ٹائلٹ پيپر سے استنجا كا حكم:

افضل يہ ہے كہ پانى سے استنجا كيا جائے جيسا كہ حضرت ابوہريرہ رضی اللہ عنہ بيان كرتے ہيں كہ يہ آيت  فِيْهِ رِجَالٌ يُحِبُّوْنَ أنْ يَّتَطَهَّرُوْا وَاللهُ يُحِبُّ الْمُطَّهِرِيْنَ  (التوبہ 108) اہل قبا كے بارے ميں ناز ل ہوئى كيونكہ كانوا يستنجون بالماء وہ پانى كے ساتھ استنجا كرتے تهے۔ (ابوداود 144)
 پانى كے ساتھ استنجا كرنے والوں كے بارے ميں اللہ تعالىٰ كا اظہارِ محبت كرتے ہوئے آيت نازل فرما دينا اس با ت كا قطعى ثبوت ہے كہ پانى سے ہى استنجا كرنا افضل ہے۔
 علامہ عينى رحمہ اللہ رقم طراز ہيں كہ پانى (سے استنجا كرنا) افضل ہے ،كيونكہ يہ نجاست كى ذات اور اثر كو زائل كرديتا ہے۔ (عمدة القارى 2/ 276)
 يہاں يہ بات ياد رہے كہ پانى كے ساتھ استنجا كے افضل ہونے كا يہ مطلب نہيں ہے كہ صرف پانى كے ساتھ ہى استنجا كرنا واجب ہے۔
 شيخ امين اللہ پشاورى فرماتے ہيں كہ:ولا يجب الاستنجاء بالماء كما يظنه العوام پانى كے ساتھ استنجاكرنا واجب نہيں ہے، جيسا كہ عوام يہ گمان ركهتے ہيں۔ (فتاوىٰ الدين الخالص 1/386)
 لہٰذا پانى كے علاوہ ڈھيلوں كااستعمال بهى مباح و درست ہے اور عہد ِرسالت ميں نبى ﷺاور صحابہ كرام رضوان اللہ عليہم اجمعين اكثر اوقات انہى سے استنجا كيا كرتے تهے، جيسا كہ ايك حديث ميں ہے كہ :نبى ﷺنے قضائے حاجت كيلئے جاتے ہوئے حضرت ابن مسعودرضی اللہ عنہ كو 3 پتهر لانے كا حكم ديا۔ (بخارى 152)
 اب سوال يہ پيدا ہوتا ہے كہ نبى نے پانى كے علاوہ مٹى كے ڈھيلوں سے ہى بالآخر كيوں استنجا كيا؟
يہى بات پيش نظر ركهتے ہوئے ريسرچ كى گئى تو يہ بات سامنے آئى كہ مٹى ميں

(Ammonium Chloride)

نوشادر اور اعلىٰ درجے كے دافع تعفن اجزا موجود ہيں۔

ڈهيلے كے استعمال نے سائنسى اور تحقيقى دنيا كو ورطہ حيرت ميں ڈال ركها ہے ،كيونكہ مٹى كے تمام اجزا جراثيموں كے قاتل ہيں۔جب ڈهيلے كا استعمال ہوگا تو پوشيدہ اعضا پر مٹى لگنے كى وجہ سے ان پر بيرونى طور پر لگے تمام جراثيم مرجائيں گے،
سے بچاتا ہے۔ (سنت ِنبوى اور جديد سائنس 1/191) (Cancer of Penis)بلكہ مٹى كا استعمال
شرمگاہ كے كينسرمعلوم ہوا كہ محسن انسانيت نے پانى كے علاوہ ڈهيلوں كا حكم يونہى نہيں ديا، بلكہ اس لئے ديا كہ اس ميں اُمت ِمسلمہ كے لئے بے شمار فوائد مضمر تهے۔
تاہم اہل علم نے پانى اور ڈهيلوں كے سوا ہر اس پاك چيز سے بهى استنجا كى اجازت دى ہے جو طہارت و نظافت ميں ان كے قائم مقام ہو اور نجاست كا اثر زائل كردے۔
امام شوكانى رحمہ اللہ رقم طراز ہيں كہ :(قضائے حاجت كرنے والے پر) 3ڈهيلوں يا ان كے قائم مقام كسى پاك چيز سے استنجا كرنا لازم ہے۔ (الدّرر البہية باب قضاء الحاجة)
ايك اور مقام پر فرماتے ہيں :شارع نے جس چيز كے استعمال كى اجازت دى ہے، اس كے ساتھ استنجا كا حكم اس لئے ہے كہ نجاست كا اثر مٹ جائے اور اس كى ذات ختم ہوجائے ۔
اور شارع نے جس چيز كے ساتھ استنجا كرنے سے منع كيا ہے وہ (اس عمل ميں) كفايت كرنے والى نہيں اور جس سے منع نہيں كيا، اگر وہ چيز محترم نہ ہو اور نہ ہى اس كا استعمال مضر ہو تو وہ كفايت كرجائے گى۔ (السيل الجرار 1/202)
اس سے ظاہر ہوا کہ استنجا ہر ايسى جامد، پاك،(نجاست كى) ذات كو زائل كردينے والى چيز سے جائز ہے جو پتهر كے قائم مقام ہو اور نہ تو وہ چيز قابل احترام ہو اور نہ ہى كسى حيوان كا جز ہو، مثلاً لكڑى، كپڑے كا ٹكڑا، اينٹ اور ٹهيكرى وغيرہ ۔
لكڑى ، كپڑا اور ہر وہ چيز جس كے ذريعے صفائى كى جاسكے ،وہ (استنجا ميں) پتهروں كى مانند ہى ہے۔
 شيخ امين اللہ پشاورى حفظہ اللہ فرماتے ہيں كہ :اور ان رومالوں سے بهى استنجا كرنا جائز ہے جو (بطورِ خاص) اسى لئے تيار كئے جاتے ہيں۔ (فتاوىٰ الدين الخالص 1/386)
نبى ﷺنے 3پتهروں كے ساتھ استنجا كرنے كا حكم ديا اور يہ بهى فرمايا كہ ہڈى اور گوبر كے ساتہ استنجا نہ كيا جائے۔ (ابوداود 41، مسلم 1/223، كتاب الطهارة)
اگر آپ كا مقصود پتهر اور اس كے قائم مقام ہر چيز كے ساتھ استنجا كى اجازت دينا نہ ہوتا تو آپ كبهى ہڈى اور گوبر كو بطورِ خاص مستثنىٰ نہ كرتے۔ اس استثنا سے معلوم ہوتا ہے كہ ان كے علاوہ تمام اشيا سے استنجا كيا جاسكتا ہے۔
 ٹائلٹ پيپر ايك ايسا نرم ملائم اور لطيف كاغذ ہے جو اہل يورپ كى ايجاد ہے اور اسے خاص طور پر استنجا كيلئے تيار كيا جاتا ہے۔ بظاہر يہى معلوم ہوتا ہے كہ ٹائلٹ پيپر كے استعمال ميں بهى كوئى حرج نہيں، ليكن يہ ياد رہے كہ اس پيپر كى تيارى ميں جو مختلف قسم كے كيميكلز استعمال كئے جاتے ہيں،وہ انتہائى مہلك ہيں۔ان سے جلدى امراض ،ايگزيمااور جلد ميں رنگت كى تبديلى كے امراض پيدا ہوسكتے ہيں۔ اس وقت تمام اہل يورپ يہى پيپر استعمال كررہے ہيں۔ اس وقت يورپ ميں شرم گاہ كے مہلك امراض خاص طور پر كينسر تيزى سے پهيل رہا ہے۔ تحقيقى بورڈ كى رپورٹ صرف دو چيزيں تهيں كہ ٹائلٹ پيپر كا استعمال كرنا اور پانى كا استعمال نہ كرنا۔ (سنت ِنبوى اور جديد سائنس 1/191)
 ٹائلٹ پيپر كے استعمال كى دو ہى صورتيں ہوسكتى ہيں:
1-غیر مستقل استعمال
2-پانى اور مٹى كى غير موجودگى ميں استعمال
درج بالا مضر اثرات و نتائج كى وجہ سے اسے مستقل استعمال كرنے سے اجتناب ہى بہتر ہے۔ تاہم اگر اس كے استعمال سے كسى ضرر كا انديشہ نہ ہو يا اس كے بعد پانى استعمال كرليا جائے يا پانى اور مٹى كى غير موجودگى ميں اسے استعمال كيا جائے تو اُميد ہے كہ ايسا كرنے والے پر كوئى گناہ نہ ہوگا۔ آج کل کے جدید واش رومز میں ڈھیلوں کی دستیابی اور ان کا استعمال بھی عملاََ ممکن نہیں۔ ایسے واش رومز میں اس کا بہترین متبادل ٹوائلیٹ پیپرز یا ٹشو پیپرز ہیں۔ ٹوائیلیٹ یا ٹشو پیپرز کی خراب کوالٹی کو بنیاد بنا کر اسے مشکوک نہیں بنانا چاہئے۔ اور مغرب میں بہت سے غیر مسلم پانی کے بغیر صرف ان ٹشوز ہی کو استعمال کرتے ہیں، اسی لئے انہیں مختلف امراض آگھیرتے ہیں۔ مسلمان ممکنہ حد تک پانی کو لازماََ استعمال کرتے ہیں۔ پانی کے استعمال سے قبل اور بعد ٹشوز کا استعمال طہارت کو مزید یقینی بناتا ہے اور قطروں کے امراض والوں کے لئے ٹشوز کا استعمال بہت مفید ہے۔
Advertisements
2 comments
  1. ڈهيلے کے فوائد کے بارے میں کبھی دھیان ہی نہ گیا ۔ ۔ البتہ جب بھی سفر کیا کسی اور موقع پر ڈھیلہ استعمال کرنے کا موقع آتا ہے تو جب تک پانی نہ ملے ۔ ۔ ۔ ایک طرح کی بے چینی محسوس ہوتی ہے ۔ ۔ پانی کی عادت جو ہو گئی ہے ۔ ۔ ۔

    ایک بہترین باب شیئر کرنے پر مشکور ہوں ۔ ۔

    جزاک اللہ خیرا

  2. میں نے دو جماعتیں پڑھی ہیں اسلئے مجھے یہ سمجھ آئی ہے کہ پانی نہ ملے یا صرف پینے کیلئے کافی ہو تو مٹی کا استعمال کیا جائے

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: