جِن

جن 1ایسی مخلوق ہے جس کا مادۂ تخلیق آگ ہے۔یہ مخلوق انسانوں کی نگاہ سے پوشیدہ رہتی ہے۔جن کے معنی ڈھانپنا اور پوشیدہ کرنا ہیں، لہٰذا اس مادہ سے جو بھی لفظ بنتا ہے اس میں پوشیدگی کے معنی پائے جاتے ہیں۔چنانچہ جنین اس بچہ کو کہتے ہیں جو ماں کے پیٹ میں ہو ااور قبر کو بھی کہا جاتا ہےجنۂ گھنے باغ کو کہتے ہیں جو زمین کو ڈھانپ لے۔ جنون اور جنہ اس بیماری کو کہتے ہیں جو عقل کو پوشیدہ کر دے۔وغیرہ
قرآن مجید میں جّن کا استعمال انس کے مقابلے پر بھی ہوا ہے ،اس سے مراد ہر روحانی مخلو ق ہوتی ہے، خواہ وہ فرشتے ہوں ،شیطان ہو یا کہ جّن۔
بعض مفسرین کے نزدیک تمام فرشتے بھی جن ہی ہیں۔علماء نے روحانی مخلوق کی3اقسام بیان فرمائی ہیں
1-جو نیک ہی نیک ہیں ، وہ فرشتے ہیں۔ 2-جو بد ہی بد ہیں ،وہ شیطان ہیں۔3-وہ جن میں نیک بھی ہیں اور بد بھی ہیں ،وہ جّنات ہیں۔
فرشتوں کا مادۂ تخلیق نور ہے ، جبکہ جّن اور شیطان کا مادۂ تخلیق آگ ہے۔ان سب میں سے عقل و شعور جنّات میں ہوتا ہے ۔قرآن مجید میں جنات اور شیاطین کا تقریباً 47بار ذکر ہوا ہے ۔جنات کو اللہ تعالٰی نے انسانوں سے پہلے پیدا فرمایا تھا۔
Advertisements
4 comments
  1. Umer said:

    Assalam Alikum WARehmatUllahi Wabarakatuhu!

    Jin aur shayateen ek he makhlooq hain. Is bat ki taeed Sura Kahaf ki ayat number 50 se hoti hai jis mein Allah ne Adam AS ko sajde ke waqye ko bayan kia hai ke sub ne sajda kia magar Iblees ne aur wo Jinon mein se tha. Darasal sarkashi ki wajha se use shaitan ke laqab se mausoom kar diya gaya hai jab ke naik jinon ke liye farishton ki istilah Quran mein istemal nai hui jiski wazahat Sura Jinn mein hai jahan Jinon ke Imaan lane ke waqye ko Allah ne bayan kia hai. Un Jinon ke Iman lane ke bawajud Allah ne unke liye farishte yani ke Malaika ka lafz istemal nai kia. Lehaza Farishte aur Jin do bilkul mukhtalif makhluqat hain jin ka mada e takhleeq bhi mukhtalif hai aur khud mukhtari bi. Jin Insanon ki tarhan sarkashi bhi kar sakte aur ataat bhi par farishton ko aisi khud mukhtari se nai nawaza gaya. Aur Qayamat ke din sirf 2 makhlooqat ka hisaab hoga aur unke liye Saqlain ka lafz Quran mein istemal hua hai aur is se murad Jin Aur Insan hain aur ye lafz Sura Rehman mein hai. Meri is guftugu ki taeed kai ek Ahadees e Rasool SAWW se bi hoti hai.

    Maine apke ilm mein izafe aur apki ghalati ki islah ki mukhlisana koshish ki hai. Isiliye agar meri kisi bat se apka dil dukha ho to main ap se mazrat khuwa hun. Jazak Allah khair!

    Assalam Alikum WaRehmatUllahi Wabarakatuhu!

    • جی عمیر بھائی آپ نے درست فرمایا اور مین نے بھی تو یہی لکھا ہے کچھ دوبارہ پڑھیئے:
      فرشتوں کا مادۂ تخلیق نور ہے ، جبکہ جّن اور شیطان کا مادۂ تخلیق آگ ہے۔ان سب میں سے عقل و شعور جنّات میں ہوتا ہے ۔
      جنات اور شیاطین مین فرق یہ ہوتا ہے کہ شیاطین پیدا ہی برائی کے کام کے لئے ہیں

  2. جنات کے متعلق اللہ سُبحانُہُ و تعالٰی نے قرآن شریف میں بتا دیا ۔ مگر یہ جنات انسان کے حوالے سے فی زمانہ کیا کر رہے ہیں اور زبان زدِ عام جنات کی کہانیوں کی حقیقت کیا ہے ؟

  3. Ahmed Mansoor said:

    This is interesting topic. Lots of people believe that they can communicate with Jins. Some even claim that they own or even control some Jins. Can some one with real knowledge through some light on this subject but it has be realistic and scientific. I don’t believe in flying carpet stories. My question is if Jins are made up thermal energy, can they help us to produce electricity by creating steam? Can they help us find minerals and oil reserves in Pakistan?Why Jins can not be useful why they have to harass and terrorize human beings, why can they help us spin some electrical generators. When people say they talk to us, what dialect they use, if they are Muslims, Hindu or Christian, what sect they follow. Can we compare our history notes with them? Can we ask them about historical events? Do they consume something from our world? Like food etc? If they are Hindu, which God they follow. What is their language? Do they have more than one language? I have over one million question to ask. If some one knows the answer, please educate us with proper argument and logic.
    Ahmed

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: