امریکہ میں جرائم کی رفتار

امریکہ یوں تو کہنے کو اقتصادی طور پرنہایت مستحکم ،تعلیمی لحاظ سے تہایت ترقی یافتہ اور سیاسی طور پر نہایت آزاد اور جمہوریت پسند واقع ہوا ہے۔زرعی پیدا وار کے لحاظ سے بھی کوئی دوسرا ملک اس کا مقابلہ نہیں کر سکتا۔ یہ نہ صرف خود کفیل ہے بلکہ دنیا کے بہت سے دوسرے ممالک کا ان داتا بھی ہے۔صنعتی ترقی میں اتنا بڑھا ہوا ہے کہ روس جیسا اشتراکی ملک اپنی زبردست افرادی قوت سے بھر پور اور زیادہ سے زیادہ کام لینے کے باوجود اب تک اس کی ہمسری کا دعویٰ نہیں کر سکتا۔
یہ سب کچھ ایک طرف ،لیکن اس کوشحال ملک کا ایک تاریک پہلو بھی ہے اور وہ ہے یہاں کے نت نئے جرائم کی کثرت۔قتل، ڈکیتی اور اغواء کی وارداتوں میں دن بدن اضافہ ہی ہوا چلا جارہا ہے۔حالانکہ یہاں کی پولیس کا شمار دنیا کی نہایت ترقی یافتہ اور تربیت یافتہ محافظ قانون اداروں میں کیا جاتا ہے۔امریکی پولیس کے جاسوس اور سراغرساںبڑے تجربے کار اور محنتی ہیں۔انہیں اپنی مہمات کی کامیابیوں پر خطیر رقومات بطور انعامات دی جاتی ہیں۔
امریکہ میں جرائم کی نوعیت کا تجزیہ کی جائے تو سرفہرست ڈکیتی اور چوری ہے۔مجرم بڑی منصوبہ سازی کے ساتھ ان جرائم کا ارتکاب کرتے ہیں ۔ دھوکہ دہی فراڈ اور جعلسازی میں نت نئے سائنٹفک طریقے اختیار کئے جاتے ہیں مجرموں کے گروہ در گروہ آئے دن پکڑے جاتے ہیں۔لیکن پھر بھی ان کی تعداد  میں اضافہ ہی ہوتا جاتا ہے۔
قتل اور اغواء کی وارداتیں بھی بڑھتی چلی جا رہی ہیں اسکولوں کے کمسن بچے راستوں سے اٹھا لئے جاتے ہیں۔جب تک ان کے والدین معقول معاوضہ نہ دیں اور بچے مقبوض رہتے ہیں اور رقم موصول نہ ہونے کی صورت میں انہیں بے دردی سے قتل کر کے نشان عبرت بنایا جاتا ہے۔ان تمام جرائم کا مقصد حصول زر ہے۔
روپیہ اور دولت ناجائز طور پر حاصل کرنے کا  رجحان اس قدر ترقی کر چکا ہے کہ جب تک سعودی عرب کے قانون طرح چوروں کے ہاتھ کاٹنے کا قانون نہ بنایا جائے گا ان جرائم کو روکنا نا ممکن ہے۔
جنسی جرائم میں بھی پہلے کی نسبت کافی اضافہ ہوا ہے۔ارتکاب جرم کے بعد عورتوں کو بڑی بیدردی سے قتل کرنے کا رجحان بڑھتا چلا جا رہا ہے۔حسین اور خوبصورت عوتوں کو بڑی دیدہ دلیری سے دن دھاڑے اٹھاکر کار میں ڈال کر لے جایا جاتا ہےاور اگلے دن اکثر ان کی لاش ہی کہیں پائی جاتی ہے۔
کثرت شراب نوشی کے علاوہ دوسسری منشیات کا استعمال بھی خطرناک حد تک بڑھ چکا ہے۔ کاروں کے حادثے زیادہ تر اسی لئے ہوتے ہیں کہ ڈرائیور نشے کی حالت میں انھیں چلاتے ہیں حرص زر اور ہوس لذت اندوزی نے امریکیوں کے اکثر طبقوں کو تباہی کے دھانے پر لا کھڑا کیا ہے۔ سمجھدار لوگوں کی جانب سے طرح طرح کی مذہبی اور معاشرتی اصلاحی تحریکیں چلائی جاتی ہیں،لیکن ان کا اثر قبول کرنے والوں کی تعداد اس قدر کم ہوتی ہے کہ وہ تحریکیں چند دنوں بعد خود ہی دم توڑ جاتی ہیں۔امریکی تعلیمیافتہ نوجوان طبقہ اب اس قدر ڈھیٹ ہوچکا کہ اس پر کوئی نصیحت اثر نہیں کرتی۔ نہ تو وہ بزرگوں کا احترام کرتے ہیں نہ ہی ان کی باتوں پر کان دھرتے ہیں۔
Advertisements
5 comments
  1. Aoa success me hum ameriqa se kafi pichey lekin jin juraim ki ap ne nishan dahi ki hai un me hm ameriqa se aagey na sahi per baraber tu zrur hain Pakistan ka nojawan tabqa b aqsar eisi harkatein krta rehta hai or phir apne apko faher se cool n fun loving kehta hai

  2. جو آپ نے امریکہ کی تصویر کشی کی ہے کیا اس کے اعدادوشمار کا پاکستان یا کسی اور اسلامی ملک کیساتھ موازنہ کر سکتی ہیں۔ یہ سب کہنے کی باتیں ہیں ہاں جرائم میں اضافہ ہو رہا ہو گا مگر اتنا نہیں جتنا پاکستان یا دوسرے اسلامی ممالک میں ہو رہا ہے۔

    • جو پاکستان مین ہو رہا ہے وہ تو سب ہی جانتے ہیں
      پر جو دوسروں کے گھر مین جا کر اس لئے ھملہ کریں کہ وہاں دہشت گردی ہے اور
      جرائم زیادہ ہیں
      وہ وہاں اس لئے حملہ کریں کہ وہ ترقی یافتہ ہین اور وہی امن کراسکتے ہیں
      تو ایسے ملک کی پول پٹی کھولنے کے لئے یہ تحریر لکھی گئی
      کہ اپنے ملک میں امن کر نہ سکے
      وہاں کے لوگ خود جرائم کا شکار ہیں
      اور ان کے حکمران ہم پر انگلیاں اٹھاتے ہین

  3. Inspite of getting happy on American Society problems we should concentrate on moral development of our Pakistani society.

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

اردو سائبر اسپیس

Promotion of Urdu Language and Literature

سائنس کی دُنیا

اُردو زبان کی پہلی باقاعدہ سائنس ویب سائٹ

~~~ اردو سائنس بلاگ ~~~ حیرت سراے خاک

سائنس، تاریخ، اور جغرافیہ کی معلوماتی تحقیق پر مبنی اردو تحاریر....!! قمر کا بلاگ

BOOK CENTRE

BOOK CENTRE 32 HAIDER ROAD SADDAR RAWALPINDI PAKISTAN. Tel 92-51-5565234 Email aftabqureshi1972@gmail.com www.bookcentreorg.wordpress.com, www.bookcentrepk.wordpress.com

اردوادبی مجلّہ اجرا، کراچی

Selected global and regional literatures with the world's most popular writers' works

Best Urdu Books

Worlds Largest Free Online Islamic Books | Islamic Books in Urdu | Best Urdu Books | Free Urdu Books | Urdu PDF Books | Download Islamic Books | besturdubooks.net

ISLAMIC BOOKS HUB

Free Authentic Islamic books and Video library in English, Urdu, Arabic, Bangla Read online, free PDF books Download , Audio books, Islamic software, audio video lectures and Articles Naat and nasheed

عربی کا معلم

وَهٰذَا لِسَانٌ عَرَبِيٌّ مُّبِينٌ

International Islamic Library Online (IILO)

Donate Your Books at: Deenefitrat313@gmail.com ..... (Mobile: + 9 2 3 3 2 9 4 2 5 3 6 5)

Taleem-ul-Quran

Khulasa-e-Quran | Best Quran Summary

Al Waqia Magazine

امت مسلمہ کی بیداری اور دجالی و فتنہ کے دور سے آگاہی

TowardsHuda

The Messenger of Allaah sallAllaahu 3Alayhi wa sallam said: "Whoever directs someone to a good, then he will have the reward equal to the doer of the action". [Saheeh Muslim]

آہنگِ ادب

نوجوان قلم کاروں کی آواز

آئینہ...

توڑ دینے سے چہرے کی بدنمائی تو نہیں جاتی

بے لاگ :- -: Be Laag

ایک مختلف زاویہ۔ از جاوید گوندل

اردو ہے جس کا نام

اردو زبان کی ترویج کے لیے متفرق مضامین

آن لائن قرآن پاک

اقرا باسم ربك الذي خلق

پروفیسر عقیل کا بلاگ

Please visit my new website www.aqilkhan.org

AhleSunnah Library

Authentic Islamic Resources

ISLAMIC BOOKS LIBRARY

Authentic Site for Authentic Islamic Knowledge

منہج اہل السنة

اہل سنت والجماعۃ کا منہج

waqashashmispoetry

Sad , Romantic Urdu Ghazals, & Nazam

!! والله أعلم بالصواب

hai pengembara! apakah kamu tahu ada apa saja di depanmu itu?

Life Is Fragile

I don’t deserve what I want. I don’t want what I have deserve.

I Think So

What I observe, experience, feel, think, understand and misunderstand

Amna Art Studio

Maker of art and artsy things, art teacher, and loud thinker

mindandbeyond

if we know we grow

Muhammad Altaf Gohar | Google SEO Consultant, Pakistani Urdu/English Blogger, Web Developer, Writer & Researcher

افکار تازہ ہمیشہ بہتے پانی کیطرح پاکیزہ اور آئینہ کیطرح شفاف ہوتے ہیں

بے قرار

جانے کب ۔ ۔ ۔

سعد کا بلاگ

موت ہے اک سخت تر جس کا غلامی ہے نام

دائرہ فکر... ابنِ اقبال

بلاگ نئے ایڈریس پر منتقل ہو چکا ہے http://emraaniqbal.comے

Kaleidoscope

Urban desi mom's blog about everything interesting around.

تلمیذ

Just another WordPress.com site

سمارا کا بلاگ

کچھ لکھنے کی کوشش

Guldaan

Islam, Pakistan and Politics

کائنات بشیر کا بلاگ

کہنے کو بہت کچھ تھا اگر کہنے پہ آتے ۔۔۔ اپنی تو یہ عادت ہے کہ ہم کچھ نہیں کہتے

Muhammad Saleem

Pakistani blogger living in Shantou/China

Writer Meets World

Using words to conquer life.

Musings of a Prospective Shrink

sugar spice and everything nice

Aiman Amjad

think, discuss, review and express...

Pressure Cooker

Where I brew the stew to feed inner monsters...

My Blog

Just another WordPress.com site

%d bloggers like this: