كموڈ(Commode)كى شرعى حيثيت

كموڈ سيٹ نما فلش ہے ،جس پر بيٹھ كر قضائے حاجت كى جاتى ہے۔ آج كل اس كا استعمال دفاتر، ہوٹلز، ايئر پورٹس اور يونيورسٹيز سے لے كر گهروں تك عام ہوتاچلا جارہا ہے۔ اس كى شرعى حيثيت سمجهنے كے لئے اتنا ہى كافى ہے كہ اس پر بيٹھ كر قضائے حاجت كرتے ہوئے پيشاب كے چھينٹوں سے بچنا انتہائى مشكل ہے اور يہ بات محتاجِ دليل نہيں كہ پيشاب كے چهينٹوں سے اجتناب بہرصورت واجب ہے۔ اور يہ اُصول ہے كہ جو چيز كسى واجب كى تكميل كے لئے ناگزير ہے، وہ بهى واجب ہے ،يعنى اگر پيشاب كے چهينٹوں سے اجتناب كموڈ سے بچنے ميں ہى ہے تو كموڈ سے بچنا بهى واجب ہے۔ تاہم اس كے جواز كى ايك صورت ہے كہ اگر اس پر بيٹھ كر قضائے حاجت كے دوران نجاست يا پيشاب كے چهينٹوں سے بچنا يقينى ہو تو ہمارے علم كے مطابق كوئى اور ايسا سبب نہيں جس بنا پر اسے ناجائز قرار ديا جائے۔ البتہ بہتر اور صحت بخش طريقہ وہى ہے جو فطرى ہے اور جسے محمد ﷺ نے اپنايا ہے۔
، اگر اس فطرى طريقےكے مطابق قضائے حاجت كے لئے بيٹها جائے تو اپنڈیسائيٹس
(Appendicitis)
، گردوں كے امراض، گيس، تبخير اور بدہضمى
وغيرہ
(Piles)دائمى قبض، بواسير
جيسے امراض ختم ہوجاتے ہيں۔ (سنت ِنبوى اور جديد سائنس 1/190)
 علاوہ ازيں ايك روايت ميں ہے كہ حضرت سراقہ بن مالك رضی اللہ عنہ فرماتے ہيں كہ:علَّمنا رسول الله في الخلاء أن نقعد على اليسرٰى وننصب اليمنٰىرسول اللہ ﷺ نے قضائے حاجت كى تعليم ديتے ہوئے ہميں فرمايا كہ ہم بائيں پاوٴں پر وزن دے كر بيٹهيں اور دائيں كو كهڑا ركهيں (يعنى اس پر كم بوجھ ڈاليں) (بيہقى 1/96)
اس حديث ميں نبى كريم ﷺ نے بائيں پاوٴں پر بيٹهنے كا حكم ديا ہے۔ اس كى وجہ يہ سمجھ ميں آتى ہے كہ انسان كا معدہ بائيں طرف ہوتا ہے۔بائيں پاوٴں پر بيٹھنے سے اخراجِ فضلہ ميں سہولت اور آسانى ہوتى ہے۔ يہ فائدہ بهى انسان كو تب ہى حاصل ہوسكتا ہے،جب وہ كموڈ پر نہيں بلكہ ٹائلٹ پر قضائے حاجت كررہا ہو، كيونكہ كموڈ پر اس طرح بيٹهنا ممكن ہى نہيں۔ثابت ہوا کہ قضائےحاجت كے لئے سب سے بہتر فطرى طريقہ كے مطابق عام ٹائلٹ كا استعمال ہے، ليكن اگر كموڈ كى بهى كہيں ضرورت پيش آجائے اور پيشاب كے چهينٹوں سے اجتناب ممكن ہو تو اس كا استعمال گوارا كيا جاسكتا ہے۔ جو لوگ اس کے استعمال کے عادی نہیں ہیں، وہی اس میں طہارت کا خیال نہیں رکھ سکتے۔ آج کل بیشتر مغربی کلچر میں اور مشرق کلچر کے بھی بیشتر اعلیٰ قیام گاہوں، ہوٹلز میں صرف اور صرف کموڈ ہی دستیاب ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ اس کے استعمال کا طریقہ سیکھا جائے تاکہ طہارت کو یقینی بنایا جائے نہ کہ اس کی شرعی حیثیت کا تعین کیا جائے اور اس کے استعمال کو مشکوک قرار دیا جائے۔
اگر آپ کو کموڈ کا درست اور مکمل صحیح طریقے سے ستعمال آتا ہے تو کموڈ بلا کراہت جائز ہے۔ اس کے استعمال کے دوران طہارت کا بہت  خیال رکھنا چاہئے۔ ضعیفوں، مریضوں کے لئے تو یہ کسی نعمت سے کم نہیں۔ اس کے علاوہ اگر کسی ایسے کلچر میں رہائش پذیر ہوں، رہنا پڑے جہاں اس کا متبادل موجود نہیں تو بھی اسےاستعمال کرنا آنا چاہئے۔ چند ٹپس پیش خدمت ہیں۔
 ١۔ اگر کموڈ صرف آپ کے ذاتی استعمال میں نہیں ہے (بلکہ مشترکہ یا پبلک کموڈ ہے) تو آپ کواس کے سیٹ (خواہ خشک ہی کیوں نہ ہو) کی طہارت پر یقین نہیں کرنا چاہئے۔ اس پر بیٹھنے سے قبل اسے دھو کر ٹشو پیپر سے خشک کر لیں۔
 ٢۔ کموڈ پر بیٹھنے سے قبل اس پر ٹشو پیپر کو اس طرح بچھا لیں کہ ٹشو کا کوئی حصہ دائیں بائیں لٹکا ہوا نہ ہو۔ اور سیٹ کی طرح ٹشو بھی مکمل طور پر خشک ہو۔
 ٣۔ بول و براز سے قبل کموڈ کے باؤل میں پانی کی سطح کے اوپر ٹشو پیپر کےاتنے ٹکڑے ڈال لیں کہ دوران فراغت نیچے کا پانی اچھل کر جسم کو نہ لگے۔
 ٤۔ بول و براز سے فراغت کے بعد پہلے فلش کو چلا کر سارے کئے کرائے پر پانی بہادیں۔ اس احتیاط کے ساتھ کہ اس دوران فلش کا پانی اچھل کو آپ کے جسم کو نہ لگے۔
 ٥۔ اب باؤل میں تازہ یعنی صاف پانی جمع ہوگا۔ اب اپنے جسم پر لگی غلاظت کو پہلے پانی سے صاف کریں پھر ٹشو پیپر سے خشک کریں۔
 ٦۔ اب جسم دھلا ہوا اور خشک ہوگا۔ اب سیٹ سے اٹھ کر سیٹ کا ٹشو بھی باؤل میں گرا دیں اور ایک مرتبہ پھر فلش سے پانی کو بہا دیں۔
 ٦۔ گندے اور آلودہ ہاتھ کو پہلے ڈیٹول ملے مائع صابن سے دھوئیں پھر عام ٹوائلیٹ صابن سے دونوں ہاتھ دھو کر پاک کرلیں۔
Advertisements
13 comments
  1. لیکن کموڈ میں اتنے ٹشو نہ ڈالیں کہ وہ بند ہی ہو جائے۔ ہمارے خیال میں کموڈ جیسی چھوٹی چھوٹی چیزوں پر شرعی احکام کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ ضرورت ہے تو کرپٹ معاشرے کو گناہوں سے پاک کرنے کی، بڑے بڑے گناہوں کا سدباب کرنے کی اور حقوق العباد کا خیال رکھنے کی۔

    • Rafaqat said:

      Janab yeh cheezain bohat zaroori hain jab insaan apni zaat k jaqooq nai ada karay ga to logoon k haqooq kab samjh aien gay islami ahariyat main taharat ki bohat ahmiyat hai

      • ٹشو اتنے ہی ڈالے جائیں گے کہ جتنی ضرورت محسوس ہو گی نہ کہ اتنا کہ لائن ہی بند ہو جائے

  2. شاہو said:

    بعض جگہوں پر کموڈ میں ٹشو ڈالنے سے مناہی ہوتی ہے تب کیا کیا جائے؟

    • ویسے تو ایسے مواقع کم ہی ہیں
      پر جہاں آپ کے اپنے حقوق پر حملہ ہوں میرے خیال سے وہاں جائز ہی ہو گا یہ عمل

  3. البتہ بہتر اور صحت بخش طريقہ وہى ہے جو فطرى ہے اور جسے محمد ﷺ نے اپنايا ہے۔
    ، اگر اس فطرى . . طريقےكے مطابق قضائے حاجت كے لئے بيٹها جائے تو اپنڈیسائيٹس
    (Appendicitis)
    ، گردوں كے امراض، گيس، تبخير اور بدہضمى
    وغيرہ (Piles)دائمى قبض، بواسير
    جيسے امراض ختم ہوجاتے ہيں۔

    ما شاء اللہ ۔ ۔ ۔ بہت خوب ۔ ۔۔ جزاک اللہ

    • درست کہا آپ نے نور صاحب
      پر جیسا کہ شروع میں کہا گیا ہے کہ یہ حالتِ مجبوری میں ہے

  4. Rafaqat said:

    Wallah bohat a’la likha hai is maslay k baray mein Allah apko jazaikhair ata farmai yeh roz marra k istemal ki cheez aisi hi cheezo k baray main likhaien aur jab taharat sahi ho gi tu amal b inshallah sahi hongay aur masail kam hongay
    Wassalaam alaikam

  5. آپ نے تو ہمارے پیشوا یعنی امام مسجد جو مُفتی بھی ہیں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے ۔ میں کم علم آدمی ہوں البتہ اپنا تجربہ یہ ہے کہ ایسی شکل کے کموڈ دستیاب ہیں جن پر بیٹھنے سے چھینٹے پڑنے کا احتمال بہت کم ہوتا ہے ۔ میرے گھر میں آئی سی ایل کے میرامار کموڈ لگے ہیں ۔ یہ میں نے 1989ء میں مکان کی تعمیر کے وقت اسی نظریئے سے لگوائے تھے ۔ اب اور کمپنیوں کے ایسے کموڈ ملتے ہیں ۔
    دوسری شکل کے کموڈ پر بیٹھنا پڑ جائے تو اس میں کھلا ٹائلٹ پیپر دوہرا لٹانا چاہیئے ۔ نشست اپنے گھر میں تو صاف رکھنا چاہیئے ۔ دوسری جگہ پر نشست پر ٹشو پیپر رکھنا ضروری ہے ۔ مجھے اب یاد نہیں لیکن کسی ملک میں میں نے دیکھا تھا کہ کموڈ کی نشست کی شکل میں کٹے ٹشو پیپر موجود تھے جو بیٹھنے سے قبل نشست پر رکھنے کی اور بعد میں ٹوکری میں پھنکنے کی ھدائت بھی لکھی تھی ۔ پہلے ہوائی جہازوں میں بھی اسی طرح ہوتا تھا لیکن اب نہیں ہے

  6. Ahmed Mansoor said:

    No, you will definitely use side of street for this job. Islam taught us to keep our teeth clean, backward people like you always advise Muslims to use Muswak rather than using ultra sonic tooth brush. These are reasons that all Muslims countries are backward. Our contributions to society are minimal. You will never open your eyes. The references you give in your blogs are not factual. You write against every thing modern. Like tolit paper etc. just try to understand we can not go back 1400 years, we have to go forward.
    Ahmed Mansoor

    • Arslan Sultan said:

      Ahmed mansoor even science search today tells us that it is better to use miswak than your beloved ultra sonic tooth brush. Islam doesn’t just say keep ur teeth clean there are many hadeeth where prophet Muhammad pbuh strictly told us to use miswak. Search your self if I am wrong then you give me a better reference.

  7. Arslan Sultan said:

    Ahmed mansoor even science search today tells us that it is better to use miswak than your beloved ultra sonic tooth brush.islam doesn’t just say keep ur teeth clean there are many hadeeth where prophet Muhammad pbuh told us to use miswak.

    • جی درست کہا احمد منصور ہو یا جو بھی
      کسی کے کہنے سے پہلے ہی 1400سال پہلے مسواک کی اہمیت اور افضلیت واضع ہو چکی ہے

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: