حرف آخر

سعادت حسن منٹو کی دیونیدرستیارتھی سے اکثر نوک جھوک رہتی تھی۔ ایک روز انہوں نے منٹو کو چڑانے کی غرض سے کہا:
"منٹو افسانہ نگاری میں تم حرف آخر نہیں ہو۔چیخوف، موپاساں اور کئی دیگر افسانہ نگار بیٹھے ہیں۔”
منٹو نے کمال بے پروائی سے کہا:
"ہوا کریں، تمہارے لئے تو میں حرف آخر ہوں۔”
Advertisements

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: