اہم مسائل روزہ

روزے دار کے لیے حسب ذیل چیزوں  سے اجتناب ضروری ہے
جھوٹ سے  جیسے نبی کریم ﷺ نے فرمایا(من لم۔۔۔واشربہ)جس شخص نے جھوٹ بولانا اور جھوٹ پر عمل کرنا نہ چھوڑا، تو اللہ عزوجل کو کوئی ضرورت نہیں  ہے کہ ایسا شخص اپنا کھانا پینا چھوڑے۔   یعنی اللہ تعالیٰ کے ہاں  اس کے روزے کی کوئی اہمیت نہیں ۔
(صحیح البخاری، الصوم، باب من لم یدع قول الزور والعمل بہ فی الصوم، ح  1903)
لغو اور رفث سے  نبی کریم ﷺ نے فرمایا(لیس الصیام۔۔۔۔ انی صائم)روزہ صرف کھانا پینا (چھوڑنے کا)نام نہیں  ہے۔ روزہ تو لغو اور رفث سے بچنے کا نام ہے۔ اس لیے اگر تجھ کو کوئی شب و ستم کرے یا تیرے ساتھ جہالت سے پیش آئے تو تُو کہہ دے میں  تو بھئی روزے دار ہوں ۔(صحیح ابن خزیمہ 242/3، ح  1996۔ مط۔ المکتب الاسلامی)
لغو  ہر بے فائدہ اور بے ہودہ کام کو کہتے ہیں  ، جیسے ریڈیو اور ٹی وی کے لچر اور بے ہودہ پروگراموں  کا سننا اور دیکھنا ہے۔ تاش ، شطرنج اور اس قسم کے دیگر کھیل ہیں ۔ فحش ناول، افسانے اور ڈرامے ہیں ۔ دوست احباب کے ساتھ خوش گپیاں  ، چغلیاں  ، بے ہودہ مذاق اور دیگر نا شائستہ حرکتیں  ہیں ۔
رفث کا مطلب  جنسی خواہشات پر مبنی باتیں  اور حرکتیں  ہیں ۔ یہ لغو و رفث روزے کی حالت میں  بالخصوص ممنوع ہیں ۔ اس لیے تمام مذکورہ باتوں  اور حرکتوں  سے اجتناب کیا جائے۔
اسی طرح کوئی لڑنے جھگڑنے کی کوشش کرے ، گالی گلوچ کر کے اشتعال دلائے، تو روزے دار اس جہالت کے مقابلے میں  صبر و تحمل اور در گزر سے کام لے اور دوسرے فریق کو بھی اپنے عمل سے یہ وعظ و نصیحت کرے کہ روزے کی حالت میں  بالخصوص جدال و قتال سے بچنا اور قوت برداشت سے کام لینا چاہیے۔
    جھوٹ اور جھوٹ پر عمل کرنے سے اجتناب کا مطلب ہے کہ روزے میں  نہ جھوٹی بات کرے نہ دجل و فریب پر مبنی کوئی حرکت، جیسے دکان میں  بیٹھ کر گاہکوں  سے جھوٹ بولے یا ان کو دھوکہ اور فریب دینے کی کوشش کرے، جیسا کہ بد قسمتی سے بے شمار دکاندار ان حرکتوں  کا ارتکاب کرتے ہیں ۔ یہ حرکتیں  ہر وقت ہی ممنوع ہیں ۔ لیکن روزہ رکھ کر ان حرکتوں  کا ارتکاب تو بہت بڑی جسارت اور غفلت شعاری کا عجیب مظاہرہ ہے۔
ایسے ہی لوگوں  کی بابت رسول اللہ ﷺ نے فرمایاہے:(کم من صائم۔۔۔۔۔۔۔۔الا السھر)کتنے ہی روزے دار ہیں  جن کو سوائے پیاس کے، روزہ رکھنے سے کچھ نہیں  ملتا اور کتنے ہی شب بیدار ہیں  جن کو بے خوابی کے سوا شب بیداری سے کچھ حاصل نہیں  ہوتا۔(مسند احمد  441/2 وسنن الدارمی، الرقائق، باب فی المحافظة علی الصوم، ح  2716 وقال الالبانی اسنادہ جید، مشکوة للالبانی  626/1)
روزہ کو فاسد کرنے والے کام
اللہ تعالی کافرمان ہے  
   أُحِلَّ لَكُمْ لَيْلَةَ الصِّيَامِ الرَّفَثُ إِلَى نِسَائِكُمْ هُنَّ لِبَاسٌ لَكُمْ وَأَنْتُمْ لِبَاسٌ لَهُنَّ عَلِمَ اللَّهُ أَنَّكُمْ كُنْتُمْ تَخْتَانُونَ أَنْفُسَكُمْ فَتَابَ عَلَيْكُمْ وَعَفَا عَنْكُمْ فَالْآَنَ بَاشِرُوهُنَّ وَابْتَغُوا مَا كَتَبَ اللَّهُ لَكُمْ وَكُلُوا وَاشْرَبُوا حَتَّى يَتَبَيَّنَ لَكُمُ الْخَيْطُ الْأَبْيَضُ مِنَ الْخَيْطِ الْأَسْوَدِ مِنَ الْفَجْرِ ثُمَّ أَتِمُّوا الصِّيَامَ إِلَى اللَّيْلِ وَلَا تُبَاشِرُوهُنَّ وَأَنْتُمْ عَاكِفُونَ فِي الْمَسَاجِدِ تِلْكَ حُدُودُ اللَّهِ فَلَا تَقْرَبُوهَا كَذَلِكَ يُبَيِّنُ اللَّهُ آَيَاتِهِ لِلنَّاسِ لَعَلَّهُمْ يَتَّقُونَ۔روزے کی راتوں میں اپنی بیویوں سے ملنا تمہارے لئے حلال کیا گیا ، وہ تمہارا لباس ہیں اور تم ان کے لباس ہو، تمہاری پوشیدہ خیانتوں کا اللہ تعالٰی کو علم ہے، اس نے تمہاری توبہ قبول فرماکر تم سے در گزر فر ما لیا ، اب تمہیں ان سے مباشرت کی اور اللہ تعالیٰ کی لکھی ہوئی چیز کو تلاش کرنے کی اجازت ہے، تم کھاتے پیتے رہو یہاں تک کہ صبح کا سفید دھاگہ سیاہ دھاگے سے ظاہر ہوجائے۔ پھر رات تک روزے کو پورا کرو اور عورتوں سے اس وقت مباشرت نہ کرو جب کہ تم مسجدوں میں اعتکاف میں ہو۔ یہ اللہ تعالیٰ کی حدود ہیں، تم ان کے قریب بھی نہ جاو۔ اسی طرح اللہ تعالیٰ اپنی آیتیں لوگوں کے لئے بیان فرماتا ہے تاکہ وہ بچیں۔   ( البقرہ  187
اس آیت کریمہ میں اللہ تبارک وتعالی نے روزہ کو توڑنیوالے اصولی کام بیان کردئے ہیں اور نبی کریم صلی اللہ علیہ و سلم نے حدیث میں اسکی مکمل وضاحت کردی ہے ، اسکی تفصیل یہ ہے کہ ، روزہ کو توڑ دینے والے کام سات ہیں  
1-جماع ( ہمبستری ) کرنا ، روزہ توڑنے والے کاموں میں یہ سب سے بڑا اور گناہ کے لحاظ سے یہ سب سے بڑا ہے ، روزہ نفلی ہو کہ فرض جماع سے باطل ہوجاتا ہے ، اگر رمضان کا روزہ ہو تو اس پر قضا کے ساتھ کفارہ مُغلّظہ لازم ہے ، کفارہ مغلظہ یہ کہ ، ایک مسلمان غلام آزاد کرنا ، اگر نہ ملے تو دو مہینہ کا لگاتار روزہ رکھنا ، ان دونوں مہینوں میں بغیر عذر شرعی کے افطار نہیں کرسکتا ، جیسے عید کا دن درمیان میں آگیا ، آیا تشریق ، یا کوئی عذر بیماری ، سفر وغیرہ ، یا پھر ساٹھ مسکینوں کو کھانا کھلائے ۔ (صحیح مسلم   ١١١١)
2-ترکِ شہوت رانی   بوس وکنار کے ذریعہ یا اپنے وہاتھ وغیرہ سے اختیاری طور پر منی خارج کرنا ، کیونکہ یہ عمل بھی شہوت رانی میں داخل ہے ، جس سے پرہیز کئے بغیر کسی کا روزہ صحیح نہیں ہوسکتا ، جیسا کہ حدیث قدسی میں ہے کہ … بندہ اپنا کھانا ، پانی ، اور شہوت کو میرے لئے چھوڑ دیتا ہے ( بخاری   ١٨٩٤ )
3-کھانا اور پینا   اس سے مراد کھانے یا پینے کی چیز کو منہ یا ناک کے ذریعہ معدہ تک پہنچانا ہے ، خواہ کھانے پینے کی کوئی بھی چیز ہو ، ارشاد باری تعالٰی ہے وَكُلُوا وَاشْرَبُوا حَتَّى يَتَبَيَّنَ لَكُمُ الْخَيْطُ الْأَبْيَضُ مِنَ الْخَيْطِ الْأَسْوَدِ مِنَ الْفَجْرِ ثُمَّ أَتِمُّوا الصِّيَامَ إِلَى اللَّيْلِ     اور کھائو ، پیو یہاں تک کہ سفید دھاگہ ( فجرصادق ) اور کالا دھاگہ ( فجر کاذب ) کے درمیان فرق واضح ہوجائے ، پھر رات تک روزہ کو پورا کرو   ( البقرة   ١٨٧)
4-جو کھانے پینے کے حکم میں ہو   یہ دو طرح کے ہیں :
أول : روزہ دار کو خون چڑھانا ، مثلاً بہت زیادہ خون نکل گیا ، جس کے لئے خون چڑھایا گیا تو اس سے روزہ ٹوٹ جائے گا ، کیونکہ خون ہی کھانے پینے کی اصل غایت ہے اور خون چڑھانے سے یہ مقصد پوارا ہوا ہے ۔
دوم: وہ گلوکوز چڑھانا جو کھانے پینے کے قائم مقام ہو ، اگر انجکشن وغیرہ کے ذریعہ ایسا گلوکوز چڑھایا جائے تو روزہ ٹوٹ جائے گا کیونکہ وہ کھانے پینے کے حکم میں ہے ، البتہ وہ انجکشن جو کھانے پینے کا بدل نہیں ہے اس سے روزہ نہیں ٹوٹتا خواہ وہ انجکشن پٹھوں میں یا رگوں میں لیا جائے ، حتی کہ اسکا مزہ حلق میں محسوس ہو ،پھر بھی اس سے روزہ نہیں ٹوٹتا ، کیونکہ وہ کھانے پینے کے حکم میں نہیں ہے ۔
5-سینگی ، خون نکالنا ( حجامت )   اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلّم کا ارشاد ہے ، افطر الحاجم والمحجوم    پچھنا لگانے والا اور پچھنا لگوارہا ہے دونوں نے افطار کیا  ( أحمد ، ج  ٥، ص  ٢٧٦ ، ابو دائود  ٢٣٦٧ ، دیکھئے صحیح الجامع   ١١٣٦ ) ۔ اسی بنیاد پر علماء کا کہنا ہے کہ واجبی روزہ دار کے لئے خون دینا جائز نہیں ہے اِلاّ یہ کہ وہ شخص ایسا مجبور ہوکہ بغیر خون دئے اسکی ضرورت پوری نہیں ہورہی ہے ، اور خون دینے والے کو خون نکالنے سے ضرر لاحق نہ ہورہا ہو تو ضرورت ومجبوری کے تحت وہ اس دن (خون دےکر ) افطار کردے اور بعد میں اسکی قضا کرلے ۔
6-عمداً قے کرنا
7-حیض ونفاس کا خون آنا
روزہ دار کیلئے مستحب کام
رمضان المبارک بڑی فضیلتوں والا مہینہ ہے ‘ اس مہینہ میں نیک کام کا اجر بڑھ جاتا ہے اس لئے اسے غنیمت سمجھتے ہوئے اس سے مستفید ہونا ضروری ہے اس مہینہ کے روزوں کو اللہ تعالٰی نے اسلام کا ایک رکن قرار دیا ہے ، روزہ داروں کیلئے اللہ تعالٰی نے جنت کا ایک دروازہ ہی خاص کردیا ہے ۔
کچھ ایسے نیک عمل ہیں جن کا اہتما م روزہ دار کیلئے مستحب ہے   ـ
1-قرآن کریم کی تلاوت   اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ سلّم کا فرمان ہے جس نے قرآن مجید کا ایک حرف پڑھا تو اسکے عوض اسے ایک نیکی ملتی ہے اور ہر نیکی کا بدلہ دس گنا ملتا ہے ‘ میں نہیں کہتا کہ   الم   ایک حرف بلکہ الف ایک حرف ہے ‘ لام ایک حرف ہے ‘ اور میم ایک حرف ہے ۔ ( سنن الترمذی)
2-کثرت سے دعاء مانگنا   روزہ کے احکام بیان کرتے ہوئے اللہ تعالٰی فرماتا ہے کہ    وَإِذَا سَأَلَكَ عِبَادِي عَنِّي فَإِنِّي قَرِيبٌ أُجِيبُ دَعْوَةَ الدَّاعِ إِذَا دَعَانِ…. الآیة    جب میرے بندے میرے بارے میں آپ سے سوال کریں تو آپ کہہ دیں کہ میں بہت ہی قریب ہوں ‘ ہر پکارنے والے کی پکارکو جب کبھی وہ مجھے پکارے میں قبول کرتا ہوں  ( البقرہ  186)
3-افطار کے وقت دعاء کرنا  اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلم کا فرمان ہے کہ اللہ تعالٰی افطار کے وقت بہت سے لوگوں کو معاف کردیتا ہے ۔ (مسند أحمد)
4-گھر سے نکلنے کی دعاء   بسم اللہ توکلت علی ولا حول ولا قوة لا باللہ ۔ (أبودائود ؛ الترمذی ) اللھم نی أعوذبک أن اضل أو ازل أو ازل أو أظلم أو أظلم أو أجھل أو یجھل علی ۔ ( أبودائود ؛الترمذی ) گھر میں داخل ہونے کی دعا ء   ـبسم ولجنا وبسم اللہ خرجنا وعلی ربنا توکلنا ۔ ( سنن أبودائود)
5-بیت الخلاء میں داخل ہونے کی دعاء  بسم اللہ …. أللھم نی أعوذبک من الخبث والخبائث ۔ ( بخاری ومسلم وابودائود ) بیت الخلاء سے نکلنے کی دعاء   ـ غفرانک ۔۔ ( أبودائود ؛ الترمذی)
6-سونے کی دعاء   با سمک اللھم أموت وأحیا ( بخاری ومسلم ) أللھم قنی عذابک یوم تبعث عبادک ( ابوداؤد ؛ الترمذی ) بیدار ہونے کی دعاء  الحمدللہ الذی أحیانا بعد ما أماتنا ولیہ النشور ۔ ( صحیح بخاری ومسلم)
7-سواری پر بیٹھنے کی دعاء   بسم اللہ ؛ الحمدللہ ؛ سبحان الذی سخرلنا ھذا وماکنا لہ مقرنین ونا لی ربنا لمنقلبون ۔
8-صدقہ وخیرات   صحیح بخاری میں ہے کہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلم رمضان المبارک میں تیز ہوا سے بھی زیادہ سخی ہوجاتے تھے ۔
9-عمرہ کرنا   اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلم کا فرمان ہے کہ رمضان میں عمرہ کرنا میرے ساتھ حج کرنے کے برابر ہے ۔ ( بخاری)
10-زبان کی حفاظت   غیبت چغلی جھوٹ ‘ فحش بات اور گالی گلوچ سے زبان کی حفاظت کی جائے اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ سلم کا فرمان ہے    جو شخص جھوٹ بولنا اور اسکے مطابق عمل کرنا نہ چھوڑے تو اللہ تعالی کو اسکے بھوکے پیاسے رہنے کی ضرورت نہیں ہے ۔ ( صحیح بخاری ) جو شخص فحش کلام اور جھوٹ کو ترک نہ کرے اللہ تعالٰی کو اسکے کھانا پانی چھوڑنے کی ضرورت نہیں ہے  ( الطبرانی )۔   اگر تم لوگ روزہ رکھو تو فحش کلامی اور شور وغل سے پرہیز کرو اور اگر کوئی تمہیں گالی دے یا لڑائی کرے تو اس سے کہہ دو کہ میں روزے سے ہوں   ( متفق علیہ ) ۔
11-صلہ رحمی کا اہتمام کرنا   کیونکہ قطع رحمی بندے کے نیک عمل کے ثواب کو ختم کردیتی ہے ۔
12-بھلائی کا حکم دینا اور برائی سے روکنا
13-زکاة دینا 
14-والدین کے ساتھ حسن سلوک کرنا
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Worlds Largest Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

My Blog

Just another WordPress.com site

%d bloggers like this: