حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ

نام ونسب
آپ کے اصلی نام کے بارے میں یقینی طور پر کچھ کہنا مشکل ہے، کیونکہ آپ کی کنیت ایسی مشہور ہے کہ نام چھپ کر رہ گیا۔اصحاب سیر نے آپ کے نام کے بارے میں مختلف اقوال ذکر کیے ہیں۔
خود حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ اپنے نام کے بارے میں فرماتے ہیں کہ زمانہ جاہلیت میں میرا نام عبدشمس بن صخر تھا۔ اسلام لانے کے بعد نبی کریم ﷺ نے میرا نام عبدالرحمن اور کنیت ابوہریرہ رکھی۔
ایک اور روایت میں ہے کہ زمانہ جاہلیت میں آپ کانام عبدشمس اور کنیت ابوالاسود تھی۔ پھر حضور اکرم ﷺ نے آپ کا نام عبداللہ اور کنیت ابوہریرہ رکھی ۔
(الاصابہ فی تمییز الصحابہ ج4ص2385،سیر اعلام النبلاء ج3ص514)
علامہ ذہبی رحمہ اللہ نے ”عبدالرحمن” نام کو راجح قرار دیا ہے۔
(سیر اعلام النبلاء ج3ص513)
لیکن ہشام کلبی اور خلیفہ بن خیاط کے قول کے مطابق سلسلہ نسب یوں ہے
عبدالرحمن عمیر بن عامر بن عبدذی الشری بن طریف بن عتاب بن ابی صعب بن منبہ بن سعد بن ثعلبہ بن سلیم بن فہم بن غنم بن دوس
(اسد الغابۃ ج5ص247،سیراعلام النبلاء ج3ص514)
ابوہریرہ کنیت کی وجہ
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ خود فرماتے ہیں کہ میں نے ایک بلی پال رکھی تھی۔ رات کو اس کو درخت پہ رکھتا تھا اور صبح کو جب بکریاں چرانے جاتا تو ساتھ لے جاتا اور اس کے ساتھ کھیلتا تھا۔تولوگوں نے یہ بات دیکھ کر مجھے ابوہریرہ کہنا شروع کردیا۔
(الاصابۃج4ص2385، اسدالغابۃ ج5ص248،سیراعلام النبلاء ج3ص518)
ہجرت اور قبول اسلام
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ خود بیان کرتے ہیں کہ حضور ﷺ خیبر تشریف لے گئے اور میں ہجرت کرکے مدینہ پہنچا
(سیراعلام النبلاء ج3ص518)
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کے قبیلہ کے ایک آدمی طفیل بن عمرو دوسی نے ہجرت عظمی سے پہلے مکہ میں اسلام قبول کرنے کے بعد اپنے وطن یمن واپس آکر اپنے قبیلہ دوس کو اسلام کی دعوت دی اور غزوہ خیبر کے زمانہ میں یمن سے 80افراد کو لے کر حضور اکرم ﷺ کی خدمت میں مدینہ حاضر ہوئے، لیکن آپ تشریف لے گئے تھے۔ پھر یہ حضرات بھی خیبر پہنچے۔ اسی وفد میں سیدنا ابوہریرہ رضی اللہ عنہ بھی تھے،انہوں نے بھی نبی کریم ﷺ کے ہاتھ پر اسلام قبول کیا۔
(سیرالصحابہ ج2ص50)
علمی ذوق
ایک بار رسول اکرم ﷺ نے خودفرمایا ۔ انھوں نے ایک سوال کیا ”من اسعدالناس بشفاعتک ”کہ قیامت کے دن کون خوش نصیب آپ کی شفاعت کا زیادہ مستحق ہوگا؟ آپ صلی اللہ علیہ و سلم نے فرمایا کہ تمہاری حرص حدیث دیکھ کر میرا پہلے سے خیال تھا کہ یہ سوال آپ سے پہلے کوئی نہیں کرے گا۔ (الاصابۃ ج 4ص2388)
حدیث میں آپ کا مقام
حضرت ابوسعید خدری رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ نبی اکرم ﷺ نے فرمایا ابوہریرہ علم کا ظرف اور برتن ہیں۔
(سیر اعلام النبلاء ج3ص521)
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ ﷺ سے (علم کے)دوبرتن یاد کیے۔
(صحیح بخاری کتاب العلم،الاصابۃ ج4ص2391،سیراعلام النبلاء ج3ص521)
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ اس نعمت کا اظہار ان الفاظ میں کرتے ہیں اصحاب محمد ﷺ میں سے کسی کو مجھ سے زیادہ حدیثیں یاد نہیں سوائے عبداللہ بن عمرو رضی اللہ عنہ کے، کیونکہ وہ لکھتے تھے اور میں لکھتا نہیں تھا۔ (سیر اعلام النبلاء ج3ص522)
حضرت ابن عمر رضی اللہ عنہما فرماتے ہیں کہ ابوہریرہ رضی اللہ عنہ مجھ سے بہتر ہیں اور جو بیان کرتے ہیں اس کو زیادہ جانتے ہیں۔ (الاصابۃ ج4ص2391)
ابو صالح رحمہ اللہ فرماتے ہیں کہ ابوہریرہ رضی اللہ عنہ اصحاب محمد ﷺ میں سب سے بڑے حافظ الحدیث تھے۔ (سیر اعلام النبلاء ج3ص521،الاصابۃ ج4ص2388)
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ نے فرمایا کہ اصحاب رسول اللہ ﷺ میں سے کسی کو میں نہیں جانتا جن کو مجھ سے زیادہ حدیثیں یاد ہوں۔(سیراعلام النبلاء ج3ص522)
حضرت امام شافعی رحمہ اللہ فرماتے ہیں کہ حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ اپنے ہمعصروں میں سب سے زیادہ حدیث جاننے والے تھے اور حفاظ حدیث میں سب سے بڑے حافظ الحدیث تھے۔ (الاصابۃ ج4ص2388)
کثرت روایت کا سبب
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ احادیث کثرت سے بیان کرتے تھے تو بعض لوگوں نے کہا کہ ابوہریرہ تو کثرت سے حدیثیں بیان کرتا ہے [جبکہ مہاجر اور انصار ان حدیثوں کو بیان نہیں کرتے] تو آپ نے ان لوگوں کو یہ جواب دیا
میں مسکین آدمی تھا اور پیٹ بھرنے کے بعد رسول اللہ صلی اللہ علیہ و سلم کے ساتھ رہتا تھا۔لیکن مہاجرین بازاروں میں اپنے کاروبار میں مشغول رہتے تھے اور انصار اپنے ا موال کی دیکھ بھال میں ۔میں ایک دن نبی اکرم ﷺ کی خدمت میں حاضر تھا اور آپ ﷺ نے فرمایا کہ جو شخص میری بات ختم ہونے تک اپنی چادر کو پھیلالے پھر اپنے سے ملالے تو جو کچھ اس نے مجھ سے سنا اس کو کبھی نہیں بھولے گا۔میں نے اپنی چادر کو پھیلا لیا ۔ اس ذات کی قسم جس نے آنحضرت ﷺ کو حق کے ساتھ بھیجا ہے پھر کبھی میں آپ کی کوئی حدیث جو آپ سے سنی تھی نہیں بھولا۔
(صحیح بخاری ،حدیث 7354 )
حضرت زید بن ثابت فرماتے ہیں کہ ہم مسجد میں اللہ کا ذکرکر رہے تھے ۔نبی کریم ﷺ تشریف لائے اور ہمارے ساتھ بیٹھ گئے ۔پھر فرمایا اپنا کام جاری رکھو ۔حضرت زید فرماتے ہیں کہ میں نے اور میرے ساتھیوں نے دعا کی تو رسول اللہ ﷺ نے ہماری دعا پر آمین کہی۔ پھر ابوہریرہ رضی اللہ عنہ نے یہ دعا کی
انی اسئلک مثل ما سال صاحباک واسالک علما لاینسی
کہ اے اللہ میں اس چیز کا بھی سوال کرتا ہوں جس کا میرے ساتھیوں نے کیا اور مزید مجھے ایسا علم عطافرما جو کبھی نہ بھولے ۔
فقال رسول اللہ آمین فقلنا یارسول اللہ ونحن نسالک علما لاینسی فقال سبقکم بھا الغلام الدوسی"
(الاصابۃ ج4ص2391،سیراعلام النبلاء ج3ص522)
تو رسول اکرم ﷺ نے آمین فرمائی۔ ہم نے رسول اکرم ﷺ سے عرض کی کہ ہم بھی ایسے علم کا اللہ سے سوال کرتے ہیں جو کبھی نہ بھولے ۔ نبی کریم ﷺ نے فرمایا کہ دوسی[اشارہ ابو ہریرہ کی طرف] تم دونوں سے سبقت لے گیا۔
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کا امتحان
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کی کثرت روایت کی وجہ سے بعض لوگوں کے دلوں میں کچھ شکوک وشبہات پیدا ہوگئے تھے۔ چنانچہ ایک مرتبہ مروان نے امتحان کی غرض سے آپ کو بلوایا۔مروان نے اپنے کاتب أبو الزعيزعةکو اپنے تخت کے پیچھے بیٹھا دیا۔ أبو الزعيزعةکہتے ہیں کہ ابوہریرہ رضی اللہ عنہ حدیثیں بیان کرتے رہے اور میں لکھتا رہا۔ مروان نے پھر سال کے شروع میں حضرت ابو ہریرہ کو دوبارہ بلوایا اور مجھے پردہ کے پیچھے بیٹھا یا آپ رضی اللہ عنہ سے انہیں حدیثوں کے دوبارہ سنانے کی فرمائش کی ۔آپ رضی اللہ عنہ نے اسی ترتیب سے سنائیں ، کمی کی نہ زیادتی، مقدم کو موخر کیا نہ موخر کو مقدم۔تو میں نے حافظہ کی تصدیق کردی۔
(سیر اعلام النبلاء ج3ص522)
حضرت طلحہ بن عبیداللہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں
لا اشک ان اباہریرۃ سمع من رسول اللہ مالم نسمع
(الاصابۃ ج4ص2391)
مجھے اس بات میں کوئی شک نہیں کہ ابوہریرہ نے جو رسول اکرم ﷺ سے وہ احادیث سنی ہیں جو ہم نے نہیں سنیں۔
سفر آخرت کے وقت حالت
آپ کی وفات کا وقت قریب آیا تو وہ رونے لگے رونے کی وجہ پوچھی تو فرمایا
من قلۃ الزاد وشدۃ المفازۃ ( زادراہ کم ہے سفر طویل ہے )
تعداد مرویات
کل روایات 5374ہیں،جن میں سے326متفق علیہ یعنی بخاری اور مسلم دونوں میں ہیں ۔ جو روایات صرف بخاری میں ہیں ان کی تعداد 93اور جوصرف مسلم میں ہیں وہ98 ہیں۔
(سیر اعلام النبلاء ج3ص534)
مرویات ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ میں سے چند روایات
حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ نے فرمایا مجھ پر درود بھیجو۔ تم جہاں کہیں بھی ہو تمہارا درود مجھ پر پہنچایا جاتا ہے۔
(سنن ابی داؤد ج1 ص295)
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ نماز میں مرد کا اپنے دائیں ہاتھ کوبائیں ہاتھ پر ناف کے نیچے رکھناسنت ہے۔
(الاوسط للامام المندر ج3ص94،سنن الدارقطنی ج1 ص288، مؤطاامام مالک ص۶۹ ، موطا امام محمد ص۹۵)
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ ایک مرتبہ آپ نے جہری نماز جس میں امام بلند آواز سے قرأت کرتاہے ،سے فارغ ہوئے تو مڑکرفرمایا تم میں سے کس نے میرے پیچھے قرآن مجید پڑھا ہے؟ لوگوں میں سے ایک شخص نے کہا میں نے یارسول اللہ! آپ نے فرمایا ’’ میں بھی کہوں کہ میرے ساتھ کیوں قرآن کا جھگڑاہورہا ہے ؟ اس کے بعدلوگ رسول اللہ کے ساتھ نماز میں قرآن مجید پڑھنے سے رک گئے ۔
حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضور ﷺ وتر کی پہلی رکعت میں سَبِّحِ اسْمَ رَبِّكَ الْأَعْلَى اور دوسری رکعت میں قُلْ يَا أَيُّهَا الْكَافِرُونَ اور تیسری رکعت میں قُلْ هُوَ اللَّهُ أَحَدٌ اور معوذتین پڑھتے تھے۔
(مجمع الزوائد ج2 ص506،505)
حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور ﷺ نے فرمایا جس نے فجر کی دو رکعتیں نہ پڑھی ہوں تو وہ انہیں سورج نکلنے کے بعد پڑھ لے۔
(جامع الترمذی ج 1ص96 ) تعداد تلامذہ
احادیث نبوی ﷺ کے عظیم الشان ذخیرہ کی مناسبت سے آپ کے تلامذہ کا دائرہ وسیع تھا۔ صحابہ اور تابعین تلامذہ کی تعداد 800سے بڑھ جاتی ہے۔
(سیر اعلام النبلاء ج3ص517،الاسیتعاب ص852،البدایہ والنہایہ ج4ص498)
تاریخ وفات
آپ کی تاریخ وفات کے بارے میں تین قول ہیں۔
1- 57ہجری
2- 58 ہجری
3- 59 ہجری 78 سال کی عمر پائی۔(الاستیعاب ص852،سیراعلام النبلاء ج3ص531)
نماز جنازہ
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ کی نماز جنازہ حضرت ولید بن عقبہ نے نماز عصر کے بعد پڑھائی ،جس میں حضرت عبداللہ بن عمر اور حضرت ابوسعید رضی اللہ عنہم وغیرہ صحابہ بھی شریک تھے ۔
(سیراعلام النبلاء ج3ص532،الاستیعاب ص852،الاصابہ ج4ص2393)
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: