شخصیت بوجھیئے (1)

ایک زمانے میں حضرت امام رضاکے روضے مبارک میں ایک محراب پر یہ شعر کنندہ تھا
یارب ایں ارض مقدس چہ مقام است وہ چہ کا است
کز زمیں نا بفلک مظہر انوار خدا است
ترجمہ کی فرمائش پر ترجمہ بھی حاضر ہے:
یارب ایں ارض مقدس 
 اے اللہ! یہ پاکیزہ سرزمیں 
 چہ مقام است 
کنواں ہے مرتبے کا
وہ چہ کا است
اور اس کے سوا کیا ہے
کز زمیں نا بفلک 
 کہ فرش سے لے کر عرش تک
مظہر انوار خدا است

 صرف اللہ کے انوارات کے مظہر کی جگہ ہے

(ترجمہ ٹوٹا پھوٹا سا ہے اہل ادب سے التجا ہے سلیس ترجمہ کر دیجئے گا)
اس شعر کے خالق کا تعلق سر زمین ہند سے تھا اور نام تھا اخوند محمد اکبر، ان کے بیٹے محمد باقرکے گھر میں اس نامور ادیب کا جنم ہوا انہوں نے اردو ادب کی تاریخ کلکتہ میں رہتے ہوئے ایک انگریز کے کہنے پر مرتب کی ، ان کی مرتب کردہ تاریخ آج بھی اردو ادب میں مقبول ہے اس لئے کہ اس کتاب میں تحریر خشک نہیں ، کہانیوں جیسی روانی والی تھی۔ درس و تدریس سے بھی تعلق رہا تھا
اب آپ کا کام بس اتنا سا ہ کہ
اس مشہور  ادیب اور شاعرکا نام بوجھیئے۔۔
Advertisements
6 comments
  1. میں نے اردو اور فارسی آٹھویں جماعت تک پڑھیں پھر فارسی گیارہویں جماعت میں بھی پڑی ۔ اسلئے نہ تو مجھے ادیب کا علم ہے اور نہ فارسی کا شعر پلے پڑا ہے ۔ ” وہ چہ کا است ” کا کیا مطلب ہے ؟ اور ” کز زمین نا بفلک ” کا کیا مطلب ہے ؟ ہو سکے تو ان کے مصادر بھی بتا دیجئے گا

    • ترجمہ بھی شامل کر دیا گیا ہے
      پر کوشش کریں آج کی دنیا میں اتنا مشکل نہیں کسی نامور شخصیت کو تلاش نہ کرسکنا

  2. ریاض شاہد said:

    محمد حسین آزاد

  3. شکریہ محترمہ ۔۔

    مگر کیا ہم جاہلوں کے لئے آپ شعر کا ترجمہ کرنے کی ذحمت فرمائیں گیں ؟؟؟

    نوازش ہوگی۔۔۔۔

    شکریہ

    • جاہل بے علم کو کہتے ہیں
      کسی زبان کو نہ جاننا بے علمی تو نہیں
      ہاں اپنی زبان کو بھی درست طریقہ سے نہ سمجھ سکیں اور دوسروں کی زبان پر فخر کریں
      یہ جہالت ہے

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: