حضرت موسى علیہ السلام -1

تمام پیغمبر كى نسبت قرآن میں حضرت موسى علیہ السلام كا واقعہ زیادہ آیا ہے_تیس سے زیادہ سورۃ وں میں موسى علیہ السلام و فرعون اور بنى اسرائیل كے واقعہ كى طرف سومرتبہ سے زیادہ اشارہ ہوا ہے۔
اگر ہم ان آیت وں كى الگ الگ شرح كریں ااس كے بعد ان سب كو ایك دوسرے كے ساتھ ملا دیں تو بعض افراد كے اس توہم كے برخلاف كہ قرآن میں تكرار سے كام لیا گیا ہے،ہم كو معلوم ہوگا كہ قرآن میں نہ صرف تكرار نہیں ہے بلكہ ہر سورہ میں جو بحث چھیڑى گئی ہے اس كى مناسبت سے اس سرگزشت كا ایك حصہ شاہد كے طور پر پیش كیا گیا ہے۔
ضمناًیہ بات بھى ذہن میں ركھنا چایئےہ اس زمانے میں مملكت مصر نسبتاً وسیع مملكت تھی_وہاں كے رہنے والوں كا تمدن بھى حضرت نوح علیہ السلام ،ہود علیہ السلام اور شعیب علیہ السلام كى اقوام سے زیادہ ترقى یافتہ تھا۔لہذا حكومت فراعنہ كى مقاومت بھى زیادہ تھی۔
اسى بناء پر حضرت موسى علیہ السلام كى تحریك اور نہضت بھى اتنى اہمیت كى حامل ہوئی كہ اس میں بہت زیادہ عبرت انگیز نكات پائے جاتے ہیں _بنابریں اس قرآن میں حضرت موسى علیہ السلام كى زندگى اور بنى اسرائیل كے حالات كے مختلف پہلوئوں پر روشنى ڈالى گئی ہے۔
كلى طور پر اس عظیم پیغمبر علیہ السلام كى زندگى كو پانچ ادوار میں تقسیم كیا جاسكتا ہے۔
حضرت موسى علیہ السلام كى زندگى كے پانچ ادوار
1_پیدائش سے لے كر آغوش فرعون میں آپ علیہ السلام كى پرورش تك كا زمانہ۔
2_مصر سے آپ علیہ السلام كا نكلنا اور شہر مدین میں حضرت شعیب علیہ السلام كے پاس كچھ دقت گزارنا۔
3_آپ علیہ السلام كى بعثت كا زمانہ اور فرعون اور اس كى حكومت والوں سے آپ علیہ السلام كے متعدد تنازعے۔
4_فرعونیوں كے چنگل سے موسى علیہ السلام اور بنى اسرائیل كى نجات اور وہ حوادث جو راستہ میں اور بیت المقدس پہنچنے پر رونما ہوئے۔
5_حضرت موسى علیہ السلام اور بنى اسرائیل كے درمیان كشمكش كا زمانہ۔
ولادت حضرت موسى علیہ السلام
حكومت فرعون نے بنى اسرئیل كے یہاں جو نومولود بیٹے ہوتے تھے انہیں قتل كرنے كا ایك وسیع پروگرام بنایا تھا۔یہاں تك كہ فرعون كى مقرر كردہ دائیاں بنى اسرائیل كى باردار عورتوں كى نگرانى كرتى تھیں ۔
ان دائیوں میں سے ایك والدہ موسى علیہ السلام كى دوست بن گئی تھی۔
(شكم مادر میں موسى علیہ السلام كا حمل مخفى رہا اوراس كے آثار ظاہر نہ ہوئے) جس وقت مادر موسى علیہ السلام كو یہ احساس ہوا كہ بچے كى ولادت كا وقت قریب ہے تو آپ نے كسى كے ذریعہ اپنى دوست دائی كو بلانے بھیجا_جب وہ آگئی تو اس سے كہا:میرے پیٹ میں ایك فرزند ہے،آج مجھے تمہارى دوستى اور محبت كى ضرورت ہے۔
جس وقت حضرت موسى علیہ السلام پیدا ہوگئے تو آپ كى آنكھوں میں ایك خاص نور چمك رہا تھا،چنانچہ اسے دیكھ كر وہ دایہ كاپنے لگى اور اس كے دل كى گہرائی میں محبت كى ایك بجلى سماگئی،جس نے اس كے دل كى تمام فضاء كو روشن كردیا۔
یہ دیكھ كر وہ دایہ، مادر موسى علیہ السلام سے مخاطب ہوكر بولى كہ میرا یہ خیال تھا كہ حكومت كے دفتر میں جاكے اس بچے كے پیدا ہونے كى خبر دوں تاكہ جلاد آئیں اور اسے قتل كردیں اور میں اپنا انعام پالوں ۔مگر میں كیا كروں كہ میں اپنے دل میں اس نوزائیدہ بچے كى شدید محبت كا احساس كرتى ہوں ۔یہاں تك كہ میں یہ نہیں چاہتى كہ اس كا بال بھى بیكا ہو_اس كى اچھى طرح حفاظت كرو_میرا خیال ہے كہ آخر كار یہى ہمارا دشمن ہوگا۔
جناب موسى علیہ السلام تنور میں
وہ دایہ مادر موسى علیہ السلام كے گھر سے باہر نكلی۔تو حكومت كے بعض جاسوسوں نے اسے دیكھ لیا۔انھوں نے تہیہ كرلیا كہ وہ گھر میں داخل ہوجائیں گے۔موسى علیہ السلام كى بہن نے اپنى ماں كو اس خطرے سے آگاہ كردیا ماں یہ سن كے گھبراگئی۔اس كى سمجھ میں نہ آتا تھا كہ اب كیا كرے۔
اس شدید پریشانى كے عالم میں جب كہ وہ بالكل حواس باختہ ہورہى تھیاس نے بچے كو ایك كپڑے میں لپیٹا او رتنور میں ڈال دیا۔اس دوران میں حكومت كے آدمى آگئے_مگر وہاں انھوں نے روشن تنور كے سوا كچھ نہ دیكھا۔انھوں نے مادر موسى علیہ السلام سے تفتیش شرو ع كردى ۔پوچھا_دایہ یہاں كیا كررہى تھی_؟ موسى علیہ السلام كى ماں نے كہا كہ وہ میرى سہیلى ہے مجھ سے ملنے آئی تھى _حكومت كے كارندے مایوس ہوكے واپس ہوگئے۔
اب موسى علیہ السلام كى ماں كو ہوش آیا۔آپ نے اپنى بیٹى سے پوچھا كہ بچہ كہاں ہے؟ اس نے لاعلمى كا اظہار كیا۔ناگہاں تنور كے اندر سے بچہ كے رونے كى آواز آئی۔اب ماں تنور كى طرف دوڑى _كیا دیكھتى ہے كہ خدا نے اس كے لئے آتش تنور كو ”ٹھنڈا اور سلامتى كہ جگہ”بنادیا ہے۔وہى خدا جس نے حضرت ابراھیم علیہ السلام كے لیے آتش نمرود كو ”برد وسلام”بنادیا تھا۔اس نے اپنا ہاتھ بڑھایا اور بچے كو صحیح وسالم باہر نكال لیا۔
لیكن پھر بھى ماں محفوظ نہ تھی_كیونكہ حكومت كے كارندے دائیں بائیں پھرتے رہتے اور جستجو میں لگے رہتے تھے۔كسى بڑے خطرے كے لیے یہى كافى تھا كہ وہ ایك نوزائید بچے كے رونے كى آواز سن لیتے۔
اس حالت میں خدا كے ایك الہام نے ماں كے قلب كو روشن كردیا_وہ الہام ایسا تھا كہ ماں كو بظاہر ایك خطرناك كام پر آمادہ كررہا تھا_مگر پھر بھى ماں اس ارادے سے اپنے دل میں سكون محسوس كرتى تھی۔
”ہم نے موسى علیہ السلام كى ماں كى طرف وحى كى كہ اسے دودھ پلا اور جب تجھے اس كے بارے میں كچھ خوف پیدا ہوتو اسے دریا میں ڈال دینا اور ڈرنا نہیں اور نہ غمگین ہونا كیونكہ ہم اسے تیرے پاس لوٹا دیں گے اور اسے رسولوں میں سے قرار دیں گے_اس نے كہا: ”خدا كى طرف سے مجھ پریہ فرض عائد ہوا ہے۔میں اسے ضرور انجام دوں گی”_اس نے پختہ ارادہ كرلیا كہ میں اس الہام كو ضرور عملى جامہ پہنائوں گى اور اپنے نوزائیدہ بچے كو دریائے نیل میں ڈال دوں گی۔
اس نے ایك مصرى بڑھئی كو تلاش كیا
(وہ بڑھئی قبطى اور فرعون كى قوم میں سے تھا)اس نے اس بڑھئی سے درخواست كى كہ میرے لیے ایك چھوٹا سا صندوق بنادے۔
بڑھئی نے پوچھا:جس قسم كا صندوقچہ تم بنوانا چاہتى ہو اسے كس كام میں لائوگی؟
موسى علیہ السلام كى ماں جو دروغ گوئی كى عادى نہ تھى اس نازك مقام پر بھى سچ بولنے سے باز نہ رہی_اس نے كہا:میں بنى اسرائیل كى ایك عورت ہوں _میرا ایك نوزائید بچہ لڑكا ہے_میں اس بچے كو اس صندوق میں چھپانا چاہتى ہوں ۔
اس قبطى بڑھئی نے اپنے دل میں یہ پختہ ارادہ كرلیا كہ جلادوں كو یہ خبر پہنچادےگا_وہ تلاش كركے ان كے پاس پہنچ گیا۔مگر جب وہ انھیں یہ خبر سنانے لگاتو اس كے دل پر ایسى وحشت طارى ہوئی كہ اس كى زبان بند ہوگئی۔وہ صرف ہاتھوں سے اشارے كرتا تھا اور چاہتا تھا كہ ان علامتوں سے انھیں اپنا مطلب سمجھا دے۔حكومت كے كارندوں نے اس كى حركات دیكھ كر یہ سمجھا كہ یہ شخص ہم سے مذاق كررہا ہے_اس لیے اسے مارا اور باہر نكال دیا۔
جیسے ہى وہ اس دفتر سے باہر نكلا اس كے ہوش و حواس یكجاہوگئے، وہ پھر جلادوں كے پاس گیا اور اپنى حركات سے پھر ماركھائی۔
آخر اس نے یہ سمجھا كہ اس واقعے میں ضرور كوئی الہى راز پوشیدہ ہے_چنانچہ اس نے صندوق بناكے حضرت موسى علیہ السلام كى والدہ كو دےدیا۔

جاری ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Advertisements
2 comments
  1. تحریم باجی،
    کیا ہی اچھا ہو کہ اگر آپ حضرت دانیال علیہ السلام پر ایک شاہکار تحریر لکھ سکیں۔۔۔

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: