مساجد کی اہمیت-2

مساجد کی دینی اہمیت
https://i0.wp.com/www.geourdu.com/wp-content/uploads/2012/08/faisal-masjid.jpg
قرآن مجید میں ارشادِ ربانی ہے: وَمَا خَلَقْتُ الْجِنَّ وَالْاِنْسَ اِلَّا لِيَعْبُدُوْنِ (الذٰریٰت: ۵۶) کہ انسان کا مقصدِ تخلیق ہی عبادت ہے اور اسی چیز پر آخرت میں انسان کی کامیابی کا انحصار ہے۔ عبادات کہ انسان کا مقصدِ تخلیق ہی عبادت ہے اور اسی چیز پر آخرت میں انسان کی کامیابی کا انحصار ہے۔
عبادات کا مظہرِ اوّل نماز ہے اور چونکہ مسجد اصطلاح میں اس جگہ کو کہتے ہیں جو نماز کے لئے وقف کر دی گئی ہو۔ لہٰذا دینی اعتبار سے مسجد کو بہت اہمیت حاصل ہے۔
اس ضمن میں قرآن و حدیث میں کافی آیات و احادیث مذکور ہیں جن میں یا تو مسجد کی دینی اہمیت بیان کی گئی ہے اور یا نماز باجماعت کے فوائد و ثواب پر روشنی ڈالی گئی ہے۔ ذیل میں چند ایک نصوص ملاحظہ فرمائیں۔
مسجدوں کی آبادی ایمان کی دلیل ہے:
قرآن مجید میں ہے:
اِنَّمَا يَعْمُرُ مَسَاجِدَ اللهِ مَنْ اٰمَنَ بِاللهِ وَالْيَوْمِ الْاٰخِرِ (التوبہ: ۱۸)
کہ بیشک اللہ کی مسجدوں کو وہی آباد کرتے ہیں جو اللہ اور یومِ آخرت پر یقین رکھتے ہیں۔ اس آیت میں جہاں یہ بتلایا گیا ہے کہ مساجد کے آباد کار مومن ہی ہو
سکتے ہیں۔ وہاں ان کو یہ بشارت بھی دی گئی ہے کہ یہ ان کے ایمان ی دلیل بھی ہے جیسا کہ مندرجہ ذیل حدیث سے ظاہر ہے جو اسی آیت کی تفسیر میں وارد ہے:
ابو سعید خدریؓ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:اذا رایتم الرجل یتعاھد المسجد فاشھدوا له بالایمان فان اللہ یقول انما یعمر مساجد اللہ من امن بالله واليوم الاخر (ترمذي،ابن ماجه، دارمي)
کہ جب تم کسی آدمی کے متعلق جانو کہ وہ (خدمت اور عبادت سے) مسجد کی نگہبانی کرتا ہے تو اس کے ایمان کی گواہی دو۔ کیونکہ اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے کہ بیشک مساجد کو ایماندار ہی آباد کرتے ہیں۔
مساجد میں آنے والے اللہ کے مہمان ہیں:
حضرت ابو ہریرہؓ فرماتے ہیں کہ نبی ﷺ نے فرمایا:من غدا الی المسجد او راح اعدّ اللہ نزله من الجنة کلما غدا اوراح (بخاری، مسلم)
کہ جو شخص صبح یا شام کو مسجد میں جاتا ہے، اللہ تعالیٰ اس کے لئے جنت میں مہمانی کا کھانا تیار کرتا ہے۔ جو جنت میں صبح و شام پیش کیا جائے گا (کیونکہ مسجداللہ کا گھر ہے اور اس میں آنے والے اللہ کے مہمان ہیں)
نورِ کامل کی بشارت:
ترمذی، ابن ماجہ اور ابو داؤد میں ہے کہ نبی ﷺ نے فرمایا:بشر المشائین فی الظلم الی المساجد بالنور التام یوم القیامة
کہ ایسے لوگوں کو جو تاریکی میں مسجد کی طرف (نماز پڑھنے کے لئے) جاتے ہیں، نورِ کامل کی بشارت دو جو قیامت کے دن ان کو حاصل ہو گا۔
مسجد کی حاضری رحمتِ الٰہی کا ذریعہ ہے:
بخاری اور مسلم میں ہے۔ حضرت ابو ہریرہؓ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:’’سات شخصوں کو اللہ تعالیٰ اپنے عرش کے سایہ تلے اس دن جگہ دے گا جب کہ عرش کے سایہ کے سوا اور کوئی سایہ ہی نہ ہو گا اور ان سات شخصوں میں سے ایک شخص وہ بھی ہو گا کہ جب مسجد سے نکلتا ہے تو واپسی تک اس کا دھیان مسجد ہی کی طرف لگا رہتا ہے۔( الفاظ یہ ہیں۔ قبله معلق بالمسجد اذا خرج منه حتي يعود اليه (الحديث) )
گناہوں کا کفارہ:
ترمذی میں ہے:والکفارات المکث فی المساجد بعد الصلوٰة والمشي علي الاقدام الي الجماعات
کہ مسجدوں میں نماز کے بعد (اگلی نماز کے انتظار یا ذِکر الٰہی وغیرہ کے لئے) بیٹھ رہنا اور نماز با جماعت کی ادائیگی کے لئے پیدل چل کر جانا گناہوں کا کفارہ ہے۔
نیت پوری ہو گی:
ابو داؤد میں حضرت ابو ہریرہؓ سے روایت ہے کہ نبی ﷺ نے فرمایا:’’من اتی المسجد لشیء فھو حظه‘‘ کہ جو شخص مسجد میں جس کام کے لئے آئے گا،وہ اس کا حصہ ہے۔یعنی اگر ثواب کی نیت سے آئے گا تو ثواب ملے گا اور اگر دنیا کا طمع حاصل کرنے یا شہرت حاصل کرنے اور نمود و نمائش کے حصول کے لئے مسجد میں آئے ا تو اس کی یہ خواہش بھی پوری ہو گی۔ لیکن ظاہر ہے یہ چیز صرف دنیا میں فائدہ دے گی اور آخرت میں اس کا کچھ حصہ نہ ہو گا۔ یا اس سے مراد یہ ہے کہ مسجد میں دعا قبول ہو گی۔
مذکورہ بالا احادیث کی روشنی میں کسی ایسے معاشرہ کے اعلیٰ و ارفع اور صالح ہونے میں کیسے شبہ کیا جا سکتا ہے جس کے افراد پانچ وقت مسجد میں جمع ہو کر فریضۂ نماز ادا کرتے ہوں؟
Advertisements
2 comments
  1. عن أبي هريرة رضی الله عنه قال : قال رسول اﷲ صلی الله عليه وآله وسلم : أتيت ليلة أسري بي علی قوم بطونهم کالبيوت فيها الحيات تری من خارج بطونهم فقلت من هؤلاء يا جبرائيل قال : هؤلاء أکلة الرّبا.

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: