ایک عالم کا روضہ رسول ﷺاور کی زیارت کے حوالے سے مناظرہ

ایک عالم دین سے ایک مخالف مسلک کے عالم کی گفتگو ہو رہی تھی جو ایک مناظرہ کی شکل اختیار کر گئی اس کی کفتگو کی کچھ تفصیل :
مخالف: ”رسو ل اکرم صلی الله علیه و آله وسلم دنیا سے چلے گئے اور جو مرجاتا ہے وہ کسی کو نقصان یا فائدہ نہیں پہنچا سکتا تو تم لوگ قبر رسول سے کیا چاہتے ہو۔؟“
عالم دین: ”رسول اکرم صلی الله علیه و آله وسلم اگر چہ اس دنیا کو چھوڑ چکے ہیں مگر در حقیقت وہ زندہ ہیں کیونکہ قرآن مجید میں ارشاد ہوتا ہے:
” وَلَاتَحْسَنَّ الَّذِینَ قُتِلُوا فِی سَبِیلِ اللهِ اٴَمْوَاتًا بَلْ اٴَحْیَاءٌ عِنْدَ رَبِّہِمْ یُرْزَقُونَ“[سورہٴ آل عمران آیت ۱۶۹۔]
”اور اللہ کی راہ میں قتل ہوجانے والوں کو تم ہرگز مردہ نہ سمجھنا وہ زندہ ہیں اور اپنے پروردگار کی طرف سے رزق پاتے ہیں“۔
نیز بہت سی روایتیں اس بات پر دلالت کرتی ہیں کہ جس طرح پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کا زندگی میں احترام کرنا واجب تھا اسی طرح مرنے کے بعد بھی احترام کرنا چاہئے“۔
مخالف: ”اس آیت میں جو زندگی مراد لی گئی ہے کیا وہ ہماری اس زندگی سے مختلف اور اس کے علاوہ کوئی اور زندگی ہے ؟“
عالم: ”اس میں کیا حرج ہے کہ رسول خدا صلی الله علیه و آله وسلم رحلت کے بعد ایک دوسری زندگی کے مالک ہوں اور ہماری باتیں سنیں اور اسی عالم میں خدا کے حکم سے ہم پر لطف کریں ہماری مشکلات حل کریں؟ میں تم سے پوچھتا ہوں ”جب تمہارا باپ مر جاتا ہے تو کیا تم اس کی قبر پر نہیں جاتے اور اس کے لئے خداسے مغفرت کی دعا نہیں کرتے ؟“
مخالف: ”کیوں نہیں ہم جاتے ہیں“۔
عالم: میں پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کے زمانہ میں نہیں تھا کہ اس طرح ان کی زیارت سے مشرف ہو جاتا لہٰذا اب ان کی قبر کی زیارت کے لئے آیا ہوں“۔
اس سے واضح الفاظ میں یوں کہا جائے:پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کے جسم اطہر کی وجہ سے قبر کے اطراف کا حصہ یقینا مبارک ہو گیا ہے اگر ہم اس قبر مقدس کی خاک کا بوسہ لیتے ہیں یا اسے تبرک سمجھتے ہیں تو یہ بالکل اس کے مانند ہے کہ جیسے ایک شاگرد یا بیٹا اپنے استاد یا باپ کی محبت کی وجہ سے اس کے پیر کی خاک اٹھا کر اپنی آنکھوں سے لگاتا ہے۔
Advertisements
3 comments
  1. Qabar e Muqadas ka bosa denay k liay jab koi jhukay ga to woh taqreban sajday ki halat me ajaey ga. aur yeh cheez yaqeenan doosray dekhne walon ko shirk/qabar e muqadas ko sajda karnay k taraf lay jaey gi.

    Kia aap kisi Sahabi se ye riwayat kar sakti hain k unhoon ne Huzoor e Pak (Salallaho Alayhi Wasallam) ki Qabar e Mubarak ko chooma ho.

  2. ایک مسلمان اس وقت تک مومن نہیں ہوسکتا کہ جب تک نابی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ذات اقدس اسے ہر چیز سے زیادہ محبوب و مقدم نا ہوجائے۔ جن لوگوں نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کو پایا ان کے لیے تو اس بات میں کوئی ابہام نہیں تھا۔ لیکن بعد کے لوگوں کے لیے اس عقیدے کا منشاء یہ ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ذات اقدس، انکی شریعت ، انکی سنت اور انکے احکامات ہمیں ہر چیز سے پیارے ہوں۔ اس عقیدہ میں تو کوئی دو رائے نہیں ہو سکتیں۔ اور اس میں بھی کوئی دو رائے نہیں کہ آپکا روضہ رسول اس زمین پر ہے جسے دنیا میں جنت کا ٹکڑا کہتے ہیں۔ اور یہ بھی کہا جاتا ہے کہ اس جگہ کی گئی دعا کی قبولیت کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔ مگر آپ جو یہ کہتیں ہیں کہ :
    اس میں کیا حرج ہے کہ رسول خدا صلی الله علیه و آله وسلم رحلت کے بعد ایک دوسری زندگی کے مالک ہوں اور ہماری باتیں سنیں اور اسی عالم میں خدا کے حکم سے ہم پر لطف کریں ہماری مشکلات حل کریں؟
    اس میں کوئی شک نہیں کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم رحلت کے بعد اپنی دنیاوی زندگی سے کہیں بہتر زندگی گذار رہے ہیں۔ لیکن سوال یہ ہے کہ اس زندگی کے بارے میں، آپ، میں یا کوئی اور کیسے کوئی بات یقین سے کہہ سکتا ہے؟

    سوال پھر وہی ہے جو عاطف سلمان صاحب نے کیا کہ کیا آپ کسی ایسے صحابی کا نام بتا سکتی ہیں جو یہ عقیدہ رکھتے ہوں؟
    یا پھر آپ یہ کہنا چاہتی ہیں کہ صحابہ کرام رضوان اللہ تعالیٰ اجمعین نے تو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی ذات اقدس کو سمجھا ہی نہیں اور یہ شرف تو صدیوں بعد آنے والے صوفیوں اور دور حاضر کے قبر پرستوں کو حاصل ہوا ہے۔
    نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے جو حدیث منقول ہے اس میں انہوں نے درود پڑہنے کی تاکید کی تھی اور فرمایا تھا کہ یہ درود مجھ پر پیش کیے جاتے ہیں۔ کہیں بھی یہ ارشاد نہیں ہوا کہ میں ان درود کو سنوں گا۔ یا انہوں نے اپنی امت کو یہ تاکید کی ہو کہ مشکل وقت میں میرے توسل سے دعا کرنا۔ یا پھر اپنی مشکلات کے حل کے لیے میری ذات پر توجہ کرنا۔۔۔۔۔۔معافی چاہتا ہوں نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت میں میں نے ابھی تک کوئی ایسی چیز نہیں دیکھی ۔اگر آپ کی نظروں سے گذری ہو تو ارشاد فرمائیے۔
    برائے مہربانی اگر آپ ایسا عقیدہ رکھتی ہیں تو اس عقیدہ کا ماخذ ضرور بتائیے۔ نیز نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی برزخی حیات کے بارے میں آپ یقین سے کیا کہ سکتی ہیں؟ اس مسئلہ میں اگر آپ کے یا کسی اور کے ذاتی تجربات ہیں تو وہ ضرور بیان کیجیے۔

  3. سعید said:

    اقتباس:
    نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے جو حدیث منقول ہے اس میں انہوں نے درود پڑہنے کی تاکید کی تھی اور فرمایا تھا کہ یہ درود مجھ پر پیش کیے جاتے ہیں۔ کہیں بھی یہ ارشاد نہیں ہوا کہ میں ان درود کو سنوں گا۔
    حضرت ابو ہریرہ راوی ہیں کہ آپؐ نے ارشاد فرمایا:جس نے میری قبر کے پاس مجھ پر درود پڑھا میں خود اس کو سنتا ہوں اور جو دور سے مجھ پر درود پڑھا جاتا ہے وہ مجھے پہنچایا جاتا ہے۔مشکوۃ۔87
    (انتباہ: کوئی صاحب اس حدیث کی سند پر پرانا اور گھسا پٹا کلام نہ کریں ورنہ اس کے جواب کا یہاں چھاپا مارنا پڑے گا۔ بحث و تمحیص کے بعد یہ بات صاف ہوچکی ہے کہ یہ حدیث قابل استدلال ہے
    اقتباس

    نیز نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی برزخی حیات کے بارے میں آپ یقین سے کیا کہ سکتی ہیں؟ اس مسئلہ میں اگر آپ کے یا کسی اور کے ذاتی تجربات ہیں تو وہ ضرور بیان کیجیے۔
    ذاتی تجربات تو نہیں ہیں البتہ اشارے ضرور ہیں عمومی بھی اور خصوصی بھی

    غزوہ بدر میں جب دشمن کے ستر لوگ مارے گئے تو آپؐ نے حکم دیا کہ ان سب کو گڑھے میں ڈال دیا جائے ۔سب کو ڈال دیا گیا تو آپؐ گڑھے پر تشریف لے گئےاور فرمایا:ائے اہل قلیب!کیا تم نے وہ چیز پائی جس کا تم سے ہمارے رب نے وعدہ کیا تھا؟ کیونکہ میں نے تو وہ چیز پالی ہے جس کا مجھ سے میرے رب نے وعدہ کیا تھا۔راوی کہتا ہے کہ حضرت عمر نے عرض کیا:یا رسول اللہ!آپ ایسے جسموں سے گفتگو کر رہے ہیں جن میں روح نہیں(یعنی گڑھے والے تو آپ کی بات سن ہی نہیں رہے)آپؐ نے فرمایا:اس ذات کی قسم جس کے قبضہ میں محمد کی جان ہے تم میری بات کو ان سے زیادہ نہیں سنتے(یعنی وہ بھی تمہاری طرح میری بات کو صاف صاف سن رہے ہیں)لیکن وہ جواب نہیں دیتے(بس یہ فرق ہے تم میں اور ان میں) بخاری۔ج:1۔ص؛183۔مسلم۔ج:1،ص:303

    حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ میں اپنے اس کمرے میں جس میں حضور ﷺ مدفون ہیں بلا حجاب داخل ہوجاتی تھی اور سمجھتی تھی کہ ایک تو میرے شوہر ہیں اور ایک میرے والد(ان سے کیا پردہ؟)پھر جب حضرت عمر کی تدفین ہو ئی تو اللہ کی قسم میں اس کمرے میں حضرت عمر کی حیاء کی وجہ سے بغیر پردہ کبھی نہیں گئی۔مشکوۃ:154

    ڈاکٹر صاحب مرنے والوں کو حیات برزخی کس طرح کی حاصل ہے اس بارے میں ان روایات میں کچھ اشارے ہیں؟؟
    مجھے تو یہ اشارے نظر آتے ہیں

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Worlds Largest Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

My Blog

Just another WordPress.com site

%d bloggers like this: