شاہ احمد رضا خان بَریلوی-4

اشاعت اسلام
مولانا نے ہوش سنبھالنے کے بعد اپنی ساری زندگی اسلام کے خدمت اور سنیت کی اشاعت میں صرف فرمائی اور تقریباً 1 ہزار کتابیں لکھیں جن میں فتویِٰ رضویہ بہت ہی ضخیم کتاب ہے۔ مولانا نے قرآن مجید کا صحیح ترجمعہ اردو میں تحریر فرمایا جس کو عالم اسلام کنزالایمان فی ترجمۃ القرآن کہتی ہے۔یہ اردو کے موجودہ تراجم میں
سب پر فائق ہے۔ اس پرآپ ؒ کے خلیفہ صدر الافاضل مولانا سیّد نعیم الدین مراد آبادی ؒنے حاشیہ لکھا ہے۔
رد وہابیت
آپ کے زمانے میں نیچریوں، مکار صوفیوں،غیر مقلدین، دیوبندی وہابیوں، قادیانیوں نے اسلام و سنیت کے خلاف دھوکے کا جال بچھا کر بھولے بھالے مسلمانوں میں خوب گمراہی پھیلا رکھی تھی ۔ آپ نے دین و شریعت کی حمایت میں ان سب گمراہ گروہوں سے چومکھیا لڑائی لڑ کر سب کے دانت کھٹے کردئےاور حق و باظل کو خوب
واضح کر کے دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی کر دیا۔آپ کےفتاوے اور کتابوں کے زریعہ اللہ تعالیٰ نے ہزاروں بہکے مسلمانوں کو ہدایت عطافرمائی۔ بہت سے وہ علماء جو
گمراہی کے سیلاب میں بہتے جارہے تھے آپ کی رہنمائی سےانہوں نے حق قبول کیا اور سیّدھی راہ پر ہوگئے۔ جب وہابیوں، دیوبندیوں نے سرکار محمّدمصطفیٰ ﷺ کےشان میں گستاخی اور توہین کتابوں میں لکھ کر شائع کی ،اور مسلمانوں کوبگاڑنا شروع کیا تو آپ نےاظل پہاڑ کی طرح جم کر سرکار محمّد مصطفیٰ ﷺکی محبت کاپرچم لہرایا اور مسلمانوں کو سرکار کی محبت و تعظیم کا سبق دیا اور گستاخ ملاؤں کولوہے کے چنے چبوادئے۔
تصانیف
آپ ؒ نے کم و بیش مختلف عنوانات پر کم وبیش 1 ہزار کتابیں لکھیں ہیں۔ یوں تو آپ ؒ نے 1286ھ سے 1340ھ تک لاکھوں فتوے لکھے۔لیکن افسوس کہ سب کو نقل نہ کیا جاسکا، جو نقل کرلیئے گئے تھے ان کا نام “العطا یا النبویہ فی الفتاویٰ رضویہ” رکھا گیا۔ فتاویٰ رضویہ جدید کی 30 جلدیں ہیں جن کے کل صفحات 21656، کل سوالات و جوابات6847 اور کل رسائل 206 ہیں۔ ہر فتوےمیں دلائل کا سمندر موجزن ہے۔
قرآن و حدیث، فقہ منطق اور کلام وغیرہ میں آپ ؒ کی وسعت نظری کا اندازہ آپ ؒ کے فتاوے کے مطالعے سے ہی ہو سکتا ہے، آپ ؒ کی چند دیگر کتب کے نام درج ذیل ہیں:
“سبحٰنُالسُّبوح عن عیب کذب مقبوع” سچے خدا پر جھوٹ کا بہتان باندھنے والوں کے رد میں یہ رسالہ تحریر فرمایا جس نے مخالفین کے دم توڑ دیئے اور قلم نچوڑ دیئے۔نزول آیات فرقان بسکون زمین و آسمان اس کتاب میں آپ نے قرآنی آیات سے زمین کو ساکن ثابت کیا ہے۔ ۔اور سانسدانوں کے اس نظریئے کا کہ زمین گردش کرتی ہے رد فرمایا ہے۔
علاوہ ازیں یہ کتابیں تحریر فرمائیں:المعتمد المستند، تجلی الیقین، الکوکبتھ،اتشھائبھ سل، اکسیوف، الھندیھ، حیات الاموات وغیرہ۔
حدائق بخشش
آپ ؒ کی نعتیہ کلام کی کتاب حدائق بخشیش نے اردو کو مسلمانوں، مومنو ںاور صوفیوں کی زبان بنادی ہے۔
مصطفیٰ جانِ رحمت پہ لاکھوں سلام                     شمع بزمِ ہدایت پہ لاکھوں سلام
بہت مشہور ہے۔
وصال
اعلٰی حضرت ؒ نے اپنی وفات سے چار (4) ماہ بائیس (22) دن پہلے خود اپنے وصال کی خبر دے کر ایک آیتِ قرآنی سے سال وفات کا استخراج فرمایا تھا۔ وہ آیت مبارکہ یہ ہے۔:
ویطاف علیھم باٰنیۃ من فضۃ واکواباور ان پر چاندی کے برتنوں اور کوزوں کا دور ہو گا۔ ( پ 29 الدھر15)
مولانا حسنین رضا خان جنہوں نے اس الوادعی سفر کا روح پرور نظارہ اپنی آنکھوں سے دیکھا تھا۔لکھتے ہیں کہ :25صفر المظفر 1340ھ مطابق 1921ء کو جمعہ مبارک کے دن احمد رضا خانؒ نے وصیت نامہ تحریر کرایا۔ پہر اس پر خود عمل کرایا۔ تمام کام گھڑی دیکھ کر ٹھیک وقت ہوتے رہے۔جب دو بجے میں 4 منٹ باقی تھے وقت پوچھا عرض کیا گیا۔ “اس وقت ایک بج کر 56 منٹ ہو رہے ہیں “ فرمایا گھڑی رکھ دو۔یکایک ارشاد فرمایا۔تصاویر ہٹا دو، حاضرین سوچ میں پڑ گئے کہ یہاں تصاویر کا کیا کام یہ کہ یہاں تو کبھی تصاویر آئیں ہی نہیں کہ اتنے میں حضرت نے خود ارشاد فرمایا: یہی کارڈ،روپیہ،پیسہ(انہیں
تو تصاویر ارشاد فرما رہے تھے)
پھر ذرا وقفے سے برادر معظم حضرت مولانا مولوی محمّد رضا خان صاحب سے ارشاد فرمایا وضو کر آؤ قرآن لا ؤ ۔ ابھی تشریف نہ لائے کہ برادر مولانا مصطفٰی رضا خان سے پھر ارشاد فرمایا۔ اب بیٹھے کیا کر رہے ہو سورۂ یس شریف سورۂ رعد تلاوت کرو۔ عمر شریف کے اب صرف چند منٹ باقی رہ گئے ۔ حسب الحکم دونوں سورتیں تلاوت کی گئیں۔ ایسے حضور قلب اور تیقین سے سنیں کہ جس آیت میں اشتباہ ہوا یا سننے میں نہ آئی تو خود تلاوت فرما کر بتلا دی ( سبحان اللہ)
سفر کی وہ دعائیں جن کا چلتے وقت پڑھنا مسنون ہے۔ تمام و کمال بلکہ معمول شریف سے زیادہ پڑھین۔پھر کلمہ طیبہ پورا پڑھا۔ اس وقت ہندوستان کے وقت کے مطابق 2 بج کر 38 منٹ ہوئے تھے اور عین اذان کے وقت جب ادھر موذن نے حی الفلاح کہا تھا اور ادھر امام احمد رضا خانؒ نے داعئی اجل کو لبیک کہاتھا۔
انا للہ وانا الیہ راجعون
ایک عجیب واقعہ :
12ربیع الثانی 1340 ھ میں ایک شامی بزرگ دہلی تشریف لائے ان کی آمد کی خبر پا کر مولانا عبد العزیز محدث مراد آبادی (استاددارالعلوم ازرفیہ اعظم گڑھ)کےعم محترم ؒ(جو ایک بلند پایہ بزرگ تھے)ان سے ملاقات کی ۔بڑی شان و شوکت کے بزرگ تھے۔ طبیعت میں استغناء بہت زیادہ تھا۔مسلمان جس طرح عربوں کی خدمت کیا کرتے تھے۔ ان کی بھی خدمت کرنا چاہتے تھے۔نذرانہ پیش کرتے تھے مگر وہ قبول نہ کرتے تھے۔اور فرماتے تھے بفضلہ تعالٰی میں فارغ البال ہوں۔مجھے ضرورت نہیں انکے اس استغناء اور طویل سفر سے سخت تعجب ہوا۔عرض کیا یہاں تشریف لانے کا سبب کیا ہے۔ فرمایا مقصد بڑا زریں تھا لیکن حاصل نہ ہوا جس کا افسوس ہے ۔
واقعہ یہ ہے۔ کہ 25 صفر المظفر 1340ھ کو میری قسمت بیدار ہوئی۔خواب مںs نبی کریم ﷺکی زیارت نصیب ہوئی دیکھا کہ حضور ﷺتشریف فرما ہیں صحابہ کرام ؓ اور اولیائے عظام ؒ حاضر دربار ہیں لیکن مجلس پر سکوت طاری ہے ۔قرینے سے معلوم ہوتا تھا کہ کسی کا انتظار ہے میں نے بارگاہ رسالت میں عرض کیا فداک ابی و امی کس کا انتظار ہے فرمایا احمد رضا کا انتظار ہے۔میں نے عرض کیا احمد رضا صاحب کون ہیں فرمایا۔ہندوستان میں بریلی کے باشندے ہیں۔ بیداری کے بعد میں نے تحقیق کی معلوم ہوا مولانا احمد رضا خان صاحب بڑے ہی جلیل القدر عالم ہیں اور بقید حیات ہیں مجھے مولاناکی ملاقات کا شوق ہوا میں ہندوستان آیا۔بریلی پہنچا معلوم ہوا کہ ان کا انتقال ہو گیا اور وہی 25 صفر ان کی تاریخ وصال تھی۔ میں نے یہ طویل صفر ان کی ملاقات کے لئے کیا لیکن افسوس کہ ملاقات نہ ہو سکی۔( سوانح امام احمد رضا۔ ص391، مکتبہ نوریہ رضویہ سکھر )
مزار
شہر بریلی محلّہ سودگراں میں دارالعلوم منظر الاسلام کے شمال جانب ایک پر شکوہ عمارت میں آپ کا مزارِمبارک ہے۔آپ کا عرس ہر سال 24 ،25 صفر کو ہوتا ہے اور اصناف ہند کے علماء مشائخ اس میں شریک ہوتے ہیں۔
آثاروباقیات:
احمد رضا خانؒ کی باقیات صالحات میں ان کی لا تعداد تصانیف و تعلیقات پچاس مختلف علوم و فنون پر ہزار کے قریب ہیں۔
مولونا رحمٰن علی نے اپنی تالیف تذکرہ علمائے ہند میں جو( 13025 ہجری 1887 ء میں لکھنی شروع کی احمد رضا خانؒ کی پچاس تصانیف کا ذکر فرمایا ہے اور اس کے بعد لکھا ہے۔۔۔ اس وقت احمد رضا خانؒ کی عمر مبارک تقریباّ 31 سال ہوگی۔اور 14 سال کی عمر میں فتوٰی نویسی کا آغاز فرما کر دن علمی دنیا میں قدم رکھا اس طرح یہ 75 تصانیف تقریباّ18 کی کاوش کا نتیجہ ہیں۔ اس کے بعد 35 سال حیات رہے جب ابتداء کا یہ عالم تو انتہا کیسی شاندار ہو گی 1323ھ میں جب آپ دوسری بار زیارت حرمین شریفین حج کے لئے تشریف لے گئے اپنی تصنیفات کی تعداد 200 تحریر فرمائی ہے۔ اس وقت آپ کی عمر 41 سال ہو گی ۔ اس قدر تصانیف کے علاوہ احمد رضا خانؒ نے مختلف علوم و فنون کی تقریباّ 80 کتابوں پر تعلیقات و حواشی تحریر فرمائے ہیں۔اس سارے علمی سرمایہ کے علاوہ آپ کا فقہی شاہکار فتاویٰ رضویہ ہے جس کا پورا نام ۔۔۔۔ العطایا النبو یہ فی الفتاویٰ الرضویہ۔۔۔
1324ھ تک احمد رضا خان نے اس کی سات مجلدات کا ذکر فرمایا ہے جو بعد میں 12 مجلدات تک پہنچ گئیں اور جن میں 5 شائع بھی ہو گئیں ہر ایک جلد
جہازی سائز کے ہزار صفحات سے زیادہ پر مشتمل ہے تاریخ الفتاویٰ میں یہ مجموعہ امتیازی حثیت رکھتا ہے۔دوسرا علمی شاہکار
قرآن کریم کا اردو ترجمعہ ہے جو کنزالایمان فی ترجمۃ القرآن کے نام سے 1330ھ میں منصئہ شہود آیا۔ احمد رضا خانؒ کے خلیفہ اور جلیل القدر عالم مولانا نعیم الدین مراد آبادی نے خزائن العرفان کے نام سے اس پر تفسیر حواشی تحریرفرمائے ہیں۔ ٰیوں تو دنیا میں بے شمار ترجمے ہیں ، لیکن احمد رضا خانؒ کے ترجمے کی شان ہی یہ ہے کہ اس میں عشق ہے، مستی ہے، دردہے، تڑپ ہے اور ادب ہے سچ تو یہ ہے کہ اپنی مثال آپ ہے۔
1 comment
  1. mahwish8t said:

    Plz Mujhe batten k Urdu blogs men main kese Shamil hoon ? Word press men meri I’d hai aur blogspot .com men bhi .. Par yah an kese Shamil hosakti hoon?
    Plz bataen .

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Pak Islamic Library

Authentic Islamic Books

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Urdu Islamic Books

islamic books in urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.wordpress.com

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Contact Us: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

creating happiness everyday

an artist's blog to document her creativity, and everyday aesthetics

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

%d bloggers like this: