دلچسپ کہانی

ہم لوگ کتنا کم جانتے ہیں اپنی آنکھوں کے بارے میں اور کانوں کے بارے میں اور ہاتھوں اور پیروں ،نتھنوں سے تخنوں تک ،ہم لوگ ان اعضاء کو کتنا کم جانتے ہیں ہمارے لئے یہ منظم جسم ہیں۔ یہ ہیں تو وہی مگر کچھ اور بھی ہیں جسے ہم جان ہی نہیں پاتے۔ان سب کی ایک مکمل الگ زندگی ہیں ۔جب سے ہم زندہ ہوئے ہیں اور جب تلک ہم مریں گے یہ سب وہ کچھ دیکھتے ہیں وہ جو ہمیں بھی یاد نہیں رہتا۔ان کانوں نے کیا کچھ سنا ہے جس پر ہم نے کبھی دھیان نہیں دیا جسے ہم سن ہی نہ سکے کہ ہم سننے کے قابل یا سننا چاہنے کے باوجود سمجھ نہ سکے۔ان ہاتھوں نے کیا کچھ ٹٹولا ہے۔ یہ پاؤں کن کن راہ پر چلے کیسی کیسی مٹی سے آشنا ہیں ۔ زبان نے کیا کچھ چکھا اور بولا ہے ۔ کبھی ہم نے ان سے الگ الگ کچھ پوچھا ہے؟
اگر انسان صرف اپنی آنکھوں کی ہی کہانی دیکھنا شروع کرے ، یا صرف ان کانوں کی آوازیں ہی سنے یا اپنے ہاتھوں کا لمس ہی محسوس کرے کہ جو پیدائش کے لمحے سے شروع ہوئی ان سب کی کہانی ،ہر عضو کی الگ کہانی ۔ذرا سوچئے کیا کہانی ہوگی۔ کتنی دلچسپ کہانی ہوگی۔
Advertisements
3 comments
  1. آپ نے تو تيسری منزل پر بُلا کر چھت سے نيچے پھينک ديا ہے ۔ بی بی ۔ وہ کہانی کہاں ہے ؟
    اچھا يہ بتايئے کہ ميری ناک جو 28 ستمبر 1910ء کے بعد سے مجھے خوشبو يا بدبو کا کچھ نہيں بتا رہی يہ ساری معلومات اپنے پاس جمع کر رہی ہے ؟

    • چچا جان یہ کہانی میں سناؤں ایسا تو نہیں کہا تحریر میں یا مضمون میں
      یہ کہانی خود آپ کے پاس ہے بس دھیان اور گیان کو مجتمع کیجئے
      خود بھی سنیئے اور اچھے واقعات ہمیں بھی سنایئے

اپنی رائے دیجئے

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s

%d bloggers like this: