قربانی کے جانور میں عیوب کا ہونا

قربانی کے ذریعہ بندہ اللہ تعالی کی بارگاہ میں قرب حاصل کرتا ہے لہذاقربانی کے لئے ایسے جانور کا انتخاب کرنا چاہئے جو فربہ ،صحیح وسالم ہو ، اندھا، لنگڑا ، بیمار،کمزور نہ ہو۔ احادیث میں ہمیں قربانی کے جانور کی صحت سے متعلق واضع احکامات دیئے ہیں جیسا کہ:
عن علی قال: امرنا رسول اللہ ﷺا نستشرف العین والاذن وان لا نضحی بمقابلۃ ولا مدابرۃ ولا شرقائ ولاخرقائ رواہ الترمذی وابوداؤد والنسائی والدارمی وابن ماجۃ الی قولہ والاذن یعنی حضرت علی ؓنے فرمایا کہ رسول اللہ ﷺ نے ہمیں حکم دیا کہ ہم حیوان کی آنکھ کان وغیرہ دیکھ لیا کریں اور یہ کہ ہم نہ قربانی کریں اس جانور کی جس کا کان آگے یا پیچھے سے کٹا ہو یا چیرا ہو یا اس میں گول سوراخ ہو۔
 عن البرائ بن عاذب ان رسول اللہ ﷺسئل ماذا یتقی من الضحایا فاشار بیدہ فقال اربعا العرجائ البین ظلعہا والعورائ البین عورھا والمریضۃ التی البین مرضہا والعجفائ التی لا تنقی رواہ مالک واحمد والترمذی وابو داؤد والنسائی وابن ماجۃ والدارمی
برائ بن عاذب کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ سے سوال ہوا کہکونسا جانور قربانی کے لائق نہیں ۔آپؐ نے فرمایا لنگڑا۔۔۔۔ جس کا لنگڑا پن ظاہر ہو یعنی چل نہ سکے اور دوسرا کانا۔۔۔۔ جس کا کانا پن ظاہر ہوا۔ تیسرا بیمار۔۔۔۔ جس کی بیماری ظاہر ہو۔ چوتھا دبلا۔۔۔۔ جس کی ہڈیوں میں گودا نہ ہو۔
اس قسم کے عیب دار جانور قربانی کرنا جائز نہیں ۔ سید الانبیائ ﷺ نے اعضب القرن والاذن جانور قربانی کرنے سے بھی منع فرمایا ہے۔
اعضب سے مراد نصف یا نصف سے زیادہ کان کٹا یا سینگ ٹوٹا مراد ہے۔  
اِس حدیث سے معلوم ہوا کہ جانور کا آدھے سے کم سینگ ٹوٹا ہو یا کان کٹا ہو تو پھر گنجائش ہے لیکن یہ حکم کٹے ہوئے کان کا ہے۔ اگر کان چیرا ہو یا سوراخ ہو پھر خواہ کان کے کسی حصے میں بھی ہو۔ ایسا جانور قربانی کرنا شبہ سے خالی نہیں ۔ بہتر یہی ہے کہ بالکل صحیح سالم ہو تاکہ قربانی ایسا بہترین مل شبہ و شک سے بالا رہے۔ تھن مرا یا دم کٹا یا دانت ٹوٹا یا پیٹی ایک طرف جھکی ہو تو حرج نہیں ۔
مندرجہ بالا احادیث کو سامنے رکھتے ہوئے علماء کرام نے ایسے عیب سے پاک جانور کو قربانی کے لئے جائز قرار دیا ہے۔لیکن اگر عیب تھوڑا سا ہو تو قربانی ہو تو جائے گی لیکن وہ مکرہ ہوگی اور اگر وہ عیب زیادہ ہو تو قربانی سرے سے ہوئی ہی نہیں(فتاوی عالمگیری)
(1)ایسالنگڑا جانور جس کا لنگڑا ہونا ظاہر ہو،(2)کاناجس کاکانا ہونا واضح ہو،(3)بیمار جس کا مرض ظاہر ہو(4) ایسا کمزو رولاغر جس کی ہڈیوں میں گود نہ ہو۔
نوٹ:۔ سینگ کی ٹوپی اتر جائے تو جائز نہیں کیونکہ ٹوپی سارے سینگ پر ہوتی ہے۔ لہٰذا وہ ٹوٹے کے حکم میں ہوگا۔
وہ جانور جن کی قربانی جائز نہ ہوگی:
٭ایسا جانور جس کی ناک کٹی ہو ۔ ٭ایسا جانور رجو اندھا یا کانا ہویا ایک تہائی سے زیادہ جس کی بینائی جاتی رہی ہو۔ ٭ایسا جانور جس کے پیدائشی ایک یا دونوں کان نہ ہوں یا ایک تہائی سے زیادہ کان کٹا ہوا ہو۔٭ایسا جانور جس کے سینگ جڑسے ٹوٹ گئے ہوں،(البتہ ماں پیٹ سے جن کی سینگ نہ ہوں ان کی قربانی درست ہے)
٭ایسا جانور جس کی دم ، سرین یا چکّی ایک تہائی سے کٹی کٹاہوئی ہو۔ ٭ایسا جانور جو لنگڑا ہو اور خود سے اپنے پاؤں پر چل کر قربان گاہ پرنہ جا سکتا
ہو۔(اگرزخمی پیر سے چل کے سہارےبھی سکتا ہو تو قربانی جائزہے درِمختار ج 5، کتاب الاضحیۃ ،ص 227)
٭ایسا جانور جو اتنا لاغر ہو کہ اس کی ہڈیوں میں مغز(گودا) نہ ہو۔
٭جس کے بالکل ہی دانت نہ ہوں یا اکثر دانت ٹوٹ چکے ہوں ( ولا ) ( بالہتماء ) التی لا أسنان لہا ، ویکفی بقاء الأکثر ،وقیل ما تعتلف بہ (درِمختار کتاب الاضحیۃ ج5ص 228) ٭اگر بکری کی زبان کٹی ہو اور وہ چارہ نہ کھا سکتی تو ناجائز ہے۔ ٭ایسا بیمار جانور جس کا مرض ظاہر ہو۔
اصطلاحات
العضباء : جس جانور کا نصف یا نصف سے زيادہ کان یا سینگ کٹا ہوا ہو اسے عضباء کہا جاتا ہے ۔
المقابلۃ : باء پرزبر ہے ، وہ جانور جس کا کان اگلے حصہ سے چوڑائی میں کٹا ہوا ہو ۔
المدابرۃ : باء پرزبر ہے ۔ وہ جانور جس پچھلی جانب سے چوڑائی میں کان کٹا ہوا ہو ۔
الشرقاء : جس کا کان لمبائی میں کٹا ہوا ہو ۔
الخرقاء : جس کے کان میں گول سوراخ ہو ۔
المصفرۃ : جس کا کان بالکل کاٹ دیا گيا حتی کہ کان کا سوراخ ظاہر ہوجائے ، اور المھزولۃ بھی کہا گيا ہے کہ جب اس کی کمزوری اس حد تک نہ پہنچی ہوکہ اس سے گودا ہی ختم ہوجائے
المستاصلۃ : جس کا مکمل سینگ ختم ہوجائے ۔
البخقاہ : کانی آنکھ والا جانور جس کی آنکھ توصحیح حالت میں ہی رہے لیکن اس کی نظر جاتی رہے ۔
المشیعۃ : وہ جوکمزوری کی بنا پرریوڑ کے ساتھ نہ چل سکے لیکن اسے ریوڑ کےساتھ ملانے کے لیے ہانکنا پڑے ۔ یا مشددہ پرزير بھی پڑھی جاسکتی ہے اوراس حالت میں اس کا معنی ہوگا کہ جوکمزوری کی بنا
پرریوڑسے پیچھے رہ جائے تووہ
مشیہ کی طرح ہوگی ۔
بوقت ذبح جانور میں کوئی عیب آجائے تو
اگر کسی جانور میں بوقت ذبح یا جانور گراتے وقت ایسا عیب ونقص پیدا ہوگیا جس کے ہوتے ہوئے قربانی جائز نہیں ہوتی، تواس اس صورت میں قربانی جائز ہو گی۔
اشْتَرَيْتُ أُضْحِيَّةً فَجَاءَ الذِّئْبُ فَأَكَلَ مِنْ ذَنَبِهَا أَوْ أَكَلَ ذَنَبَهَا فَسَأَلْتُ رَسُولَ الله ﷺ فَقَالَ ضَحِّ بِهَا ميں نے قربانی جانور خريدا ، بھيڑيا آيا اس نے اس کی دم (چکی ) کاٹ دی تو ميں نے رسول اللہ ﷺ سوال کيا تو آپ ﷺ نے فرمايا: اس کی قربانی کرلے۔ (مسند أحمد بن حنبل 11334, 10995)
اس روايت سے ثابت ہوا کہ اگر عيب جانور کو خريدنے کے بعد پيدا ہوا ہے تو وہ قربانی کے ليے ذبح کيا جاسکتاہے۔
قولہ ولا یضر تعیبہا من اضطرابہا) وکذا لو تعیبت فی ہذہ الحالۃ وانفلتت ثم أخذت من فورہا ، وکذا بعد فورہا عند محمد خلافا لأبی یوسف لأنہ حصل بمقدمات الذبح زیلعی ( ردالمحتار کتاب الاضحیۃج5ص 228)
جانور قربانی سے پہلے مر جائے تو
اگر جانور قربانی سے پہلے مر جائے تو صاحب نصاب پر دوسرا جانور خرید کر قربانی کرنا لازمی ہو گی، جبکہ شرعی فقیر پر قربانی لازمی نہیں ہوگی(درِمختار)
نوٹ: یہی حکم جانور کے چوری یا گم ہونے پر بھی لاگو ہو گا، یعنی صاحب نصاب پر دوسرا جانور لازمی اور فقیر پر لازمی نہ ہوگا۔
جانور خرید نے کے بعد کوئی عیب آجائے تو
اگر جانور قربانی خرید ا،بعدازاں اس جانو رمیں کوئی ایسا عیب ونقص پیدا ہوگیا جس کے ہوتے ہوئے قربانی جائز نہیں ہوتی، تواس سلسلہ میں شریعت اسلامیہ نے دو صورتیں بیان کی ہیں:
1-قربانی دینے والے دولتمنداور صاحب استطاعت ہونیکی بناء واجب قربانی دے رہے ہوں توانکو چاہئیے کہ وہ اس عیب د ار جانور کی قربانی نہ کریں بلکہ قربانی کے لئے دوسرا صحیح وسالم جانو رخرید یں ۔
2-اس کے برخلاف اگر وہ صاحب استطاعت و مالدار نہیں ہیں انکے لئے حکم شریعت یہ ہے کہ وہ اسی جانو رکی قربانی کریں جس کو انہوں نے قربانی کی نیت سے خرید اتھا‘اگر چہ کہ خرید نے کے بعد اس میں کوئی عیب پیدا ہوگیا ہو ۔
(ولواشتراہا سلیمۃ ثم تعیبت بعیب مانع )کمامر(فعلیہ اقامۃ غیرہا مقامہا ان )کان(غنیاوان )کان (فقیراأجزأہ ذلک)( درِمختار ج 5ص 229)
لانہا انماتعینت بالشراء فی حقہ حتی لواوجب اضحیۃ علی نفسہ بغیرعینہا فاشتری صحیحۃ ثم تعیبت عندہ فضحی بہا لا یسقط عنہ الواجب لوجوب الکاملۃ علیہ کالموسرزیلعی(ردالمحتار ج5کتاب الاضحیۃ ص229)
قربانی کے جانور کے بچہ ذبح سے پہلے پیدا ہو جائے تو
اگر قربانی سے پہلے گابھن جانور کی بچہ زندہ نکلے تو اس کو بھی ذبح کردے۔(گابھن جانور کی قربانی جائز ہے) اور گوشت آپس میں تقسیم کرنے کی
بجائے صدقہ کردیا جائے۔
اگر قربانی کے دن گزر گئے تو زندہ ہی صدقہ کر دیں یا پھر بیچ کر اس کی قیمت صدقہ کر دیں، آئندہ سال کے لئے
اپنے پاس روک کر نہیں رکھ سکتے۔
قربانی کے جانور کے ذبح ہوجانے کے بعد بچہ ظاہر ہو جائے تو
اگر قربانی کے بعد گابھن جانور کی بچہ زندہ نکلے تو اس کو بھی ذبح کردیا جائے۔ اگر بچہ مردہ پیدا ہو تو اسے پھینک دیا جائے۔ جبکہ قربانی ادا ہو جائے گی۔ (درِمختار)
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: