قومی ترانے کے خالق اور طوطی پاکستان "حفیظ جالندھری”

14جنوری1900؁ کو سورج نکلنے سے ذراپہلے اس نے عرش والے کوعطا کردہ صلاحیت کے ساتھ فرش پر اپنے آنے کا اعلان کیا ،ہلکی سی چنیخ  کے ساتھ کچھ بولنے کی  ،کچھ کہنے کی منشاء زندگی بھر تعاقب میں رہی۔کچھ نہ کچھ نیا کہنے کی فکر ہمہ وقت ستاتی رہتی ، جبکہ گھرانا بس عام سا ہی تھا،نہ بہت زیادہ پڑھے لکھوں کا نہ ہی نرے جاہلوں کا۔یہ وہ ماحول تھا جہاں قومی ترانے کے خالق نےآنکھ کھولی جنہیں ہم "حفیظ جالندھری "کے نام سے پہچانتے ہیں۔
ہوش سنبھالتے ہی انہیں پڑھنے لکھنے کے لئے بٹھا دیا گیا،یہ اور بات ہے کہ اس وقت پڑھنے لکھنے کی عمر 5سے6سال سمجھی جاتی تھی۔مسجد سے ملحقہ صحن میں بغدادی قاعدہ پڑھنے کی "زحمت”ختم ہوئی تو قرآن شریف بھی رٹایا گیا۔لوگوں کی آراء تھی کہ بچہ ذہین اس لئے اسکول کے سپرد کر دیا گیا۔اسکول میں پڑھائی کم اور مار زیادہ ہوا کرتی تھی۔یہ ماحول حفیظ کو پسند نہ آیا مگر کنبہ والوں کا دباؤ تھا اس لئے اسکول جاتے رہے۔اسکول کی کتابوں میں نظمیں پڑھنا انہیں دل لگا کر رٹا لگانا انہیں بہت پسند تھا۔شہر میں ہونے والے ایک مشاعرے میں شرکت بھی کی۔شاعروں کو دیکھا تو شوق ہوا کہ خود بھی شعرکہے۔عمر چھوٹی مگر شوق بڑا تھاپھر بھی کوشش کی قافیے سے قافیہ ملایا اور خوش ہوگئے۔مگر شومئی قسمت کہ پہلی ہی کوشش بھاری پڑ گئی۔7سال کی عمر اور شاعری کا شوق؟مولوی فتح دین نے 2تھپڑ جڑ دیئے ،گریبان پکڑ کر جنجھوڑ دیااور بالوں کو مٹھی سے پکڑ کر سر کو جھٹکے دئے کہ "خناس”نکل جائے مگر وہ خناس نکلا تو نہیں ہاں خوف سے اندر ہی دبک کر بیٹھ گیا۔11برس کی عمر میں اس "بھوت”نےپھر سر اٹھایا۔ساتویں جماعت میں پہنچے تک بہت ساری نظمیں جمع ہو گئیں ۔پڑھائی پر توجہ تو تھی نہیں ،اس لئے امتحان میں فیل ہونا مقدر ٹھہرا۔نتیجہ دیکھ کر والد کی سختی یاد آئی اور گھر سے فرار ہونا پسند کر لیا۔اب تلک صرف 6جماعت ہی پاس کر سکے تھے ۔بڑی مشکل سے پکڑ دھکڑ کر گھر لایا گیااور کچھ دن بعد ہی شادی کے بندھن میں باندھ دیا گیا۔شاعری کا چسکا تو ُپڑ ہی چکا تھا اب پوری توجہ اسی جانب ہی مبذول ہوگئی۔پہلی عالمگیر جنگ میں غلافت عثمانیہ پر صلیب والوں کے ہاتھ زوال آگیا تھا۔وہ بھی دیگر مسلمانوں کے ساتھ آرزودہ و افسردہ تھے۔ان کی شاعری میں بھی اثر آچکا تھا۔19برس کی عمر ہو چکی تھی اور فکر معاش بھی تھی تو مولانا گرامی کے ماہنامے "اعجاز” میں نوکری کرلی۔1922؁میں نوکری شروع کی تھی جو کافی عرصہ تک چلی۔اب تک شعری میں بھی کافی حد تک پختگی آتی جا رہی تھی۔برصغیر میں سیاسی کشمکش بڑھ رہی تھی۔ڈاکٹر کچلو کے اشارے پر ایک نظم لکھی جس پر جیل یاترا بھی کرنا پڑی۔اب تو شہرت سوا ہو گئی۔پورے پنجاب سے بلاوے آنے لگے۔دہلی کے مشاعرے میں بھی جانے لگے۔ہر جگہ عمیق شاعری اور خوبصورت لہن کا جادو سر چڑھ کر بولتا ۔دھیرے دھیرے شہرت اتنی بڑھی کہ ہر مشاعرے کی جان ہو گئے۔مجموعے بھی آچکے تھے کہ قیام پاکستان کا ہنگامہ شروع ہو گیااور حفیظ پاکستان آگئے۔اب تک یہ اساتذہ کی قطار میں آچکے تھے اور طوطی پاکستان کے نام سے مشہور ہو چکے تھے۔شاہنامہ اسلام آتے ہی دھوم مچ گئی تھی،اس وجہ سے شہر بھی آسمان پر تھی۔قومی ترانے کی بات آئی تو سیکڑوں شعراء کے کلام میں سے ان کا کلام زیادہ پسند کیا گیا۔21دسمبر1982؁کووفات ہوئی۔ہلال امتیاز،پرائڈ آف پرفامنس کے علاوہ بھی بہت سے دیگر اعزازات کے بھی حامل ٹھہرے۔
————————
Advertisements
10 comments
  1. طوطی پاکستان کے بارے میں نہایت عمدہ معالومات تحریر کرنے کا شکریہ۔ ان میں سے کافی باتیں میرے لئے نئی ھیں

  2. Biography started well but ended in a hurry.

  3. آدھا لکھنے کے بعد کیا ہنڈیا جلنے کا خدشہ ہو گیا تھا ؟
    فردوسی ءِ اسلام سے میری پہلی ملاقات اُن دنوں ہوئی جب میں دسویں جماعت میں پڑھتا تھا (1953)۔ اُنہوں نے ایک نظم پڑھی تھی ”کہتے ہیں جسے کیڈٹ اصل میں لفظِ قیادت ہے“۔
    دوسری ملاقات 1970ء کی دہائی میں ہوئی جب میں اور میرا ایک دوست اُنہیں ملنے گئے ۔ وہ اپنے بیٹے کے ساتھ سیٹیلائیٹ ٹاؤن راولپنڈٰی (ایف بلاک) ہمارے گھر کے قریب رہائش پذیر تھے ۔ عبدالحفیظ جالندھری صاحب اُن دنوں لکھنا تقریباً چھوڑ چکے تھے

    • Iftikhar Sb
      Aap me Taz Wa Mizah likhne ki salahiat ha. Kabhi koshish kar ke dekhiay ga.
      Wassalam

      • جی اب اس عمر مین یہ رہ گیا ہے بڑی بات ہے جی
        ورنہ تو چڑچڑے ہو جاتے ہیں اکثر بزرگوار

          • جی ہاں سکھانے کے معاملے میں کبھی چھپایا نہیں کچھ بھی
            کافی مدد کی ہے بلاگنگ میں میری ہمیشہ ممنون ہوں ان کی

    • ماشاء اللہ
      کافی تعلقات رہ چکے ہیں بڑوں چسے آپ کے

      کہ پنڈیا نہیں بچے تنگ کر رہے تھے
      اور کچھ تفصیل بھی بتاؤں؟

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: