احکامِ حجاب اور غامدی (حصہ دوم)

گزشتہ سے پیوستہ
سورہ احزاب کے احکام حجاب کا انکار:
 سورہ احزاب میں سب سے پہلے پردے کے احکام نازل ہوئے جس پر صحابہ کرام سے لے کر اب تک تمام علماء کا اجماع ہے یہاں تک کہ امین احسن اصلاحی صاحب جن کو غامدی صاحب اپنا استاد مانتے ہیں وہ بھی سورہ احزاب کی آیات سے پردے کے قائل ہیں مگر غامدی صاحب نے اپنے استاد کی رائے سے بھی اتفاق نہیں کیا اور ایک دوسری ہی بات کی ہے وہ اپنے ایک ٹی وی پروگرام میں پردے کے حوالے سے کہتے ہیں کہ سورہ احزاب میں جو پردے کے احکام اترے ہیں وہ ہنگامی حالات کے تحت اترے تھے وہ حالات یہ تھے کہ منافقین رات میں اہل ایمان عورتوں پر آوازیں کسا کرتے تھے جس کی وجہ سے سورہ احزاب کی یہ آیات اتریں ترجمہ آیت:”اے نبی صلی اللہ علیہ وسلم اپنی ازواج اوربیٹیوں اور مسلمان عورتوں سے کہہ دیجئے کہ وہ اپنے چادر کے پلو اپنے اوپر سے لٹکا لیا کریں یہ بہتر ہے ان کے لئے پھر وہ پہچان لی جائیں گی اور ستائی نہ جائیں گی اور اللہ  بخشنے والا مہربان ہے۔(سورہ احزاب آیت59) جب وہ حالات ختم ہو گئے تو احکام بھی ختم ہو گئے اور سورہ نور میں جو پردے کے احکام ہیں وہ ابدی احکام ہیں۔
غامدی صاحب جو کہہ رہے ہیں اگر بالفرض وہ بات مان لی جائے کہ سورہ احزاب میں جو احکام اترے تھے وہ اس وقت کے لئے تھے تو جو حالات غامدی صاحب نے بتائے ہیں تو اس لحاظ سے تو آج کے حالات میں بھی ان پر عمل ضروری ہے آج بھی اوباش لوگ عورتوں پر آوازیں کستے ہیں اور ان سے بدتمیزی کرتے ہیں مگر غامدی صاحب جو کہہ رہے ہیں اس کی کوئی حقیقت نہیں ہے جو حالات وہ بتا رہے ہیں اس کو طبقات ابن سعد نے نقل کیا ہے اور پانچ روایات اس کے تحت لائے ہیں مگر ان تمام روایات میں ایک راوی (محمدبن عمرواقدالواقدی )ہے جو تمام محدثین کے نزدیک متفقہ طور پر کذاب(جھوٹا) ہے(تھذیب التھذیب) (طبقات ابن سعد باب قبل نزول حجاب جلد 8 ) یہ ہے وہ بنیاد جس کی ایماں پر غامدی صاحب یہ بات کر رہے ہیںاب ہم سورہ احزاب میں پردے سے مطلق آیات کا جائزہ لیتے ہیں
آیت ترجمہ:۔”اور جب تمہیں ان (ام المومنات )سے کوئی چیز مانکنی ہو تو پردے کی اوٹ سے مانگا کرو” (سورہ احزاب آیت53 )
آیت ترجمہ:۔(عورتوں) پر گناہ نہیں کہ وہ اپنے باپوں اور اپنے بیٹوں اور اپنے بھائیوں اور بھتیجوں اور بھانجوں اور عورتوں اور ملکیت کے ماتحتوں کے سامنے ہوں ،۔عورتوں اللہ سے ڈرتی رہو اللہ یقینا ہر چیز پر شاہد ہے۔(سورہ احزاب آیت55 )
 آیت ترجمہ:۔ اے نبی صلی اللہ علیہ وسلم اپنی ازواج اوربیٹیوں اور مسلمان عورتوں سے کہہ دیجئے کہ وہ اپنے چادر کے پلو اپنے اوپر سے لٹکا لیا کریں یہ بہتر ہے ان کے لئے پھر وہ پہچان لی جائیں گی اور ستائی نہ جائیں گی اور اللہ بخشنے والا مہربان ہے۔(سورہ احزاب آیت59  )
پہلی آیت میں پردے کے احکام نازل ہوئے ہیں جس میں بظاہر حکم ام المومنات سے ہے مگر یہ حکم تمام عورتوں کے لئے ہے اسی بات کو ام التفاسیر نے بھی بیان کیا ہے دیکھے (تفسیرطبری ،ابن کثیر ، قرطبی )اور یہ بات آگے کی دونوں آیات سے واضح ہوجائی گی اور اس کے شانِ نزول کے حوالے سے یہ بات واضح کر دیں کہ یہ کسی ہنگامی حالت میں نہیں اترے بلکہ یہ عمر فاروق   کی خواہش پر نازل ہوئے تھے
مفہوم حدیث:۔ عمر فاروق   نے فرمایا تین باتیں میں نے کہیں جن کے مطابق رب العلمین نے احکام نازل کیے ، میں نے کہا  یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم گھر میں ہر کوئی آتا جاتا ہے آپ صلی اللہ علیہ وسلم ازواج مطہرات  کو پردے کا حکم دیں اس پر پردے کے احکام نازل ہوئے۔(بخاری کتاب التفسیرالبقرہ جلد 2،مسلم کتاب الفضائل باب فضیلت عمرفاروقجلد6 (اور آیت 2 میںجب پردے کے احکام نازل ہوئے تو یہ مسئلہ پیدا ہوا کہ محرمات کے بارے میں کیا احکام ہیں تو اس پر یہ آیت 2 نازل ہوئی کہ عورتیں اپنے محرم کے سامنے جا سکتی ہیں اور یہ آیات تمام عورتوں کے لئے نازل ہوئی ہیں جس کو تفسیر طبری نے اور ابن کثیر نے اس طرح نقل کیا ہے”اوپر کی آیتوں میں اجنبیوں سے پردے کا حکم ہوا ہے اس لئے جن قریبی رشتہ داروں سے پردہ نہ تھا ان کا بیان اس میں کر دیا ”(تفسیر ابن کثیر)اور آیت 3اور اس کے شانِ نزول میں جو حدیث آتی ہے اس سے بات پوری طرح واضح ہوجائی گی کہ ان آیات میں پردے کے احکام تمام عورتوں کے لئے نازل ہوئے ہیں مفہوم حدیث:۔ امَ عائشہ  سے روایت ہے کہ سودہ احکام حجاب کے بعد ضرورت کے تحت باہر نکلی تو عمر نے انھیں مہچان لیا اور کہا کہ اے سودہ میں نے آپکو پہچان لیا تو وہ اسی وقت واپس آگئی اور حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے کہا کہ عمر نے مجھ سے یہ کہا تو اسی وقت حضور صلی اللہ علیہ وسلم پر وحی کا نزول شروع ہوا اور تھوڑی دیر میں یہ کیفیت ختم ہو گئی تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا تم کو ضرورت سے باہر نکلنے کی اجازت دے دی گئی ہے(بخاری کتاب التفسیرجلد2 ،مسلم کتاب السلام جلد,5مسند احمدجلد6ص56)پس اب اس حدیث سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ پہلی آیت میں پردے کا حکم نازل ہوا اوردوسری آیت میں محرمات کی فہرست اور اس کے بعد گھر سے باہر نکلنے اجازت دی گئی ہے پہلی دونوں آیات میں بظاہر خطاب ام المومنات سے ہے مگر تیسری آیت میں مسلمان عورتوں کو بھی گھر سے باہر نکلنے کی اجازت دی جارہی ہے جیسا ابن عباس نے اس آیت کے حوالے سے جو تشریح کی ہے جس کو ہم نے اوپر بیان کیا ہے غور طلب بات یہ ہے کہ پردے کا حکم عورتوں کو کب دیا گیا ہے جو اب ان کو گھر سے باہر نکلنے کی اجازت دی جارہی ہے اس سے صاف معلوم ہوتا ہے کہ اس سے پہلی آیات میں جو حکم ام المومنات کہ لئے دیا گیا ہے وہ صرف ان کے لئے نہیں تھا بلکہ ام المومنات کے واسطہ سے تمام عورتوں کو پردے کی تاکید کی گئی ہے جس کے بعد دوسری اور تیسری آیات میں ان کے محرمات کی فہرست اور اس کے بعد ان کو گھر سے نکلنے کے آداب بتائے جارہے ہیں اور اس آیت میںاللہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے فرمارہا ہے کہ مسلمان عورتوں کو بھی گھر سے باہر نکلنے کے آداب بتادیں۔اس تفصیل کے بعد یہ بات واضح ہوجاتی ہے کہ سورہ احزاب میں پردے کے احکام نہ کسی ہنگامی حالات میں اترے تھے نہ ہی یہ ام المومنات کے لئے خاص تھے۔اب اس کے بعد ہم سورہ نور سے مطلق پردے کے احکام کا جائزہ لیتے ہیں جس سے اکثر حضرات چہرہ کھلا رکھنے کی دلیل لیتے ہیں۔

مندرجہ بالا مضمون  امت کی اصلاح وتصیح کی خاطر  دفاع حدیث نامی ویب سائٹ سے لیا گیا ہے۔تاکہ مندرجہ بالا فتنہ کے بارے میں عوام آگاہ ہو سکیں۔

جاری ہے۔۔۔۔۔۔
Advertisements
2 comments
  1. مجھے تو حیرت ہے کہ لوگ غامدی کو سنتے ہی کیوں ہیں? آخر کو کونسا ایسا مذہبی سکالر ہے جو ایک دم سے میڈیا کا اتنا لاڈلا بن گیا ہے، جس کو اتنا سپورٹ کیا جا رہا ہے ۔ جہاں تک میری معلومات ہیں یہ صاحب اسلام سے زیادہ روشن خیالی کی پبلسٹی کرتے ہیں۔

    • یہ ایمان کی کمزوری کی نشانی ہے جی
      وہ لوگ جو نماز روزے سے دور ہیں
      پھر داڑھی رکھنا جن کے لئے مسئلہ ہو
      پھر جو خواتین پردے کو غیر مسلم اور شرپسندوں کے ذریعے سے قید سمجھتی ہیں
      انہیں ایسی جدید اور علوم سے بہروہر اسلام دکھتا ہے
      قرآن اور احادیث تو اٹھا نہیں سکتے ہاں ٹیلیویزن پر انہیں دیکھ کر کہتے ہیں اسلام کی ہی بات تو بتاتے ہیں دیکھ لو
      ہم بھی وہی سن رہے ہیں
      اب تم ان سے اختلااف ہے تو ہو
      علماء پر انگلیاں اٹھاتے ہیں کہ 4 آئمہ میں بھی تو اختلاف ہے
      مسئلہ کچھ کا کچھ ہوا جاتا ہے
      اور دین سے دوری ہوتی دکھائی نہیں دیتی

      اللہ ہم سب کو ایمان کی مضبوطی اور اسلام کی اشاعت اور شہادت کی موت نصیب فرمائے
      آمین

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

My Blog

Just another WordPress.com site

%d bloggers like this: