ماہ صفر (حصہ چہارم)

بدھ  کےدن سےنحوست, اورماہ صفر کے آخری بدھ  کی تاریخی حیثیت
أ-  بده كے دن سےعمومی نحوست
 دمشق ميں بعض لوگ بدھ  کے روز مریض کی عیادت کو منحوس اور بد فال سمجھتے ہیں ,چنانچہ بدھ  کے دن عوام اور خواص اوررشتہ داروں کے لئے عیادت مریض ممکن نہیں – بظاہر ان لوگوں کی دلیل یہ حدیث ہے کہ :
(يوم الأربعاء يوم نحس مستمر ) "بده كا دن مسلسل نحوست کا  دن ہوتاہے "اس روایت کے بارے میں امام صاغانی اور امام ابن جوزی میں فرماتے ہیں کہ یہ حدیث موضوع ہے  –امام سخاوی فرماتے ہیں کہ "بدھ  کے دن کی فضیلت میں متعدد احادیث مروی ہیں مگر سب کی سب ضعیف اور ساقط الإعتبار ہیں –(المقاصد الحسنۃ للسخاوی 1/574)
 اسی طرح لوگوں میں رائج خرافات میں سے ایک بات یہ بھی ہے کہ کچہ لوگوں کا عقیدہ ہے کہ جس نے بدھ  کے روزکسی مریض کی عیادت کی تو جمعرات کو وہ اس مریض کی عیادت کرے گا – انکا مطلب یہ ہے کہ بدھ  کے روز اگر مریض کی عیادت کی جائے گی تو وہ مریض اس کے بعد دوسرے دن جمعرات کو مرجائے گا جس کی زیارت جمعرات کو قبرستان میں ہوگی –”
شیخ الإسلام امام ابن تیمیہ رحمہ اللہ سےپوچھا گیا کہ کیا بدھ جمعرات یا سنیچر کے روزسفر کرنا مکروہ ہے ؟ یا ان ایام میں کپڑوں کی کانٹ چھانٹ اور کپڑوں کی سلائی سوت کی کتائی یا اس قسم کے کاموں کا کرنا مکروہ ہے یافلان فلان تاریخوں کی راتوں میں وطی اور جماع کرنا مکروہ ہے , کیونکہ ایساکرنے سے پیدا ہونے والے بچوں کے لئے خوف وخطرہ لگا رہتا ہے – اس کے جواب میں انھوں نے فرمایا :” كہ سؤال میں مذکورہ عقائدوخیالات باطل اوربے اصل ہیں اورآدمی جب استخارہ کرکے کوئی مباح عمل کرے جس وقت بھی کرنا آسان ہو قطعی طورپر وہ کام کرسکتا ہے – کسی دن بھی کپڑے کی کاٹ چھانٹ یا سلائی یا سوت کی کتائی مکروہ نہیں ہے رسول £نے بدفالی سے منع فرمایا ہے :(عن معاويةبن الحكم السلمي قال قلت يارسول الله صلى الله عليه وسلم ان منا قوما يأتون الكهان ؟ فلاتأتوهم قال منا قوم يتطيرون ؟ قال وذالك شئي يجده احدكم من نفسه فلا يصدنكم ) (بخاري كتاب الإستسقاء2/522,ومسلم كتاب السلام 7/481,حديث(121)
” حضرت معاويہ بن حکم سلمی سے روایت ہے کہ میں نے عرض کیا یارسول اللہ ؟ ہم میں سے کچھ لوگ کاہنوں کے پاس آتے ہیں –آپ £نے فرمایا تم لوگ کاہنوں کے پاس مت جاؤ انہوں نے عرض کیا ہم میں سے کچہ لوگ بدفالی لیتےہیں – £نے فرمایا کہ یہ ایسی چیز ہے جس کو تم میں سے بعض لوگ اپنے دل میں محسوس کرتے ہیں مگراسکی وجہ سے کوئی کام کرنے سے تمہیں باز نہیں رہنا چاہئیے "-
آگے چل کر شیخ الإسلام اپنے فتاوى میں  فرماتے ہیں "جب رسول £  کا فرمان ہے کہ جس کام کا آدمی نے عزم کیا اس کا م کو بدفالی کے سبب کرنے سے بازنہیں آنا چاہئے –تو ,رات اوردن میں سے کسی کو منحوس سمجھنا کیا معنی رکھتا ہے ؟ بلکہ جمعرات اورسنیچر اوردوشنبہ کو سفر کرنا مستحب ہے اورتما م ایام میں کسی دن سفر کرنے یا کسی کام سے روکا نہیں گیاہے –البتہ جمعہ کے بارے میں اختلاف ہے اگرسفر کے سبب نماز جمعہ فوت ہوجانے کا خطرہ ہو تو اس دن جمعہ سے پہلے سفر کرنے سے بعض علماء منع کرتے ہیں , اور بعض علماء کرام جائز بتاتے ہیں لیکن کاروباراورجماع ووطی تو کبھی اورکسی دن مکروہ وممنوع نہیں  واللہ أعلم –”)(دیکھئیے خانہ ساز شریعت ص/174)
 ب –ماہ صفر کے آخری بدھ  کی تاریخی حیثیت
 ماہ صفرکے آخری بدھ  کے بارے میں عام تصور یہ پایا جاتا ہے کہ اس روز رسول £نے بیماری سے شفا پائی  اور آپ £نے غسل صحت فرمایا اسی لئے بعض لوگ ما ہ صفر کے آخری بدھ کو کاروبار بند کرکے عید کی طرح خوشیاں مناتے ہیں ,اورسیروتفریح کے لئے شہر سے باہر نکلتے ہیں اور آپ کی صحت یابی کی خوشی میں جلوس نکالتے ہیں – حالانکہ اس کا ثبوت نہ احادیث کی کتابوں سے اور نہ تاریخ وسیر کی کتابوں سے ملتا ہے – بلکہ تاریخ وسیر کی کتابوں سے اس کے خلاف ثبوت ملتا ہے چنانچہ اسد الغابہ( 1/41) میں ہے (بدأ برسول الله صلى الله عليه وسلم مرضه الذي مات منه يوم الأربعاء ليلتين بقيتا من صفر سنة احدى عشرة في بيت ميمونة ثم انتقل حين اشتد مرضه الى بيت عائشة وقبض يوم الأثنين ضحى في الوقت الذي دخل فيه المدينة لاثنتى عشرة من ربيع الأول )
رسول £کی اس بیماری کا آغاز جس میں آپ £اس دنیا سے تشریف لے گئے  سن11ھ میں صفرکے مہینے کی جب دوراتیں باقی رہ گئی تھیں بدھ کے روز حضرت میمونہ رضی اللہ عنہا کے گھرمیں ہوا پھر جب آپ £  کی بیماری شدت اختیارکر گئی تو آپ  £حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کے گھر منتقل ہوگئے اور 12ربیع الأول سوموار کے دن چاشت کے وقت جس وقت آپ مدینہ میں داخل ہوئے تھے آپ کی روح اقدس کو قبض کرلیا گیا –
یہی عبارت "الإستیعاب فی معرفۃ الأصحاب (1/20)میں بھی ہے اور تاریخ خمیس (2/161)  میں ہے "ابتدأبہ صداع فی اواخرصفرلیلتین بقیتا منہ یوم الأربعاء فی بیت میمونۃ " یعنی رسول £کی بیماری کی ابتداء بدھ  کے روز حضرت میمونہ رضی اللہ عنہا کے گھرمیں صفرکے آخرمیں ہوئی.
حافظ ابن حجرعسقلانی رحمہ اللہ نے صحیح بخاری کی شرح فتح الباری (8/164)ترجمۃ الباب "با ب مرض النبی صلی اللہ علیہ وسلم ووفاتہ کی شرح میں لکھا ہے کہ ” بیماری کا آغازصفر کے آخر میں ہوا "
اورطبقات ابن سعد (2/377) میں حضر ت على رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ رسول صلى اللہ علیہ وسلم 29 صفر سن 11ھ یو م چہار شنبہ کو بیمار ہوئے اور 12ربیع الأول سن 11ھ بروزدوشنبہ آپ £نے وفات پائی – اور( البدایہ والنہایۃ (5/224)ميں ہے :ابتدأرسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم بشکواہ الذی قبضہ اللہ فیہ الى ارادہ اللہ من رحمتہ وکرامتہ فی لیال بقین من صفر وفی أول شہر ربیع الأول " رسول £کی اس بیماری کا آغاز جس میں اللہ نے ان کی روح مبارک کو قبض فرمایا تاکہ ان کو اپنی رحمت وکرامت سے نوازے –صفر کی چند راتیں باقی رہ گئی تھیں یا ربیع الأول کی ابتدا میں ہوا”
تاریخ الکامل (2/215)میں ہے "ابتدأ برسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم مرضہ اواخرصفر”رسول £کی اس بیماری کا آغاز صفر کے اواخر میں ہوا”
سیرت ابن ہشام (5/224) میں ہے "ابتدأ   ر سول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم بشکواہ الذی قبضہ اللہ فیہ الى ارادہ اللہ من رحمتہ  وکرامتہ فی لیال بقین من صفر او فی شہر ربیع الأول " رسول  £کی اس بیماری کا آغاز جس میں اللہ تعالى نے ان کی روح مبارک کو قبض فرمایا تاکہ ان کو اپنی رحمت وکرامت سے نوازے صفر کی چند راتیں باقی رہ گئیں یار بیع الأول کی ابتداء ہو چکی تھی اسوقت ہوا "
تاریخ ابن خلدون (2/61) ميں ہےکہ "بدأہ الوجع لیلتین بقیتا من صفر وتحاوى بہ وجعہ "”صفرکی دو راتیں باقی رہ گئیں تھیں آپ £کی بیماری شروع ہوئی پھر آپ £بیمار ہی رہے "
تاریخ طبری (2/161) بدأ رسول صلی اللہ علیہ وسلم وجعہ لیلتین بقیتا من صفر "رسول £کی بیماری کا آغاز اس وقت ہوا جب صفر کی دوراتیں باقی رہ گئی تھیں "
علامہ سید سلیمان ندوی رحمہ اللہ  (سيرت النبي 2/172)  لکھتے ہیں کہ "زياده تر روايات سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ آپ £کل تیرہ دن بیمار رہے – اس بنا پر اگریہ تحقیقی طورپر متعین ہوجائے کہ آپ نے کس تاریخ کو وفات پائی تو تاریخ آغاز مرض بھی متعین کی جاسکتی ہے –حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کے گھربروایت صحیح آٹھ روز (دوشنبہ تک) بیمار رہے, وہیں وفات ہوئی, اسلئےایام علالت کی مدت آٹھ روزیقینی ہے عام روایت کے رو سے پانچ دن اور چاہئیں, اوریہ قرائن سے بھی معلوم ہوتا ہے اس لئے مدت علالت 13 دن صحیح ہے  علالت کے پانچ دن آپ £نے ازواج مطہرات کے حجروں میں بسر فرمائے – اس حساب سے علالت کا آغاز چہارشنبہ سے ہوتا ہے –
بہرحال محققین کے نزدیک آپ £کی بیماری کا آغاز صفر میں آخری بدھ  کو ہوا کچہ لوگوں نے دن اورتاریخ میں تھوڑا اختلاف کیا ہے – مگر یہ بات تقریباً متفق علیہ ہے کہ آ پ £کی مرض الموت کی ابتدا صفر کی آخری تاریخوں میں ہوئی – پھر بتائیے کہ مسلمانوں کو یہ کہاں زیب دیتا ہے کہ وہ اپنے نبی فداہ ابی وامی کی بیماری کے دن خوشیاں منائیں – زیب وزینت کرکے باغوں پارکوں اور سیر گاہوں میں تفریح کے لئے جائیں ,قسم قسم کے کھانے مٹھائیاں اورمیوے وغیرہ کھائیں اور کھلائیں , خصوصاً عورتیں عیدین سے بڑہ کر خوشیاں منائیں , اورخوب بن سنور کر سیر کے لئے نکلیں – ذرا غور کیجئے کیا آپ میں کوئی اپنے ماں باپ, بھائی بہن,  رشتہ دار,یا عزیز دوست کے مرض میں مبتلا ہونے کی تاریخ کو خوشی منائے گا ؟ اچھے اچھے اورلذیذ کھانوں کا اہتمام کرے گأ؟ گھر میں آپ کا کوئی عزیز جاں کنی کی حالت میں ہوتو آپ سیروتفریح کو جائیں گے ؟ جب آپ اپنے ایک عزیز دوست اوررشتہ دار کی بیماری کے دن ایسا نہین کرسکتے , تو حضرت محمد £  کی علالت کے آغاز کے دن کیسے کرسکتے ہیں جن کے بارے میں فرمان نبوی £   ہے :لایؤمن أحدکم حتى أکون أحب الیہ من والدہ وولدہ والناس أجمعین) فتح الباری ک/الإیمان باب حب الرسول صلى اللہ علیہ وسلم من الإیمان 1/80)
"تم میں سے کوئی اس وقت تک مومن نہیں ہوسکتا جبکہ میں اس کے نزدیک اس کے باپ سے بیٹے سے اور تمام لوگوں سے زیادہ محبوب نہ ہوجاؤں”
مضمون ابھی جاری ہے
Advertisements
1 comment
  1. اس تحریر کو جمع وترتيب دینے والے ہیں”شفيق الرحمن ضياء الله”اور مراجعہ کیا ہے "جناب شفیق الرحمن ضیاء اللہ مدنی صاحب "نے

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | Dars e Nizami Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

I am woman, hear me roar

This blog contains the feminist point of view on anything and everything.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

MAHA S. KAMAL

INTERNATIONAL RELATIONS | POLITICS| POLICY | WRITING

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

%d bloggers like this: