روافض یا اہل تشیع اور ان کے عقائدکا مختصر حال

حضرت عثمان رضی اللہ تعالٰی عنہ کے زمانے میں عبد اللہ ابن سبا یہودی نامی شخص نے اسلام قبول کیا اس کا مقصد دین اسلام میں فتنہ پیدا کرنا اور اسلام کی بنیادوں کو کھوکھلا کرنا تھا وہ حضرت عثمان رضی اللہ تعالٰی عنہ کے زمانے میں پیدا ہونے والے فتنے میں پیش پیش تھا اور حضرت عثمان رضی اللہ تعالٰی عنہ کے قتل میں بھی ملوث ہوا اس شخص کے عقائد ونظریات سے رفض نے جنم لیا رفض کے بہت سے گروہ ہیں بعض محض تفضیلی ہیں کہ حضرت علی رضی اللہ تعالٰی عنہ کو تمام صحابہ رضی اللہ تعالٰی عنہ سے افضل سمجھتے ہیں اور کسی صحابی رضی اللہ تعالٰی عنہ کی شان میں کوئی گستاخی نہیں کرتے بعض تبرائی ہیں کہ چند صحابہ رضی اللہ تعالٰی عنہ کے علاوہ باقی سب کو برا بھلا کہتے ہیں  بعض الوہیت علی رضی اللہ تعالٰی عنہ کے قائل ہیں بعض تحریف قرآن کے قائل ہیں بعض صفات
باری تعالیٰ کے مخلوق ہونے کے قائل ہیں بعض اس بات کے قائل ہیں کہ اللہ تعالیٰ پر بہت سی چیزیں واجب ہیں بعض آخرت میں رؤیت باری تعالیٰ کے قائل نہیں ہیں وغیر وغیرہ۔
رفض کے ہرگروہ کے عقائد دوسرے سے مختلف ہیں لہذا بحیثیت مجموعی ان پر کوئی ایک حکم نہیں لگایاجاسکتا۔
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: