سیّدہ فاطمہ بنتِ اسد بن ہاشم -3

اولاد اطہار

آپ کے چار صاحبزادے اور دو صاحبزادیاں تھیں ۔سیّدنا طالب ، سیّدنا عقیل ، سیّدنا جعفر ، سیّدنا علی صاحبزادے جبکہ سیّدہ ام ہانی ا ور سیّدہ جمانہ صاحبزادیاں تھیں ۔ان سب سے بڑھ کر باعث تخلیق کائنات آپ کے فرزند تھے ۔آپ کا گھر نہ صرف اسلام کی ابتدائی آغوش ہے بلکہ تاقیامت اس دین خدا کی محکم حصار بندی کا فریضہ بھی اسی خانوادے کا اعزاز ہے ۔ریگزار کرب وبلا سے لے کر وادیء فخ، بغداد و شیراز ،اصفہان و ساوِہ،نیشاپور اوردیگرکئی مقامات پہ اسلام کی خاطر نوک سناں کی زینت بننے والی اولاد سیّدہ فاطمہ بنت اسد ہی کی ہے۔ بانیء اسلام سیّدنا محمدمصطفٰی اور محافظ اسلام سیّدنا علی المرتضٰی آپ ہی کے گھرپروان چڑھے۔آپ ہی کی تربیت کے زیر اثر سیّدنا حضرت علی شب ہجرت حضورکے بستر مبارک پر آرام فرما ہوئے ۔
سیّدنا طالب بن ابی طالب
سیّدنا طالب بن ابی طالب ،سیّدہ فاطمہ بنت اسد کے سب سے بڑے صاحبزادے تھے اور آپ ہی کی مناسبت سے سیّد البطحاء کی کنیت مبارکہ ابو طالب معروف ہے ۔ اوائل حیات ہی میں انتقال فرمایا۔
سیّدنا عقیل بن ابی طالب
آپ سیّدہ فاطمہ بنت اسد کے دوسرے صاحبزادے تھے۔ 590ء میں متولد ہوئے۔فہم و فراست، حاضر جوابی، معلومات اور انساب عرب پہ کامل عبور کے باعث عرب میں انتہائی ممتاز حیثیت رکھتے تھے۔ہجرت مدینہ کے موقع پر سرکاردوعالم نے آپ کو اموال بنی ہاشم کا نگران مقرر فرمایا۔8ھ میں مدینہ پہنچے ۔ جنگ موتہ میں شرکت فرمائی اور غازیِ اسلام کے اعزاز سے مشرف ہوئے ۔سیّدنا ابوطالب کے منظور نظر نور چشم تھے جس باعث حضور نبی کریم آپ سے والہانہ محبت کرتے اورفرماتے ۔
وَاللّٰہ!اِنِّیْ اُحِبُّکَ حُبَّیْن،حُبّاًلِّقَرَابَتِکْ وَحُبّاًکَمَاکُنْتُ اَعْلَمُ مِنْ حُبِّ عَمِّی اِیَّاک ۔
خدا کی قسم !عقیل میں آپ سے دوگنی محبت رکھتا ہوں ،ایک تو قرابتداری کی محبت اور دوسرے میرے تایا (ابو طالب رضی اللہ تعالٰی عنہ ) کا آپ کو بہت زیادہ چاہنا میرے علم میں ہے ۔
امیر المومنین کی خلافت کے ایام میں آپ ان کے سفیر رہے ۔ سیّدنا عقیل عرب کے ہر خانوادہ کا مکمل علم رکھتے تھے اور قبائل عرب کی نسبی کمزور یوں سے بخوبی واقف تھے اور ان کے اعمال و افعال پر نکتہ چینی فرمایا کرتے تھے۔ اس لئے لوگ آپ کے دشمن رہے اور محسود بنائے رکھا۔ رؤ سائے عرب اور شرفاء آپ کے مشورہ سے شادی کیا کرتے تھے۔ حضرت سیّدنا علی بن ابی طالب رضی اللہ تعالٰی عنہ نے آپ ہی کے مشورہ سے سیّدہ ام البنین فاطمہ کلابیہ سے عقد فرمایا۔حیات مبارکہ کے آخری ایام میں بصارت ضعیف ہوگئی۔52 ھ میں 96برس کے سن دنیا میں انتقال فرمایااور جنت البقیع مدینہ منورہ میں آرام فرما ہیں ۔
آپ کے صاحبزادے اور پوتے سانحہ کربلا کے پہلے شہید ہیں ۔سیّدنا مسلم بن عقیل ،سفیر حسین بن کر کوفہ تشریف لے گئے اور اپنے دوصاحبزادوں سیّدنا محمد اور سیّدنا ابراہیم کے ہمراہ کوفہ میں شہید ہوئے ۔آپ کے دوصاحبزادے عاشورہ کے روز کربلا میں شہید ہوئے ۔دخترحضرت ،تاجدار ہند،سیّدہ رقیہ بنت علی ،المعروف بی بی پاکدامن ،لاہور شریف حضرت عقیل کی بہو تھیں ۔سیّدنا عقیل کے 5صاحبزادے تھے۔
1-حضرت مسلم بن عقیل 2۔ حضرت محمد بن عقیل 3۔ حضرت عیسیٰ بن عقیل 4۔ حضرت حسن بن عقیل 5۔ حضرت ابن عقیل اور ایک صاحبزادی سیّدہ رملہ بنت عقیل تھیں ۔آپ کے صاحبزادے محمد ابن عقیل سے بنی داؤد کا قبیلہ ہے اور حضر موت یمن میں مقیم بجابر قبائل بھی آپ ہی کی نسل ہیں ۔
سیّدنا جعفر بن ابی طالب
اسلام کے عظیم جرنیل ،سیّدنا جعفر بن ابی طالب عام الفیل سے 25 سال بعد 595ء میں آغوش بنت اسد میں جلوہ افروز ہوئے ۔آپ سیّد المرسلین سے 25 برس صغیر السن اور سیّدنا امیر المومنین حضرت علی کرم اللہ وجہہ سے 10برس کبیر السن تھے ۔صورت وسیرت میں سرکار دوعالم سے انتہائی مشابہ تھے جس باعث حضور فرمایا کرتے :
اَنْتَ اَشْبَھْتُ خَلْقِیْ وَخُلْقِیْ ،آپ صورت وسیرت میں مجھ سے انتہائی مشابہ ہیں
ایک مقام پہ سرکار دوعالم نے فرمایا :
خَلَقَ الْنَّاسُ مِنْ اَشْجَارشَتّٰی وَخَلَقَتْ اَنَاوَجَعْفَرٍمِنْ طِیْنَۃٍ وَاحِدَہْ ، تمام لوگ ایک نسب کی پیداوار ہیں اور میں اور جعفر ایک طینت سے ہیں
آپ فرماتے :
اَلْنَّاسُ مِنْ شَجَرٍشَتّٰی وَاَنَا وَجَعْفَرٍمِنْ شَجَرَۃِوَاحِدَہْ ۔ سیّدنا جعفر کی کنیت ابو عبداللہ تھی اور رسول اکرم انہیں ابو المساکین کہہ کر مخاطب ہوتے تھے ۔
ابو سعید خدری روایت کرتے ہیں کہ پیغمبر اکرم نے فرمایا :
خَیْرُ الْنَّاسِ حَمْزَۃْ وَجَعْفَرْ وَعَلِیْ عَلَیْھِمُ الْسَّلام لوگوں میں سب سے بہترین حمزہ ،جعفر اور علی ہیں
خیبر کے مقام پر آپ فتح خیبر کے دن حبشہ سے واپس تشریف لائے تو حضور نبی کریم نے فرمایا:
مَااَدْرِیْ بِاَیِّھمَااَنَااَشَدُّفَرْحاً،بِقَدُوْم جَعْفَرْاَمْ بِفَتْح خَیْبَرْ میں نہیں جانتا کہ ان دونوں میں سے مجھے کس کی خوشی زیادہ ہے ،آمد جعفر کی یا فتح خیبر کی حبیب کبریا نے سیّدنا جعفر بن ابی طالب کو گلے لگایا اور روشن پیشانی پہ بوسہ دے کر فرمایا :
یقیناجعفر اور ان کے رفقا نے 2ہجرتیں فرمائی ہیں ،ایک ہجرت حبشہ اور دوسری ہجرت مدینہ ۔
ہجرت حبشہ کے دوران اسلام کی خاطر آپ نے حضرت جعفر طیّار اور آپ کی زوجہ حضرت اسماء بنت عمیس سے جدائی کو برداشت کیا۔سیّدنا جعفر طیّار خاندانی فصاحت و بلاغت کے وارث تھے اور پرجوش خطابت کے باعث اپنا نقطۂ نظر عوام الناس سے منوا لیا کرتے تھے ۔ اسی خصلت کے باعث شاہ حبشہ کے دربار میں قریش کے مطالبہ کے برعکس آپ نے اہل اسلام کا دفاع کیا اور کفار کے شر سے محفوظ فرمایا۔آپ نے 8 ہجری میں جنگ موتہ (اردن )میں افواج نبوی کی قیادت فرمائی اور جام شہادت نوش کیا ۔آپ کے دونوں بازوکٹ گئے تو آپ نے پرچم اسلام دندان مبارک کے سہارے بلند رکھا۔آپ اسلام کے واحد شہید ہیں جنہیں زبان رسالت نے طیّار کا لقب عطا کرتے فرمایا :
رَاَیْتُ جَعْفَراًمَلَکاًیُّطِیْرُفِیْ الْجَنَّۃْمَعَ الْمَلائِکَۃْ بِجَنَاحِیْن میں جعفر کو جنت میں فرشتوں کے ہمراہ اپنے دو بازوؤں سے محو پرواز دیکھ رہا ہوں
دیگر اولاد کی نسبت حضور سے سیّدنا جعفر طیّار کی حد درجہ مشابہت اور بے پناہ دانشمندی کے باعث سیّدہ فاطمہ بنت اسد آپ سے خصوصی پیار فرماتی تھیں ۔
جعفرِ طیّار پسر فاطمہ بنت اسد قصر بوطالب نکھارا جعفرِطیّار نےآپ کلام مجید کے پہلے حافظ ہیں ۔سیّدہ فاطمہ بنت اسد اور سیّدنا ابو طالب رضی اللہ تعالٰی عنہ کی عترت طاہرہ کےہزاروں شہداء میں پہلے شہیدِراہ حق اور مکّہ کی وادیوں سے باہر اسلام کے پہلے مبلغ ہیں ۔اس طرح آپ کئی اعزازاتِ ربانی میں اولیت کے حامل ہیں ۔آپ کے بڑے صاحبزادے سیّدنا عبداللہ بن جعفر طیّار کا عقد ثانیء زہراسیّدہ زینب الکبریٰ سے ہوا اور چھوٹے صاحبزادے سیّدنا محمد بن جعفر طیّار ،سیّدہ ام کلثوم زینب الصغریٰ کے ہمسر تھے۔حضرت عبداللہ بن جعفر طیّار کے دوصاحبزادے سیّدنا عون اور سیّدنا محمد سانحہ کربلا میں نصرت حضرت حسین میں شہید ہوئے۔
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: