اسلام اور ازواجی زندگی-1

اگر غور کیا جائے تو دنیا میں دو چیزیں ایسی نظر آئیں گی جو اس عالم کی بقا اور تعمیر وترقی میں عمود اور بنیادی کردار کا درجہ رکھتی ہیں ، ایک عورت ، دوسری دولت ، لیکن تصویر کا دوسرا رخ دیکھا جائے تو یہی دونوں چیزیں دنیا میں فساد وخون ریزی اور طرح طرح کے فتنوں کا سبب بھی ہیں ، جب کہ یہ دونوں چیزیں دنیاوی تعمیر وترقی اور اس کی رونق کا ذریعہ ہیں ، لیکن جب کبھی ان کو ان کے اصلی مقام وموقف سے اِدھر اُدھر کر دیا جاتا ہے تو یہی چیزیں دنیا میں سب سے زیادہ مہلک بھی بن جاتی ہیں، قرآن نے انسانوں کو جو نظام زندگی دیا ہے اس میں ان دونوں چیزوں کو اپنے اپنے صحیح مقام پر رکھا گیا ہے، تاکہ ان کے فوائد وثمرات زیادہ سےزیادہ حاصل ہوں اور فتنہ وفساد کا نام ونشان مٹ جائے۔
شریعت اسلام مکمل اور پاکیزہ نظام حیات کا نام ہے ، اس میں نکاح کو صرف ایک معاملہ یا معاہدہ نہیں بلکہ  النکاح من سنتی، فمن رغب عن سنتی فلیس منی  کہہ کر کہ  نکاح میری سنت ہے، جو اس سنت سے اعراض کرتا ہے وہ ہم میں سے نہیں ۔  ایک گونہ عبادت کی حیثیت بخشی ہے ، جس میں خالق کائنات کی طرف سے انسانی فطرت میں رکھے ہوئے شہوانی جذبات کی تسکین کی ایک مقرر کردہ حد اور ضابطے میں بہترین پاکیزہ سامان بھی ہے اور ازادواجی تعلقات سے جو عمرانی مسائل ابقائے نسل اور تربیت اولاد کے متعلق ہیں ان کا بھی معتدلانہ اور حکیمانہ بہترین نظام ہے۔
نکاح ایک عربی لفظ ہے، اس کا مادہٴ اصلی ن، ک، ح، ہے، کہا جاتا ہے کہ  نکح المرأة  عورت سے شادی کرنا،   نکح المطر الارض  بارش کا زمین میں جذب ہو جانا،  نکح الدواءُ فلانا  دوا کا کسی کے اندر اثر کرنا،  نکح النعاس عینہ  آنکھوں میں نیند کا غالب آجانا، یعنی کہ مشترک معنیٰ ایک کا دوسرے میں ضم ہو جانا ہے۔
چناں چہ شریعت نے اس من تو شدم تو من شدی کے مفہوم کو بہت ہی بلیغ اسلوب میں بیان کیا ہے کہ جس میں نکاح کے معنی کی بھی رعایت ہے اور نکاح سے شرعی مطلوب واقعی کا بھی بیان ہے، قرآن کا ارشاد ہے ﴿ ھن لباس لکم وانتم لباس لھن﴾ گویا جسم اور سایہ کے رشتہ کی تعبیر ہے کہ وہ عورتیں تمہارے لیے بطور لباس کے ہیں اور تم ان کے لیے لباس کی مانند ہو۔ منافع مشترک ہو گئے، اتحاد باہمی خاندانی اشتراک کا عنوان بن گیا، چناں چہ زوجین میں محبت ومودت ایسی پیدا ہو جاتی ہے کہ اس سے پہلے اتنی محبت نہ دیکھی جاتی ہے اور نہ دیکھی گئی اور کیوں نہ ہو یہ تو الله کی قدرت کی نشانی ہے، الله کی رحمتوں میں سے یہ ایک آیت رحمت ہے، اس کی غرض وغایت میں وحدت باہمی اور سکون باہمی ودیعت ہے ،چناں چہ ارشاد خدا وندی ہے:
ومن اٰیتہ ان خلق لکم من انفسکم ازواجاً لتسکنوا الیھا وجعل بینکم مودةً ورحمةالله کی قدرت کی نشانیوں میں سے ہے کہ تمہاری جنس سے تمہارےجوڑوں کو پیدا کیا، تاکہ تم ان سے سکون حاصل کرو اورتمہارے درمیان محبت ومودت پیداہو۔
عربی میں آیت قدرت کی نشانی کو کہتے ہیں کہ خدا ہی کر سکے، کوئی دوسرا نہ کر سکے ، زمین، سورج، چاند کو بھی آیت کہا گیا ہے ، یہ رات اور اس کی تاریکی بھی الله کی ایک نشانی ہے کہ تاریکی ایسی پھیلا دی کہ مصنوعی بلب، راڈ اور قمقمے لاکھوں کی تعداد میں جلیں تو جلیں، لیکن رات بدستور قائم رہی اور ایک سورج کی آمد آمد ہوئی کہ رات غائب ہوئی ، اسی طرح نکاح کو قدرت کی ایک نشانی کہا گیا ہے ، ایجاب وقبول کے دو بول کے بعد جو انقلاب عظیم برپا ہوتا ہے۔ یہ الله کے سوا کون کرسکتا ہے؟ ابھی اجنبیت تھی، یکسانیت ہو گئی، ابھی بے تعلقی تھی، منٹ بھی نہیں گزرا کہ تعلق پیدا ہو گیا  نشانی، آیت کا یہی معنی ہے کہ دلوں میں ، روحوں میں
انقلاب پیدا ہو جاتا ہے ۔ پھر ارشاد فرمایا کہ اس نعمت کی، عظمت کی یہ کتنی بڑی نشانی ہے غور وفکر کرنے والے ہی سمجھ سکتے ہیں ۔
آں حضور ﷺ نے ارشاد فرمایا:
حبب الی من دنیا کم ثلث تمہاری دنیا میں سے تین چیزیں مجھے پسند ہیں ، ان میں سے ایک چیز عورت ہے، اس لیے نہیں کہ معاذ الله وہ شہوت رانی کا ذریعہ ہے، بلکہ اس لیے کہ وہ تعلق ومحبت قائم ہونے کا ذریعہ ہے۔
ارشاد نبوی ﷺہے کہ  تم میں سے سب سے زیادہ قابل تکریم وہ مسلمان ہے جس کے اخلاق پاکیزہ ہوں اور بیویوں کے ساتھ لطف ومحبت اور لطافت کا برتاؤ کرتا ہو۔ یہی وجہ ہے کہ نبی کریم ﷺ بعض اوقات ایسی چیزیں عمل میں لاتے تھے جن سے محبت بڑھے، زمانہٴ جاہلیت میں یہ دستور تھا کہ حیض کے دنوں میں عورت کے سایہ تک سے بچتے تھے ، الگ کوٹھری میں بٹھا دیتے ، اچھوت کا معاملہ کیا جاتا کہ عورت نجس ہو گئی، حدیث میں آیا ہے کہ آپ ﷺ ایسے دنوں میں بھی حضرت عائشہ صدیقہ ؓ کے ساتھ بیٹھ کر ایک برتن میں کھانا تناول فرماتے ۔یہی نہیں بلکہ حضرت صدیقہ ؓ سے لقمہ لے لیتے اور خود تناول فرما لیتے۔ ایک پیالہ میں پانی نوش فرماتے او رجہاں سے حضرت عائشہ ؓپانی پیتیں اسی جگہ سے حضور ﷺ بھی پانی نوش فرماتے۔ تاکہ امت کو بتلا دیں کہ عورت کی ذات میں کوئی نجاست نہیں آئی، اس سے محبت قطع کر دینا اسے اچھوت قرار دینا یہ انسانیت کے خلاف ہے۔
شریعت کا مقصد یہ ہے کہ خاوند اور بیوی میں مدارات کا برتاؤ ہو، اس سے خانگی زندگی بہتر بن جائے گی ، جس گھر کے اندر خاوند وبیوی ایک دل ایک جان ہوں تو اولاد میں بھی محبت پیدا ہو گی، عزیزوں میں محبت پیدا ہو گی اور گھر جنت نشان تبھی بنے گا جب کہ ایک کو دیکھ کر دوسرا خوش ہو۔
حدیث  میں آیا ہے کہ آدمی کی خوش نصیبی اور سعادت کی تین علامتیں ہیں، پہلا یہ کہ اس کا رزق اسی کے وطن میں ہو ، دوسری علامت یہ ہے کہ اس کاگھر وسیع ہو اور تیسری خوش نصیبی یہ ہے کہ ایسی نیک بخت بیوی ملے کہ جب اس کی صورت دیکھے تو دل کے اندر خوشی بھر جائے، جب اسے گھر پر چھوڑ کر چلا جائے تو مرد کی عزت وناموس کی حفاظت کرے، الله تعالیٰ اور خاوند کے حقوق کی ادائیگی کرنے والی ہو۔
واقعی وہ خوش نصیب ہے، اسے بڑی دولت حاصل ہے ، بیوی اگر صالح ہو او رحسین وجمیل بھی ہو تو دونوں کی خوش نصیبی ہے کہ وہ اسے دیکھ کر خوش ہے اور وہ اس سے راضی ہے تو نکاح سے شریعت کا مقصود ومحبت باہمی ہے۔
اسلامی تعلیمات اور اصول کا اصلی رخ یہ ہے کہ مرد وعورت میں اسلامی اصول کے مطابق ازدواجی زندگی قائم ہو اور عمر بھر کے لیے پائیدار رشتہ قائم ہو ، اس کو توڑنے اور ختم کرنے کی کبھی نوبت ہی نہ آئے ، کیوں کہ اس معاملے کے توڑنے او رختم کرنے کا اثر صرف فریقین ہی پر نہیں پڑتا، بلکہ نسل واولاد کی تباہی وبربادی اور بعض اوقات خاندانوں اور قبیلوں میں فساد تک نوبت پہنچ جاتی ہے ۔ کبھی تو جان وجائیداد کے تلف، عزت وآبرو کی ہتک کا ذریعہ بن جاتی ہے ، پورا معاشرہ بری طرح متاثر ہوتا ہے، چوں کہ ازدواجی معاملات ہی کی درستگی پر عام نسل انسانی کی درستگی موقوف ہے، اس لیے قرآن میں ان مسائل کو دوسرے تمام مسائل سے زیادہ اہمیت دی گئی ہے ، قرآن کریم کے مطالعہ سے عیاں ہے کہ دنیا کے عام معاشی مسائل میں سب سے اہم تجارت، شرکت ، اجارہ، اعارہ وغیرہ ہیں، قرآن نے صرف ان کے اصول بتلانے پر اکتفا کیا ہے، ان کے فروعی مسائل قرآن میں شاذو نادر ہیں، بخلاف نکاح وطلاق کے ، کہ ان کے صرف اصول بتلانے پر اکتفا نہیں کیا، بلکہ ان کے اکثر وبیشتر فروع وجزئیات کو بھی براہ راست حق تعالیٰ نے قرآن میں نازل فرمایا ہے۔ یہ مسائل قرآن کی اکثر سورتوں میں متفرق اور سورہٴ نساء میں کچھ زیادہ تفصیل کے ساتھ آئے ہیں ، دنیا کے ہر مذہب وملت کے پیروہمیشہ سے اس پر متفق ہیں کہ نکاح او راس کے معاملات کو ایک خاص مذہبی تقدس حاصل ہے، اسی کی ہدایات کے تحت یہ کام سرانجام پانا چاہیے ، اہل کتاب ، یہود ونصاریٰ سینکڑوں تحریفات کے باوجود بھی ان حدود وقیود پر عمل پیرا ہیں،ان کی پابندی کو لازم سمجھتے ہیں او رانہیں اصول ورسوم پر تمام مذاہب کے عائلی قوانین چلتے ہیں۔
Advertisements
2 comments
  1. بی بی ۔ میں تو پڑھا لکھا نہیں صرف اتنا جانتا ہوں کہ بیوی وہ جو غم میں ڈھارس بندھائے ۔ مشکل اور خوشی میں ساتھ دے اور نیکی پر مائل کرے ۔ اس کے ساتھ اگر خوبصورت بھی ہو تو کیا بات ہے ۔ ایسے خاوند کے متعلق کیا خیال ہے جس کی بیوی میں یہ پانچوں خوبیاں ہوں ؟ بتائیں ان میں سے کون ہے ؟ (1) جناب طارق راحیل آف کراچی (2) بندہ دو جماعت پاس ناتجربہ کار

    • خاوند کیسا بھی ہو
      ہر عورت پر لازم ہے اپنا خاوندکوتمام مردوں پر فوقیت دینی چاہیئے

      اور مبالغہ نہیں میرے شوہر واقعی بہترین شوہر ہیں
      ہماری ذہنی ہم آہنگی اور پیار بناوٹی اور دکھلاوے کے لئے نہیں
      اور اس کا ثبوت ہماری ہنستی کھیلتی زندگی اور
      ایک دوسرے سے کا خیال رکھنا ہے

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

My Blog

Just another WordPress.com site

%d bloggers like this: