شَھْرُ رَمَضَانَ -ماہ رمضان المبارک-7

روزوں کی فضیلت:
ماہِ رمضان فضائل کے باب میں اپناثانی نہیں رکھتا۔ کتاب وسنت میں  سب مہینوں سے بڑھ کر اسی کے فضائل بیان ہوئے ہیں ۔ قرآنِ مجید میں  اسلامی مہینوں  میں  سے صرف ماہِ رمضان ہی کا نام لے کر ذکر کیاگیاہے۔دنیا میں دیگر مہینوں  کی بہ نسبت اسی کے فضائل و مسائل پرمشتمل بیسیوں  کتب اب تک منصہ شہود پر آچکی ہیں  اور یہ سلسلہ قیامت تک جاری رہے گا۔ ان شاء اللہ!
ماہِ رمضان المبارک کو ایک یہ بھی بے مثل فضیلت حاصل ہے کہ اس میں  اللہ تعالیٰ کا آخری کلام قرآنِ مجیدنازل ہوا۔ ارشادِباری تعالیٰ ہے:
{شَھْرُ رَمَضَانَ الَّذِیْ اُنْزِلَ فِیْہِ الْقُرْآنُ ھَدًی لِّلنَّاسِ وَبَــیِّنٰتٍ مِّنَ الْھُدَی وَالْفُرْقَانِ}   ماہ رمضان وہ ہے جس میں  قرآن اتارا گیا جو لوگوں  کی ہدایت کرنے والا ہے اور جس میں  ہدایت اور حق و باطل کی تمیز کی نشانیاں  ہیں ۔ (البقرۃ:۱۸۵)
رمضان المبارک کی یہی فضیلت کافی ہے کہ اس میں  اللہ تعالیٰ کا کلام نازل ہوا جو سب سے اعلیٰ، خوبصورت اور جامع ومانع کلام ہے۔دنیا کے تمام دانشور، ادیب اور فصیح مل کر بھی کلام الٰہی جیسی ایک بھی آیت نہیں بناسکتے۔ یہ کلام لوگوں  کے لیے ہدایت ہے۔ شرک و بدعت کے اندھیروں  میں روشنی کا چراغ ہے۔
بعض علماء اور مفسرین نے یہ بیان کیا ہے کہ سب سے پہلی وحی جو غار حرا میں  بصورت ( اقْرَ‌أْ بِاسْمِ رَ‌بِّكَ الَّذِي خَلَقَ )جبریل امین لے کر آئے، وہ رمضان المبارک کا واقعہ ہے ۔ اور دوسرا مطلب یہ بیان کیا گیا ہے کہ قرآن مجید پورا کا پورا لیلة القدر میں  لوح محفوظ سے آسمان دنیا پر اتار دیا گیا، اور لیلة القدر رمضان کے آخری عشرے کی طاق راتوں  میں  سے کوئی ایک رات ہوتی ہے۔
اسی ماہ مبارک میں  لیلة القدر ہوتی ، جس کی بابت اللہ تعالیٰ نے فرمایا: 
( لَيْلَةُ الْقَدْرِ‌ خَيْرٌ‌ مِّنْ أَلْفِ شَهْرٍ‌ )(سورة القدر) شب قدر ہزار مہینوں  سے بہتر ہے۔
  ہزار مہینے کے 83 سال 4 مہینے بنتے ہیں  ۔ عام طور پر انسانوں  کی عمریں  بھی اس سے کم ہوتی ہیں ۔ لیکن اس امت پر اللہ تعالیٰ کی یہ کتنی مہربانی ہے کہ وہ سال میں  ایک مرتبہ اسے لیلة القدر سے نواز دیتا ہے، جس میں  وہ اللہ تعالیٰ کی عبادت کر کے 83 سال کی عبادت سے بھی زیادہ اجر و ثواب حاصل کر سکتا ہے۔ امام مالک رحمہ اللہ فرماتے ہیں  کہ
(انہ سمع من یتق بہ۔۔۔۔خیر من الف شہر)(موطا امام مالک، الاعتکاف، باب ماجاء فی لیلة القدر 321/1 طبع مصر)
انہو ں  نے بعض معتمد علماء سے یہ بات سنی ہے کہ رسول اللہ ﷺ کو آپ سے پہلے لوگوں  کی عمریں  دکھلائی گئیں  تو آپ کو ایسا محسوس ہوا کہ آپ کیا مت کی عمریں  ان سے کم ہیں  اور اس وجہ سے وہ ان لوگوں  سے عمل میں  پیچھے رہ جائے گی، جن کو لمبی عمریں  دی گئیں ۔ تو اللہ تعالیٰ نے اس کا ازالہ اس طرح فرما دیا کہ امت محمدیہ کے لیے لیلة القدر عطا فرما دی۔اس مہینے کے روزے اللہ تعالیٰ فرض کیے ہیں  اور روزہ رکھنا بھی نماز، زکوٰة اور حج و عمرہ کی طرح ایک نہایت اہم عبادت ہے۔
اس میں  شک نہیں  کہ جس طرح  رمضان  تمام مہینوں  سے افضل ہے اسی طرح روزہ بھی عبادات میں  افضل ترین نہیں  تو افضل تر ضرور ہے۔ روزہ دار کی جو قدر و منزلت خدا کی نگاہ میں  ہے۔ اسے حدیث کے الفاظ ہی میں  بیان کیا جا سکتا ہے۔
 آنحضرت ﷺ کا ارشادِ گرامی ہے:قال اللہ عزوجل کل عمل ابن اٰدم له الا الصیام فانه لی وانا اجزی به والذی نفس محمد بیدہ لخلوف فم الصائم اطیب عند اللہ من ریح المسک ابن آدم ہر عمل اپنے لئے کرتا ہے مگر روزہ صرف میری خاطر رکھتا ہے اور میں  ہی اس کی جزا دوں  گا۔ خدا کی قسم جس کے قبضۂ قدرت میں  محمد ﷺ کی جان ہے، روزے دار کے منہ کی بد بُو خدا تعالیٰ کے نزدیک مشک و عنبر سے بھی زیادہ فرحت افزا ہے۔
مسلم شریف میں  الفاظ اس طرح ہیں   ولخلوف فیه اطیب عند اللہ من ریح المسک جبکہ بخاری شریف میں یہ حدیث کچھ یوں ہے کہ:عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ عَنِ النَّبِيِّ ﷺ يَرْوِيهِ عَنْ رَبِّكُمْ، قَالَ  رَسُولُ اللہ ﷺ لِكُلِّ عَمَلٍ كَفَّارَةٌ، وَالصَّوْمُ لِي وَأَنَا أَجْزِي بِهِ، وَلَخُلُوفُ فَمِ الصَّائِمِ أَطْيَبُ عِنْدَ اللہ مِنْ رِيحِ المِسْكِ صحابی رسول ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے وہ اللہ کے نبی صلی اللہ سے روایت کرتے ہیں  کہ اللہ کے نبی ﷺ نے اللہ تعالی سے نقل کیا کہ اللہ تبارک وتعالی فرماتا ہے   ہرعمل کا کفارہ ہے اور روزہ میرے لئے ہے میں  ہی اس کا بدلہ دوں  گا اور یقینا روزہ دار کے منہ کی بو اللہ کے نزدیک مشک کی بو سے بھی زیادہ ہے۔( البخاري رقم 7538)۔
اس حدیث میں ‌ روزہ دار کی فضیلت بیان ہوئی ہے اورکہا گیا ہے کہ روزہ دار کے منہ کی بو اللہ کے نزدیک مشک کی خوشبو سے بھی بہتر ہے ۔
اس حدیث میں ‌ کئی باتیں  ہیں:سب سے پہلی بات یہ کہ اس حدیث میں  کہا گیا کہ  عِنْدَ اللہ  (اللہ کے نزدیک‌)روزہ دار کے منہ کی بو مشک کی خوشبو سے بھی بہترہے ۔
یہاں  جو یہ کہا گیا کہ  اللہ کے نزدیک  تو اس کا مطلب ؟؟؟
کیا اللہ تعالی بھی خوشبو یا بدبوسونگھتاہے ؟ اورسونگھنے کے بعد اسے معلوم پڑتاہے کہ کس چیز میں ‌ خوشبو ہے اورکس چیز میں ‌ بدبواورکتنی مقدار میں ‌؟؟؟
نہیں  ! حدیث میں  یہ بات نہیں  کہی گئی ہے بلکہ صحیح مفہوم یہ معلوم ہوتا ہے کہ اللہ کے نزدیک مقبولیت ، خوشنودی اوراجروثواب مراد ہے ، اس کی تائید اس روایت سے بھی ہوتی ہے جس میںيَوْمَ الْقِيَامَةِ  کے اضافہ کے ساتھ یہ الفاظ ہیں أَطْيَبُ عِنْدَ اللهِ، يَوْمَ الْقِيَامَةِ، مِنْ رِيحِ الْمِسْكِ (صحيح مسلم رقم 1151)۔
یعنی یہ معاملہ قیامت کے دن ہوگا ، جس کا مطلب یہ کہ قیامت کے دن اللہ تعالی کے نزدیک اس بو کی اہمیت مراد ہے یعنی اجروثواب کے لحاظ سے ، امام نووی رحمہ اللہ نے اسی مفہوم کو ترجیح دی ہے (شرح النووي على مسلم 8/ 30)۔
اس حدیث‌ سے متعلق دوسری اہم بات یہ کہ اس میں  روزہ دار کے منہ کی بو کو مشک سے بھی بہتر بتایا گیا ہے اس سے معلوم ہوا کہ روزہ دار کی یہ بو شہید کے خون سے بھی افضل ہے کیونکہ شہید کے خون کی بوکو حدیث‌ میں  صرف مشک کہا گیا ہے جیساکہ نسائی وغیرہ میں  ہے 
رِيحُهَا كَالْمِسْكِ،(سنن النسائي 6/ 25 اسنادہ صحیح)۔
غورکیجئے کہ اس حدیث‌ میں  شہید کے خون کو مشک سے تشبیہ دئ گئی ہے ، جبکہ روزہ دار کے منہ کی بو کو مشک سے بھی زیادہ بہتر بتایا گیا ہے معلوم ہوا کہ روزہ دار کے منہ کی بو، یہ فضیلت میں  شہادت کے خون سے بھی بڑھ کرہے ۔
لیکن اس کا یہ مطلب نہیں  کہ شہادت کا عمل روزہ کے عمل سے بہترہے کیونکہ مجموعی لحاظ سے شہادت ہی افضل ہے البتہ شہادت کے ایک جزء  خون   اور روزہ کے ایک جزء   روزہ دار کے منہ کی بو  ان دونوں  کا موازہ کیا جائے تو روزہ دار کے منہ کی بو فضیلت میں  زیادہ ہوگی،(فتح الباري لابن حجر 4/ 106)۔
اس حدیث سے متعلق تیسری قابل غوربات یہ ہے کہ اس میں ‌ روزہ دار کے منہ کی بو کی جو فضیلت بیان کی گئی ہے ، وہ کیوں  ؟ اس کی علت کیا ہے ؟؟؟
اس سلسلے میں  علامہ عبیداللہ رحمانی رحمہ اللہ مرعا ة میں  فرماتے ہیں     إن الغرض نهي الناس عن تقذر مكالمة الصائمين بسبب الخلوف هذا (مرعاة المفاتيح شرح مشكاة المصابيح 6/ 410)۔
یعنی اس بو کی تعریف اس لئے کی گئی ہے تاکہ لوگ روزہ دار کے ساتھ بات چیت کرنے میں  ناگواری محسوس نہ کریں  ، معلوم ہوا کہ ہمیں  روزہ دار کے منہ کی اس بو کو عیب نہیں  سمجھنا چاہئے اوراسے ناگوارسمجھتے ہوئے روزہ داروں  سے کٹ کرتنہائی اختیار نہیں  کرنی چاہئے۔
اس حدیث سے متعلق چوتھی چیز سمجھنے کی یہ ہے کہ بعض لوگ اس غلط فہمی کے شکارہیں  کہ روزہ کی حالت میں ‌ مسواک نہیں  کرنا چاہئے کیونکہ اس سے روزہ دار کے منہ کی بو ختم ہوجاتی ہے یہ خیال سراسر غلط ہے کیونکہ مسواک سے دانتوں  اورزبان وغیرہ کی صفائی ہوتی ہے اور روزہ دار کے جس بو کی تعریف کی گئی ہے اس سے مراد وہ بو ہے جو معدہ کے خالی ہونے کے سبب پیٹ کے اندر سے آتی ہے اس پر مسواک کا کوئی اثر نہیں  پڑتا،(شرح الزرقاني على الموطأ 2/ 300)۔
Advertisements
2 comments
  1. بهـت خوب ـ
    ماشاء الله و جزاكم الله خير

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: