مختصر سیرت النبی ﷺ



بنی اسرائیل یعنی یہودیوں نے اللہ کےدین کو تبدیل کر لیا اور اللہ کی مقدس کتابوں یعنی توریت اور انجیل میں خرد بر د کر لی اور حق کو فساد میں تبدیل کر دیا اللہ کی بھیجی ہوئے شریعت کی شکل بگاڑ دی تو انسانوں کو ایک نبی کی ضرورت ہوئی جو ان کو حق کا راستہ دکھائے اور ان کو شرک کے اندھیروں سے نکال کر حق کی روشنی میں لے آئے۔اللہ سبحان و تعالٰی نے اس سلسلے میں حضرت محمد ﷺ کو مبعوث فرمایا۔
قرآن میں اللہ تعالٰی ارشاد فرماتا ہے کہ:
وَمَا أَنزَلْنَا عَلَيْكَ الْكِتَابَ إِلاَّ لِتُبَيِّنَ لَهمُ الَّذِي اخْتَلَفُواْ فِيه وَهدًی وَرَحْمَة لِّقَوْمٍ يُؤْمِنُونَ ﴿64﴾
اور ہم نے  تم پر یہ کتاب نہ اتاری  مگر اس لیے  کہ تم لوگوں پر روشن کر دو جس بات میں اختلاف کریں  اور ہدایت اور رحمت ایمان والوں کے  لیے ۔
(سورہ  نمبر 16:النحل ، آیت نمبر 64)
اللہ سبحان و تعالٰی نے اس دنیا میں بے شمار انبیاء کرام بھیجے کہ وہ انسانوں کو ایک اللہ کے بارے میں بتائیں اور ان کو باطل کے اندھیروں سے نکال کر حق کی روشنی میں لے آئیں۔
وَلَقَدْ بَعَثْنَا فِي كُلِّ أُمَّة رَّسُولاً أَنِ اعْبُدُواْ اللّه وَاجْتَنِبُواْ الطَّاغُوتَ فَمِنْهم مَّنْ هدَی اللّه وَمِنْهم مَّنْ حَقَّتْ عَلَيْه الضَّلالَة فَسِيرُواْ فِي الأَرْضِ فَانظُرُواْ كَيْفَ كَانَ عَاقِبَة الْمُكَذِّبِينَ ﴿36﴾
اور بیشک ہر امت میں ہم نے  ایک رسول بھیجا  کہ اللہ کو پوجو اور شیطان سے  بچو تو ان  میں کسی کو اللہ نے  راہ دکھائی  اور کسی پر گمراہی ٹھیک اتری  تو زمین میں چل پھر کر دیکھو کیسا انجام ہوا جھٹلانے  والوں کا۔
(سورہ  نمبر 16:النحل ، آیت نمبر 36)
حضرت محمد ﷺ اللہ کے آخری نبی اور رسول ہیں۔آپﷺ نبوت پر مہر ہیں یعنی نبوت کا دروازہ آپﷺ کے بعد بند کر دیا گیا یعنی آپﷺ کے بعد کوئی دوسرا نبی اور رسول نہیں ہوگا۔
مَّا كَانَ مُحَمَّدٌ أَبَا أَحَدٍ مِّن رِّجَالِكُمْ وَلَكِن رَّسُولَ اللَّه وَخَاتَمَ النَّبِيِّينَ وَكَانَ اللَّه بِكُلِّ شَيْءٍ عَلِيمًا ﴿40﴾
محمد تمہارے  مردوں میں کسی کے  باپ نہیں  ہاں اللہ کے  رسول ہیں  اور سب نبیوں کے  پچھلے   اور اللہ سب کچھ جانتا ہے ،
(سورہ  نمبر 33:الاحزاب ، آیت نمبر 40)
تمام انبیاء کرام کسی نہ کسی خاص قوم یا گروپ یا علاقہ کے لئے مبعوث فرمائے گئے ،لیکن نبی اکرمﷺ پوری انسانیت کے لئے مبعوث فرمائے گئے ہیں۔
وَمَا أَرْسَلْنَاكَ إِلاَ كَافَّة لِّلنَّاسِ بَشِيرًا وَنَذِيرًا وَلَكِنَّ أَكْثَرَ النَّاسِ لاَ يَعْلَمُونَ ﴿28﴾
اور اے  محبوب! ہم نے  تم کو نہ بھیجا مگر ایسی رسالت سے  جو تمام آدمیوں کو گھیرنے  وا لی ہے   خوشخبری دیتا  اور ڈر سناتا  لیکن بہت لوگ نہیں جانتے۔
(سورہ  نمبر 34:سبا ، آیت نمبر 28)
قرآن مجید نبی کریمﷺ ٌر نازل فرمایا،جو انسانوں کو اندھیروں سے روشنی میں لاتا ہے۔
الَر كِتَابٌ أَنزَلْنَاه إِلَيْكَ لِتُخْرِجَ النَّاسَ مِنَ الظُّلُمَاتِ إِلَی النُّورِ بِإِذْنِ رَبِّهمْ إِلَی صِرَاطِ الْعَزِيزِ الْحَمِيدِ ﴿1﴾
ایک کتاب ہے   کہ ہم نے  تمہاری طرف اتاری کہ تم لوگوں کو  اندھیریوں سے   اجالے  میں لاؤ  ان کے  رب کے  حکم سے  اس کی راہ   کی طرف جو عزت  والا سب خوبیوں والا ہے۔
(سورہ  نمبر 14:ابرہیم  ، آیت نمبر 01)
نبی کریم ﷺ عام الفیل (اس سال کہ جب ابرہہ کعبہ شریف کو گرانے کے لئے اپنی فوج لے کر آیا۔اس سلسلے میں ان شاء اللہ الگ سے ایک مکمل تحریر بشرط زندگی اسی بلاگ پر پڑھ سکیں گے)کو مکہ مکرمہ میں پیدا ہوئے۔والد صاحب (حضرت عبداللہ)پیدائش سے پہلے ہی وفات پا چکے تھے ۔جب عمر مبارک 6سال کی ہوئی تو والدہ ماجدہ(حضرت آمنہ)بھی وصال کر گئیں۔پرورش دادا (حضرت عبد المطلب )کے  سپردہوئی جو نبی کریمﷺ کی عمر مبارک8سال کے پہنچنے پر انتقال فرما گئے۔پھر بقیہ پرورش جناب کے چچا (حضرت ابو طالب)نے کی۔
بچپن  میں آپﷺ مکہ کے لوگوں کی بکریاں چرایا کرتے تھے۔پھر تجارت کے لئے شام کا سفر بھی کیا جہاں آپ ﷺ نے حضرت خدیجہ رضی اللہ تعالٰی عنہا کے سامان کی خرید و فروخت کی ۔آپ کی ایمانداری و دیانت داری سے آپ رضی اللہ تعالٰی عنہا بہت متاثر ہوئیں،اور آپ ﷺ کو شادی کا پیغام بھیج دیا ۔شادی کے وقت آپﷺ کی عمر 25سال اور حضرت خدیجہ رضی اللہ تعالٰی عنہا کی عمر 40سال تھی۔حضرت خدیجہ رضی اللہ تعالٰی عنہا کی حیات میں آپ ﷺ نے دوسری شادی نہیں کی۔
حضرت محمد ﷺ اہل مکہ میں اعلٰی کردار، اخلاق ، آداب، دیانتداری کے حوالے  سے مشہور تھے۔آپ ﷺ کے اسی اخلاق و کردار کی وجہ سے آپﷺ کو صادق  و امین پکارا جاتا تھا۔
آپﷺ عبادت و ریاضت کے لئے اکثر غار حرا میں تشریف لے جاتے تھے۔آپ ﷺ نے نبوت سے پہلے بھی کبھی بتوں کی پوجا نہیں کی اور نہ ہی کبھی کسی قسم کی اخلاقی برائی مثلاً شراب نوشی وغیرہ میں مبتلا رہے۔ہمیشہ پاک دامن رہے ۔بتوں کی پوجا و تہواروں اور شرک سے ہمیشہ نفرت ہی فرماتے۔
جب عمر مبارک 35برس تھی تو قریش مکہ نے خانہ کعبہ کی تعمیر کا ارادہ فرمایا اور وقت تنصیب حجر اسود ایک تنازعہ اٹھ کھڑا ہوا، کیونکہ ہرقبیلہ چاہتا تھا کہ اس کا سردار ا پتھر کو اپنے ہاتھ سے نصب کرے۔نبی اکرمﷺ نے حکمت عملی و عقلمندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس کا حل یہ نکالا کہ حجر اسود کو ایک چارد میں رکھ دیا اور تمام سرداروں سے فرمایا کہ وہ چادر کو کونوں سے اٹھا لیں اور اس پر سب تیار ہو گئےاور یوں حجر اسود کی تنصیب مکمل ہوئی اور مکہ کے لوگ بڑے فساد سے بچ گئے۔
اس شرک و فساد کو مٹانے کے لئے نبی کریمﷺ کو نبوت سے سرفراز فرمایا گیا ۔نبوت کے وقت آپ کی عمر مبارک 40سال تھی آپﷺ نے اہل مکہ کو اسلام کی دعوت دی اور بت پرستی سے روکا۔
أَجَعَلَ الْآلِهة إِلَها وَاحِدًا إِنَّ هذَا لَشَيْءٌ عُجَابٌ ﴿5﴾
کیا اس نے  بہت خداؤں کا ایک خدا کر دیا  بیشک  یہ عجیب بات ہے۔
(سورہ  نمبر 38:ص، آیت نمبر05)
اہل مکہ ایک اللہ کی عبادت کو چھوڑ کر بتوں کی پوجا کرتے اور شرک کرتے ،اللہ تعالٰی نے نبی محمد ﷺ کو نبوت کے لئے مبعوث فرمایا اور آپ ﷺ نے لوگوں کو توحید کا پیغام دیا اور کفر کے بت پاش باش ہو گئے۔
وَقُلْ جَاء الْحَقُّ وَزَهقَ الْبَاطِلُ إِنَّ الْبَاطِلَ كَانَ زَهوقًا ﴿81﴾
اور فرماؤ کہ حق آیا اور باطل مٹ گیا  بیشک باطل کو مٹنا ہی تھا ۔
(سورہ  نمبر 17:بنی اسرائیل ، آیت نمبر81)
نبی کریم ﷺ پر پہلی وحی غار حرا میں نازل فرمائی گئی، حضرت جبرائیل علیہ السلام وحی لے کر حاضر ہوئے۔
حضرت جبرائیل نے  آپ ﷺ سے دفرمایاکہ "پڑھو "
آپﷺ نے جواب دیا "میں پڑھنا نہیں جانتا "
حضرت جبرائیل نےپھر فرمایا "پڑھو”
آپﷺ نے پھر جواب دیا "میں پڑھنا نہیں جانتا "
تیسری مرتبہ حضرت جبرائیل نےفرمایا "پڑھو”
آپﷺ نے پوچھا”کیا پڑھوں”
اقْرَأْ بِاسْمِ رَبِّكَ الَّذِي خَلَقَ ﴿1﴾ خَلَقَ الْإِنسَانَ مِنْ عَلَقٍ ﴿2﴾ اقْرَأْ وَرَبُّكَ الْأَكْرَمُ ﴿3﴾ الَّذِي عَلَّمَ بِالْقَلَمِ ﴿4﴾
پڑھو اپنے  رب کے  نام سے   جس نے  پیدا کیا (1) آدمی کو خون کی پھٹک سے  بنایا، پڑھو (2) اور تمہارا رب ہی سب سے  بڑا کریم،(3) جس نے  قلم سے  لکھنا سکھایا (4)
(سورہ  نمبر 96:العلق، آیت نمبر1تا4)
آپ ﷺ نہایت خوفزدہ تھے گھر واپس آئے تو کانپ رہے تھے(خوف سے)اپنی بیوی یعنی حضرت خدیجہ رضی اللہ تعالٰی عنہا کو پورا قصہ سنایا آپﷺکی زوجہ محترمہ نے فرمایا کہ آپ خوف زدہ نہ ہوں اللہ آپ ﷺکی حفاظت فرمائیں گے کیونکہ آپﷺ غریبوں ،مسکینوں کا خیال رکھنے والے ،لوگوں پر رحم و شفقت فرمانے والے،حق بات کہنے اور کمزوروں کی دستگیری کرنے والے ہیں۔
حضرت خدیجہ رضی اللہ تعالٰی عنہاآپﷺ کو اپنے چچازاد بھائی ورقہ بن نوفل کے پاس لے گئیں جنہوں نے عیسائی مذہب اختیار کر لیا تھا اور دیگر مذہبی کتابوں کا علم رکھتے تھے۔ورقہ بن نوفل نے تمام حال جان کر خوشخبری سنائی کہ آپ ﷺ اللہ کے ہونے والے نبی ہیں ،بالکل ویسے جیسے حضرت موسٰی علیہ السلام تھے۔او ر آپ ﷺ کو تکلیفوں اور دکھوں کا سامنا کرنا پڑے گا اور آپ ﷺ کی بستی کے لوگ آپﷺکو اپنے علاقہ سے شہر بدر کر دیں گے۔
کچھ عرصہ وحی کا سلسلہ منقطع رہا نبی اکرم ﷺ بہت پریشان تھے پھر ایک دن حضرت محمد ﷺ کو آواز آئی آسمان کی جانب دیکھا تو حضرت جبرائیل علیہ السلام آسمان پر کرسی لگائے بیٹھے تھے۔جو زمین و آسمان تک پھیلی ہوئی تھی۔آپﷺ یہ دیکھ کر گھبرا گئے اور گھر واپس آگئے۔اور وحی سورہ مدثر آپ ﷺ پر نازل فرمائی گئی۔
يَا أَيُّها الْمُدَّثِّرُ ﴿1﴾ قُمْ فَأَنذِرْ ﴿2﴾ وَرَبَّكَ فَكَبِّرْ ﴿3﴾
اے  بالا پوش اوڑھنے  والے ! (1) کھڑے  ہو جاؤ  پھر ڈر سناؤ (2) اور اپنے  رب ہی کی بڑائی بولو (3)
(سورہ  نمبر 74:المدثر، آیت نمبر1تا3)
نبی کریم ﷺ نے13سال مکہ میں اپنے قریبی رشتہ داروں، عزیزوں اور اہل مکہ کو اللہ کا پیغام یعنی دین اسلام کا پیغام دیا ۔یہ پیغام یا دعوت عام بھی تھی اور ساتھ ہی خفیہ بھی،کیونکہیہ پیغام صرف جزیرہ عرب میں ہی نہیں بلکہ پوری دنیا میں پھیلنا تھا ۔
فَاصْدَعْ بِمَا تُؤْمَرُ وَأَعْرِضْ عَنِ الْمُشْرِكِينَ ﴿94﴾
تو اعلانیہ کہہ دو جس بات کا تمہیں حکم ہے   اور مشرکوں سے  منہ پھیر لو  (94)
(سورہ  نمبر 15:الحجر، آیت نمبر94)
نبی اکرﷺ کی دعوت قبول کرنے والوں میں امیر ،غریب،سردار،کمزور، غلام یعنی ہر طرح کے لوگ تھےاسلام کی دعوت قبول کرنے کی پاداش مین ان لوگوں پر تکلیفوں کے پہاڑ ٹوٹ پڑے،کچھ کو قتل کر دیا گیا ،حتٰی کہ کچھ کو حبشہ کی جانب ہجرت کرنا پڑ گئی۔اس کے ساتھ ساتھ نبی آخر الزماںﷺ کو بے شمار تکالیف اور دکھوں کا سامنا کرنا پڑا حتٰی کہ اللہ سبحان و تعالٰی نے آپ کی دعوت اور دین اسلام کو ظاہر فرما دیا۔
نبی مکرمﷺ کی عمر 50سال تھی تو آپ کے چچا حضرت ابوطالب کا انتقال ہو گیا ۔ابوطالب کی ہی وجہ سے آپﷺ قریش کے ظلم و ستم س ے محفوظ تھے،پھر آپ کی اہلیہ حضرت خدیجہ رضی اللہ تعالٰی عنہا بھی وفات پا گئیں۔حضرت خدیجۃ الکبریٰ رضی اللہ تعالٰی عنہا آپ ﷺ کے لئے عظم و حوصلہ کا نشان تھیں اور ہمیشہ آپﷺ کی ہمت بندھاتی تھیں۔ان دونوں کی موت سے آپ ﷺ بہت غمزدہ ہوئے۔
طائف میں تبلیغ کے لئے گئے تو وہاں آپ ﷺ کو پتھر مارے گئے۔آپﷺ کی بڑی بے حرمتی کی گئی،طائف کے چند اوباش لڑکوں کو آپ ﷺ کے پیچھے لگا دیا گیا ،جنہوں نے آپ ﷺ کو بہت تنگ کیا۔پتھراؤ کیا گیا ۔زخموں سے بہنے والے خون سے نبی کریم ﷺ کی نعلین مبارک خون سے بھر گئی۔
آپ مکہ میں حج اور دوسرے مواقع پر لوگوں کو اسلام کی دعوت دیتے تھے ۔ نبی اکرم ﷺ کو اسریٰ اور معراج ہوئی جہاں آپ ﷺ نے مسجد الحرام سے مسجد اقصیٰ کا سفر کیا پھر براق پر بیٹھ کر آسمانوں کا سفر فرمایا۔وہاں انبیاء کرام علیم السلام سے ملاقات فرمائی۔مسجد اقصٰی میں انبیاء کرام کی امامت بھی فرمائی۔اللہ کے بر گزیدہ انبیاء حضرت آدم علیم السلام، حضرت ابراہیم علیم السلام ،حرت موسٰی علیم السلام اور دیگر انبیاء کرام علیم السلام سے ملاقات فرمائی۔
سُبْحَانَ الَّذِي أَسْرَی بِعَبْدِه لَيْلاً مِّنَ الْمَسْجِدِ الْحَرَامِ إِلَی الْمَسْجِدِ الأَقْصَی الَّذِي بَارَكْنَا حَوْلَه لِنُرِيَه مِنْ آيَاتِنَا إِنَّه هوَ السَّمِيعُ البَصِيرُ ﴿1﴾
پاکی ہے  اسے   جو اپنے  بندے   کو،  راتوں رات لے  گیا  مسجد حرام سے  مسجد اقصیٰ تک  جس کے  گرداگرد ہم نے  برکت رکھی  کہ ہم اسے  اپنی عظیم نشانیاں دکھائیں ، بیشک وہ سنتا دیکھتا ہے (1)
(سورہ  نمبر 17:بنی اسرائیل ، آیت نمبر01)
Advertisements
4 comments
  1. جزاک اللہ بہن اچھی تحریر ہے۔
    اللہ آپ کو اس کا بہتر بدلہ دے آمین

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: