قوّال

تحریک خللافت کے زمانے میں مولانا محمد علی ،اقبال کے پاس آئے اور بڑی لعنت ملامت کرتے ہوئے بولے۔”ظالم ! تم نے لوگوں کو گرما کر ان کی زندگی میں ہیجان برپا کر دیا ہے، خود تو کسی کام میں حصہ نہیں لیتے۔”

اس پر اقبال نے جواب دیا”تم بالکل بے سمجھ ہو۔تمہیں معلوم ہونا چاہیئے میں تو قوم کا قوّال ہوں۔ اگر قوال خود وجد میں آکر جھومنے لگے تو قوُالی ہی ختم ہو جائے گی۔

 


Advertisements
5 comments
  1. واہ۔۔ علامہ نے بھی کیا خوب جواب دیا۔۔۔
    ہاں تو سب ہی قوال بن گئے ہیں۔۔۔ اب وجد میں کون آئے گا۔۔۔۔! :پ

    • بسند آنے کا شکریہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

  2. بڑے لوگوں کی بڑی باتیں۔۔۔۔بہت عمدہ

  3. NOOR said:

    بہت خوب ۔ ۔ ۔ ان حضرات کی بات ہی اور تھی ۔ ۔ ۔

  4. پنگ بیک: قوّال | Tea Break

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: