آزاد منش ۔۔۔ فیض احمد فیض

تحصیل نارووال کے گاؤں کالا قادر میں ایک چرواہا رہا کرتا تھا۔اس کا نام سلطان محمد خان تھا ۔ اس چرواہے نے اپنی کوشش سے تعلیم حاصل کی اور پھر لندن سے بیرسٹری بھی پاس کر لی۔ اسی سلطان محمد خان کے گھر 13فروری1911؁ کو ایک بچے نے جنم لیا ۔جسے فض احمد فیض کے نام سے آج ہم جانتے ہیں ۔
اسے ابتدائی تعلیم مولوی ابراہیم سیالکوٹی نے دی ۔پھر اسے اسکاچ مشن ہائی اسکول میں داخلہ دلوایا گیا۔اسی اسکول سے اس نے 1927؁ میں میٹرک کیا پھر مرے کالج سیالکوٹ سے انٹر کیا اور 1934؁ میں اورینٹل کالج سے انگریزی میں ایم اے کر لیا۔
1917؁میں انقلاب  روس کے بعد مارکس اورینجل نے کمیونسٹ نظریات کی داغ بیل ڈال دی تھی۔ان نظریات کا اس پر بھی اثر ہوا اور جب 1935؁میں ڈاکٹر تاثیر، ڈاکٹر ملک راج آنند ، صاحب زادہ محمود الظفر  اور سجاد ظہیر نے ترقی پسندوں کی انجمن بنائی تو یہ بھی اس میں شامل ہوگئے۔
1936؁میں سجاد ظہیر(بنےّ بھائی )نے لکھنؤ میں ترقی پسند مصنفین کا اجلاس بلوایا جس کی صدارت منشی پریم چند نے کی تھی، وہ بھی اس اجلاس میں شرکت کرنے پہنچ گئے ۔وہاں سے واپس امر تسر آکر ترقی پسند مصنفین کے لئے زور شور سے کام کرنے لگے۔1938 میں ایم اے او کالج امر تسر میں مقتول گورنر پنجاب سلمان تاثیر کے والد ایم ڈی تاثیر پرنسپل ہوا کرتے تھے۔ان کے یہاں ان کا خوب آنا جانا تھا کیونکہ وہ بھی اسی کالج میں 1935؁ سے انگریزی پڑھا رہے تھے۔تثیر کی بیگم جرمن نژاد تھیں ان کی ایک بہن بھی جرمی سے آئی ہوئیں تھیں۔اس جرمن دوشیزہ سے ان کی قربت بڑھنے لگی اور انجام 1941؁ میں شادی کی صورت میں نکلا۔نکاح کشمیر کے مقبول رہنما شیخ عبد اللہ نے پڑھایا۔ کچھ دنوں تک میاں بیوی امرتسر میں رہے پھر اس نے ایم اے او کالج کی ملازمت سے استعفٰی دیدیا ، اور ہیلی کاج آف کامرس لاہور آگئے۔لیکن زیادہ عرصہ وہاں بھی نہ ٹک سکے، اور فوج کے شعبہ نشر و اشاعت سے وابستہ ہو کر دہلی چلےگئے۔ 1جنوری1947؁کوانہوں نے فوج سے بھی استعفٰی دے دیا۔جس وقت وہ فوج سے مستعفی ہوئے وہ لیفٹنینٹ کرنل  کے عہدے پر تھے۔انگریزی حکومت نے ان کی خدمات کے اعتراف میں انہیں ایم۔بی۔ای کا اعزاز دیا پھر وہ لاہور آگئے اور اب ادب میں انہیں بڑا معتبر مانا جانے لگا تھا۔یہاں آکر وہ پروگیسو پیپرز لمیٹیڈ سے جڑ گئے۔پاکستان ٹائمز، روزنامہ امروز،اور ہفت روزہ لیل و نہار کی ادارت سنبھالی۔تقسیم کے وقت فسادات میں جو انسانیت کی تذلیل ہوئی اس پر خوب لکھا۔ایک ایک اداریہ خون رلا دینے والا ہوتا تھا۔ٹریڈ یونین فیڈریشن کے نائب صدر بھی تھے۔اسی حیثیت سے آئی ایل او کے عالمی اجلاس میں شرکت کے لئے سان فرانسسکو چلے گئے۔وہاں سے لوٹے ہی تھے کہ 9مارچ 1951؁میں راولپنڈی سازش کیس کے تحت گرفتار ہوئے۔ 20اپریل1955کو رہائی ملی تو پھر سے پاکستان ٹائمز کی ادارت سنبھال لی ، مگر زیادہ عرصہ وہاں نہ رہ سکے۔اور مستعفی ہوکر فلمی دنیا میں آگئے۔اختر کاردار کی درخواست پر فلم”جاگو ہوا سویرا”کے مکالمے اور گانے لکھے پھر تاشقند کانفرنس میں شرکت کرنے چلے گئے۔ وہاں سے واپس آئے تو مارشل لاء لگ چکا تھا۔ فوجی قانون کے تحت پھر گرفتار ہوئے اور 9ماہ تک اسیر رہے۔
رہائی کے بعد انہیں الحمرا آرٹس کانسل کا  سربراہ بنا دیا گیا ،مگر ایسے آزاد منش کب دباؤ میں رہ سکتے ہیں انسانیت کی آزادی کے لئے لڑتے چلے گئے بالآخر نومبر 1984کو کرامویل اسپتال لندن میں زندگی سے آزاد ہو گئے ۔
Advertisements
2 comments
  1. M.mubin said:

    Ik zindgi ko khasa mukhtesar kr diya .. Mgr
    Acha likha .

  2. مذہبی لحاظ سے آزاد منش کہہ سکتے ہیں ویسے تو وہ غیرملکی طاقت کے غلام تھے ۔ جموں کشمیر آزاد کرانے کا لیبل لگا کر ایک سازش میں شریک ہوئے ۔ کہا جاتا ہے کہ مقصد لیاقت علی خان کو قید یا قتل کر کے حکومت پر قبضہ کرنا تھا ۔ سازش میں شریک ایک اور کرنل کو جو آزادی جموں کشمیر کا دلدادہ تھا جب حقیقت معلوم ہوئی تو اربابِ اختیار کو سازش سے مطلع کر دیا اور سازش ناکام ہوئی ۔ مگر بعد میں لیاقت علی خان کو ایک اور منصوبے کے تحت قتل کر دیا گیا

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: