آسمانی کتاب قرآن مجید رکاوٹ ہے۔ اس شیطانی گروہ نےتورات، زبور اور انجیل تو چھپا دی تھیں مگر قرآن مجید  کی حفاظت کا ذمہ خود اللہ تعالیٰ نے لیا ہے کہ یہ آخری کتاب ہے۔ لہٰذا قیامت تک موجودہ رہے گی یہ قرآن مجید اس صہیونیت کے سینے کا روگ ہے اور لوگوں کو قرآن پڑھتے پڑھاتے دیکھنے سے صہیونیت کے پرستار خون کے آنسو روتے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ صہیونیت کے خرید کردہ کچھ اخبار، کچھ نیم مذہبی لوگ، کچھ میڈیا پر گفتگو کرنے والے قرآن کی توہین کرتے ہیں اور پرنٹ میڈیا کے لوگ ایسے واقعات کو نمک مرچ لگا کر شوق سے چھاپتے اور عام کرتے ہیں تاکہ عوام کے دل سے قرآن مجید کی عظمت نکل جائے۔
مسلمانوں کو اپنے نبی حضرت محمد ﷺاورآپ کے سچے پیروکاروں کی طرح چوکنا اور بیدار رہنا چاہئے اور صہیونیت جیسے ازلی دشمن سے خبردار___تاکہ ہم اس ابلیسی گروہ کے ہرمنصوبے اور ہرچال کو جیسے پہلے ناکام بناتے رہے ہیں آئندہ بھی ناکام بنا سکیں۔
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: